ہوم » نیوز » اسپورٹس

بڑی خبر: آئی پی ایل کا غیرمعینہ مدت کے لئےملتوی ہونا طے، منسوخ ہونے پر ہوگا 3000 کروڑکا نقصان

کورونا وائرس (Coronavirus) کی وجہ سے چل رہے لاک ڈاون کا بڑھنا طے مانا جارہا ہے، ایسے میں انڈین پریمیئرلیگ 2020 غیر معینہ مدت کےلئے ملتوی ہوسکتی ہے۔

  • Share this:
بڑی خبر: آئی پی ایل کا غیرمعینہ مدت کے لئےملتوی ہونا طے، منسوخ ہونے پر ہوگا 3000 کروڑکا نقصان
آئی پی ایل 2020 کا غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی ہونا طے۔۔

نئی دہلی: کورونا وائرس (Coronavirus) کی وجہ سے جس انڈین پریمیئرلیگ 2020 (IPL 2020) کو 15 اپریل تک ملتوی کیا گیا تھا اب اسےغیر معینہ مدت کےلئے ملتوی ہونا طے ہوگیا تھا۔ خبروں کے مطابق کووڈ-19 وبا کے سبب ملک میں نافذ لاک ڈاون دو ہفتوں تک بڑھایا جاسکتا ہے اور ایسے میں انڈین پریمیئرلیگ 2020 کا ہونا اب تک طے نہیں ہے۔ ہندوستانی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) کو اس معاملے میں مرکزی حکومت کے آفیشیل رخ کا انتظار ہے، لیکن زیادہ تر وزرائے اعلیٰ نے وزیر اعظم کے ساتھ میٹنگ میں لاک ڈاون کو بڑھانےکا مطالبہ کیا۔ وزرائے اعلیٰ کے رخ کو دیکھتے ہوئے دنیا کے سب سے امیر کرکٹ بورد کے پاس اسے اور آگے ملتوی کرنے کے علاوہ کوئی اور متبادل نہیں ہے۔ واضح رہےکہ کووڈ -19 کے انفیکشن کے چپیٹ میں 8000 سے زیادہ لوگ آئے ہین، جس میں 250 سے زیادہ کی موت ہوگئی ہے۔


آئی پی ایل منسوخ ہوا تو 3000 کروڑ کا ہوگا نقصان


لاک ڈاون بڑھنےکی خبریں تو سامنے آرہی ہیں، حالانکہ یہ ابھی واضح نہیں ہوا ہے کہ بی سی سی آئی 15 اپریل سے پہلے آئی پی ایل ملتوی ہونےکا اعلان کرے گا یا نہیں۔ بی سی سی آئی میں اس معاملے سے منسلک ایک افسر نے نام خفیہ رکھنےکی شرط پر پی ٹی آئی کو بتایا، ’تین ریاستوں پنجاب، مہاراشٹر اور کرناٹک نے پہلے ہی کہا ہےکہ وہ لاک ڈاون کو آگے بڑھائیں گے۔ اس کا یہ مطلب ہوا کہ ابھی آئی پی ایل نہیں ہوسکتا، لیکن یہ منسوخ بھی نہیں ہوگا۔ اسے غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردیا جائےگا۔


آئی پی ایل کا انعقاد 29 مارچ سے 24 مارچ تک ہونا تھا، لیکن کووڈ-19 کے سبب اسے 15 اپریل تک ملتوی کردیا گیا تھا۔ ذرائع نے بتایا، ’ہم آئی پی ایل کو منسوخ نہیں کرسکتےکیونکہ ایسا کرنے پر 3000 کروڑ روپئےکا نقصان ہوگا۔ بی سی سی آئی سبھی اسٹیک ہولڈروں کے ساتھ مل کر اس کا حل تلاش کرنےکی کوشش کرےگا، لیکن اس کے لئےحالات کے معمول پر آنےکی ضرورت ہے۔ بی سی سی آئی کے بڑے افسران کےلئے یہ بھی ممکن نہیں ہےکہ وہ کوئی تاریخ مقرر کریں۔

ان دو صورتوں میں ہوسکتا ہے آئی پی ایل 2020 

بی سی سی آئی ذرائع کی مانیں تو ابھی دو آئی پی ایل 2020 کےلئے دو ممکنہ تاریخ موجود ہیں۔ پہلا ٹی -20 عالمی کپ سے پہلے ستمبر سے اکتوبرکے شروع تک، دوسرا متبادل یہ ہےکہ اگر آئی سی سی، کرکٹ آسٹریلیا اور ٹی -20 عالمی کپ سے منسلک اسٹاک ہولڈر تیار ہوں تو اس کی جگہ اسے منعقد کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نےکہا، ’ابھی کافی اگرمگرکی حالت ہے۔ کچھ بھی صاف طور پر تبھی کہا جاسکتا ہے تب چیزیں معمول پر ہوں’۔

 
First published: Apr 12, 2020 01:26 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading