ہوم » نیوز » اسپورٹس

وراٹ کوہلی کی شاندارسنچری، ایشانت شرما کا قہر، بنگلہ دیش کے خلاف ہندوستان تاریخی فتح کی دہلیزپر

بنگلہ دیش کی دوسری اننگز کا آغاز عجیب رہا اوراس کے چارسب سے اوپر کے بلے باز محض 13 رنز تک پویلین لوٹ گئے۔ ایشانت نےان میں سے تین اور امیش یادو نےایک وکٹ لیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 24, 2019 12:29 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وراٹ کوہلی کی شاندارسنچری، ایشانت شرما کا قہر، بنگلہ دیش کے خلاف ہندوستان تاریخی فتح کی دہلیزپر
دوسرے دن وکٹ حاصل کرنے کے بعد جشن مناتی ہوئی ٹیم انڈیا۔

کولکاتا:  کپتان وراٹ کوہلی (136 رن) کی 27 ویں سنچری اور تیزگیند بازایشانت شرما (39 رن پر چار وکٹ) کی خطرناک گیند بازی کی بدولت دنیا کی نمبرایک ٹیم ہندستان نے بنگلہ دیش کے خلاف تاریخی ڈے نائٹ ٹیسٹ کے دوسرے دن ہفتہ کو اپنی گرفت میں لے لیا اور وہ سیریز میں کلین سویپ کرنے کی دہلیز پر پہنچ گیا ہے۔ ہندوستان نے اپنی پہلی اننگ 9 وکٹ پر 347 رن بنا کر ڈکلیئرکر دی۔ ہندوستان کو پہلی اننگ میں اس طرح 241 رنوں کی بھاری بھرکم سبقت ملی۔ وراٹ کوہلی نے 194 گیندوں پر 18 چوکوں کی مدد سے شاندار 136 رن بنائے. بنگلہ دیش نے اپنی پہلی اننگز میں 106 رن بنائے تھے لیکن دوسری اننگز میں اس نے بہتر مظاہرہ کیا اور اسٹمپ تک 6 وکٹوں کے نقصان پر 152 رنز بنا لئے ہیں. بنگلہ دیش کو مسلسل دوسرے میچ میں اننگ کی شکست سے بچنے کے لئے ابھی 89 رن اور بنانے ہیں۔

پہلی اننگز میں پانچ وکٹ لینے والے فاسٹ بولر ایشانت شرما نے دوسری اننگ میں اپنی لے برقرار رکھی اور 9 اوور میں 39 رن پر چار وکٹ لے لئے. ایشانت شرما کے میچ میں 9 وکٹ ہو گئے ہیں اور وہ اپنے کیریئر میں دوسری بار میچ میں 10 وکٹ حاصل کرنے سے ایک وکٹ دور رہ گئے ہیں_ ایشانت نے 2011 میں ویسٹ انڈیز کے خلاف برج ٹاؤن میچ میں 10 وکٹ لئے تھے. امیش یادو نے 40 رن پر دو وکٹ لئے۔


وراٹ کوہلی نے شاندار سنچری لگائی۔
وراٹ کوہلی نے شاندار سنچری لگائی۔


بنگلہ دیش کی دوسری اننگ کا آغاز عجیب رہا اوراس کے چارسب سے اوپر کے بلے باز محض 13 رنز تک پویلین لوٹ گئے۔ ایشانت نےان میں سے تین اور امیش یادو نےایک وکٹ لیا۔ ایشانت نے شادمن اسلام (0)، کپتان مومن الحق (0) اور امرؤالقیس (5) کے وکٹ لئے جبکہ امیش یادو نے محمد متھن(6) کو آؤٹ کیا۔ چار وکٹ صرف 13 رن پر گر جانے پر ایسا لگنے لگا تھا کہ میچ دوسرے دن ہی ختم ہوجائے گا، لیکن مشفق الرحیم (ناٹ آووٹ 59) اور محموداللہ (39 ریٹائرڈ ہرٹ) نے پانچویں وکٹ کے لئے 120 رن جوڑ کر ہندستان کی جیت کا انتظار تیسرے دن پہنچا دیا. محموداللہ ہیمسٹرنگ چوٹ کی وجہ پویلین لوٹے اور اب یہ دیکھنا ہوگا کہ وہ تیسرے دن دوبارہ بلے بازی کرنے اتر پاتے ہیں یا نہیں. محموداللہ نے 41 گیندوں کی اننگز میں سات چوکے لگائے ہیں۔
اس جوڑی کے ٹوٹنے کے بعد ہندوستان نے دو وکٹ اور حاصل کر لئے. ایشانت نے مہدی حسن کو آؤٹ کر اپنا چوتھا وکٹ لیا. حسن نے 22 گیندوں پر 15 رنز میں دو چوکے اور ایک چھکا لگایا. امیش نے تیجل کو 33 ویں اوور کی تیسری گیند پر آؤٹ کیا اور اس کے ساتھ ہی دوسرے دن کا کھیل ختم ہو گیا. تیجل نے 24 گیندوں پر 11 رن بنائے بنگلہ دیش کی اننگ کی شکست سے بچنے کی تمام امیدیں مشفق پر ٹکی ہوئی ہیں جنہوں نے یکطرفہ جدوجہد کرتے ہوئے 70 گیندوں میں 10 چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 59 رن بنا لئے ہیں۔


بریک کے دوران پویلین لوٹتےہوئے وراٹ کوہلی اوررویندرجڈیجہ
بریک کے دوران پویلین لوٹتےہوئے وراٹ کوہلی اوررویندرجڈیجہ



اس سے قبل ہندوستان نے دوسرے دن تین وکٹ پر 174 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا تھا. وراٹ نے 59 رنز اور نائب کپتان اجنکیا رہانے نے 23 رن سے اپنی اننگ کو آگے بڑھایا. وراٹ نے 194 گیندوں پر 18 چوکوں کی مدد سے 136 رن بنائے. وراٹ کے کیریئر کی یہ 27 واں ٹسٹ سنچری تھی اور اس کے ساتھ ہی سب سے زیادہ سنچری بنانے والے بلے بازوں کی فہرست میں مشترکہ طور پر 17 ویں مقام پر آ گئے. رہانے نے 51 رن بنائے. اس کے بعد بنگلہ دیشی گیند بازوں نے اچھی واپسی کی اور ہندوستان کے وکٹ حاصل کئے۔ ہندوستان کا اسکور 89.4 اوور میں جب 9 وکٹ پر 347 رن تھا تو وراٹ نے ہندوستان کی اننگ کے ڈکلیئر کا اعلان کر دیا. رویندر جڈیجہ نے 12 اور وکٹ کیپر رددھمان ساہا نے ناٹ آؤٹ 17 رن بنائے. محمد سمیع 10 رن پر ناٹ آؤٹ رہے۔
ہندوستانی ٹیم نے لنچ تک 76 اوور میں 4 وکٹوں کے نقصان پر 289 رن بنائے تھے. وراٹ کوہلی اور رہانے نے چوتھے وکٹ کے لئے 99 رن کی ساجھےداری کی. رہانے نے 69 گیندوں میں سات چوکے لگا کر 51 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی اور اپنے ٹیسٹ کیریئر کا 22 واں نصف سنچری بنایا. رہانے کو تیجل اسلام نے عبادت حسین کے ہاتھوں کیچ کراکر بنگلہ دیش کے لیے دن کا پہلا اور ہندوستانی اننگ کو چوتھا وکٹ نکالا. حالانکہ اس کے بعد لنچ تک بنگلہ دیش کو کوئی اور کامیابی نہیں ملی اور کپتان وراٹ لنچ تک 130 رنز بنا چکے تھے. انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ میں اپنا 27 واں سنچری مکمل کی اور تاریخی گلابی گیند ٹیسٹ کو اپنی سنچری سے یادگار بنا دیا۔


وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے ایشانت شرما
وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے ایشانت شرما



وراٹ نے آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ کے ساتھ مل کر پانچویں وکٹ کے لئے 53 رن کی شراکت کی. لنچ کے بعد جڈیجہ سب سے پہلے آؤٹ ہوئے جنہیں ابو جاےد نے ایل بی ڈبلیو کیا. جڈیجہ کا وکٹ 289 کے اسکور پر گرا اور ہندوستانی اننگ کے 300 رن پورے ہونے کے کچھ دیر بعد ہی وراٹ بھی پویلین لوٹ گئے. عبادت حسین نے وراٹ کوہلی کو تیجل کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ اس کے بعد ہندوستان کے وکٹ برابر گرتے رہے۔ امام امین نے روی چندرن اشون (9) اور ایشانت شرما (0) کے وکٹ لئے جبکہ زید نے ایشانت کو اکاؤنٹ نہیں کھولنے دیا. وراٹ نے دوسرے سیشن میں ہندوستانی اننگ کا اعلان کر دیا. ساہا 41 گیندوں میں دو چوکوں کی مدد سے 17 رنز اور سمیع پانچ گیندوں میں ایک چوکے اور ایک چھکے کے سہارے 10 رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہے. امام امین نے 85 رن پر تین وکٹ، عبادت نے 91 رن پر تین وکٹ اور زید نے 77 رن پر دو وکٹ لئے۔


 
First published: Nov 24, 2019 12:09 AM IST