உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IND vs SA: عمران ملک نے کہا- شعیب اختر کی سب سے تیز گیند کا ریکارڈ ٹوٹے گا، اپنا ہدف بھی بتایا

    India vs South Africa T20 Series: عمران ملک کو پہلی بار ہندوستانی ٹیم میں جگہ ملی ہے۔ جموں وکشمیر کے اس تیز گیند باز نے آئی پی ایل 2022 میں 157 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند ڈالی تھی۔

    India vs South Africa T20 Series: عمران ملک کو پہلی بار ہندوستانی ٹیم میں جگہ ملی ہے۔ جموں وکشمیر کے اس تیز گیند باز نے آئی پی ایل 2022 میں 157 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند ڈالی تھی۔

    India vs South Africa T20 Series: عمران ملک کو پہلی بار ہندوستانی ٹیم میں جگہ ملی ہے۔ جموں وکشمیر کے اس تیز گیند باز نے آئی پی ایل 2022 میں 157 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند ڈالی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: عمران ملک (Umran Malik) نے آئی پی ایل 2022 میں اپنی تیزی سے سبھی کو متاثر کیا۔ ٹی20 لیگ کے 15ویں سیزن میں انہوں نے کمال کی کارکردگی پیش کی۔ اسی کی بدولت انہیں جنوبی افریقہ کے خلاف (India vs South Africa) 9 جون سے شروع ہو رہی 5 میچوں کی ٹی20 سیریز کے لئے ہندوستانی ٹیم میں جگہ بھی ملی ہے۔ جموں وکشمیر کے اس تیز گیند باز نے آئی پی ایل میں 157 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند ڈالی۔ یہ آئی پی ایل تاریخ کی کسی بھی ہندوستانی گیند باز کی سب سے تیز گیند ہیں۔ اب ان کا اگلا ہدف شعیب اختر (shoaib Akhtar) کا ریکارڈ ہے۔ پاکستان کے سابق تیز گیند باز نے 161 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند پھینکنے کا عالمی ریکارڈ بنایا ہے۔

      نیوز 24 سے بات کرتے ہوئے عمران ملک نےکہا کہ میں مستقبل میں شعیب اختر کی سب سے تیز گیندکے ریکارڈ کو ہدف بناوں گا۔ اگر اوپر والا کرنے کے لئے تیار ہے تو میں سب سے بہترین دوں گا اور امید ہے کہ میں ریکارڈ توڑ دوں گا۔ انہوں نے کہا، 150 کلو میٹر فی گھنٹے کی رفتار سے گیند بازی کرنے کے لئے مجھے اپنے فٹنس سطح کو بنائے رکھنے کی ضرورت ہے اور امید ہے کہ میں ایسا کرسکوں گا۔

      ابھی نظر جیت پر ہے

      انہوں نے کہا کہ ابھی میری توجہ شعیب اختر کے ریکارڈ پر نہیں ہے۔ میں اچھی گیند بازی کرنا چاہتا ہوں۔ تیز گیند بازی کرنا چاہتا ہوں اور اپنے ملک کو جنوبی افریقہ کے خلاف سبھی 5 میچ جیتنے میں مدد کرنا چاہتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اگر اوپر والے نے چاہا تو مجھے وہ ریکارڈ مل جائے گا، لیکن ابھی دھیان جسم اور طاقت کو بنائے رکھنے پر ہے۔ آئی پی ایل میں وہ سن رائزرس حیدرآباد کی طرف سے اترے تھے۔ حالانکہ ٹیم پلے آف میں نہیں پہنچ سکی تھی۔

      22 سال کے عمران ملک نے آئی پی ایل کے 14 میچوں میں 20 کی اوسط سے 22 وکٹ حاصل کئے تھے۔ 25 رن دے کر 5 وکٹ ان کی بہترین کارکردگی رہی تھی۔ اس دوران انہوں نے 4 بلے بازوں کو بولڈ کیا تھا، لیکن ان کی اکنامی 9 سے اوپر کی رہی تھی۔ ایسے میں وہ اس میں سدھار کرنا چاہیں گے۔ وہ اوور آل ٹی20 کے 22 میچ میں 33 وکٹ حاصل کر چکے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: