உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹی-20 عالمی کپ: عمران خان کا طنز- ابھی ہندوستان ہارگیا ہے، اس وقت تعلقات سدھارنے کی بات نہیں ہوسکتی

    ٹی-20 عالمی کپ: ہندوستان کی شکست پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا طنز

    ٹی-20 عالمی کپ: ہندوستان کی شکست پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا طنز

    IND vs PAK, T20 World Cup 2021: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے ہندوستان کے ساتھ تعلقات میں سدھار کی ضرورت پر زور دیا، لیکن ساتھ ہی کہا کہ ٹی-20 عالمی کپ میں ہندوستان کے خلاف ملک کی جیت کے بعد اس طرح کی بات چیت کے لئے یہ ’مناسب وقت نہیں’ تھا۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان (Imran Khan) نے ہندوستان کے ساتھ تعلقات میں سدھار کی ضرورت پر زور دیا، لیکن ساتھ ہی کہا کہ ٹی-20 عالمی کپ (ICC T20 World Cup 2021) میں ہندوستان کے خلاف ملک کی جیت کے بعد اس طرح کی بات چیت کے لئے یہ ’اچھا وقت نہیں’ تھا۔ ممبئی پر دہشت گردانہ حملے کے بعد سے ہندوستان اور پاکستان (India vs Pakistan) کے دو طرفہ کرکٹ تعلقات بند ہیں۔ پاکستان نے سال 2012 میں محدود اووروں کی سیریز کے لئے ہندوستان کا دورہ کیا تھا، لیکن اب دونوں ٹیموں کا سامنا آئی سی سی ٹورنا منٹوں اور ایشیا کپ میں ہی ہوتا آیا ہے۔ آئی سی سی عالمی کپ میں اس سے قبل پاکستان کے سامنے کبھی نہیں جیت پایا تھا، لیکن آئی سی سی عالمی کپ میں ہندوستان کے خلاف 12 میچوں کی شکست کا  سلسلہ توڑ دیا۔ پاکستان نے آئی سی سی ٹی-20 عالمی کپ 2021 میں ہندوستان کو 10 وکٹ سے شکست دی۔

      ’ڈان‘ آن لائن کی خبر کے مطابق، عمران خان نے سعودی عرب کی راجدھانی ریاض میں پاکستان- سعودی عرب سرمایہ کاری اسٹیج کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان میں صرف ایک ہی موضوع ہے- ’کشمیر موضوع‘۔ انہوں نے اس ’مہذب‘ پڑوسیوں کی طرح حل کرنے کی گزارش کی۔

      عمران خان نے سعودی عرب کی راجدھانی ریاض میں پاکستان- سعودی عرب سرمایہ کاری اسٹیج کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے پاس صرف ایک ہی موضوع ہے- ’کشمیر موضوع‘۔
      عمران خان نے سعودی عرب کی راجدھانی ریاض میں پاکستان- سعودی عرب سرمایہ کاری اسٹیج کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے پاس صرف ایک ہی موضوع ہے- ’کشمیر موضوع‘۔


      پاکستان کو 1992 میں اپنی کپتانی میں عالمی کپ دلانے والے عمران خان نے کہا، ’چین کے ساتھ ہمارے اچھے تعلقات ہیں، لیکن اگر ہم کسی طرح ہندوستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو سدھارتے ہیں۔ مجھے معلوم ہے کہ کل رات میچ میں پاکستانی ٹیم سے ہار کے بعد، ہندوستان کے ساتھ تعلقات سدھارنے کے بارے میں بات کرنے کا یہ بہت اچھا وقت نہیں ہے‘۔ ان کا تبصرہ دبئی میں عالمی کپ میں ہو رہے ٹی-20 عالمی کپ میں پہلی بار پاکستان کے ذریعہ ہندوستان کو شکست دینے کے ایک دن بعد آیا ہے۔

      وہیں، عظیم تیز گیند باز وسیم اکرم بھی عالمی کپ میں ہندوستان کی فاتحانہ مہم پر پاکستان کو روک لگاتے ہوئے دیکھ کر کافی خوش ہیں، لیکن چاہتے ہیں کہ ٹیم اس حصولیابی کو بھول کر اپنی مہم پر توجہ دے۔ وسیم اکرم نے ‘انڈیا ٹوڈے‘ سے کہا، ’میں اپنی زندگی میں ایسا ہوتے ہوئے دیکھنا چاہتا تھا اور میں نے ایسا ہوتے ہوئے دیکھا اور یہ یکطرفہ جیت تھی‘۔ کرکٹ کے عظیم تیز گیند بازوں میں سے ایک پاکستان کے سابق کپتان نے کھلاڑیوں سے اپیل کی کہ وہ صرف ایک جیت کے بعد چیزوں کو ہلکے میں نہ لیں۔

      پاکستان کے سابق کپتان وسیم اکرم نے ہندوستان کی شکست سے متعلق کہا، ’میں اپنی زندگی میں ایسا ہوتے ہوئے دیکھنا چاہتا تھا اور میں نے ایسا ہوتے ہوئے دیکھا اور یہ یکطرفہ جیت تھی‘۔
      پاکستان کے سابق کپتان وسیم اکرم نے ہندوستان کی شکست سے متعلق کہا، ’میں اپنی زندگی میں ایسا ہوتے ہوئے دیکھنا چاہتا تھا اور میں نے ایسا ہوتے ہوئے دیکھا اور یہ یکطرفہ جیت تھی‘۔


      انہوں نے کہا، ’یہ کل کی بات ہے، یہ تاریخ ہے، یہ اب ختم ہوچکا ہے۔ میں چاہتا ہوں کہ پاکستانی ٹیم آئندہ میچ پر توجہ دے۔ یہ لمبا عالمی کپ ہے‘۔ وسیم اکرم نے کہا، ’کارکردگی کی بات کریں تو انہوں نے شاندار کارکردگی پیش کی۔ شاندار کارکردگی، جوش سے لبریز، وہ صبروتحمل کے ساتھ کھیلے اور سبھی چیزیں ان کے حق میں رہیں، مجھے لگتا ہے کہ ٹاس بھی‘۔

      پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ نے ٹوئٹ کیا، ’الحمداللہ۔ یہ پہلی جیت ہے اور سب سے یادگار بھی۔ پاکستانیوں کے لئے یہ فخر کا لمحہ، جس کے لئے پوری ٹیم کو مبارکباد۔ یہ یادگار سفر کا آغاز ہے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: