ہوم » نیوز » اسپورٹس

IPL 2020: محمد سراج نے بتایا، میدان پر پہنچتے ہی وراٹ کوہلی نے کہا تھا- میاں تیار ہوجاو

میچ کے بعد پریس کانفرنس میں محمد سراج (Mohammed Siraj) نے کپتان وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کا شکریہ ادا کیا، جنہوں نے انہیں نئی گیند سونپی تھی۔

  • Share this:
IPL 2020: محمد سراج نے بتایا، میدان پر پہنچتے ہی وراٹ کوہلی نے کہا تھا- میاں تیار ہوجاو
IPL 2020: محمد سراج نے بتایا، میدان پر پہنچتے ہی وراٹ کوہلی نے کہا تھا- میاں تیار ہوجاو

نئی دہلی: سوئنگ گیند باز محمد سراج (Mohammed Siraj) کی خطرناک گیند بازی سے رائل چیلنجرس بنگلور (Royal Challengers Bangalore) نے انڈین پریمیئر لیگ (IPL 2020) میں کولکاتا نائٹ رائیڈرس (Kolkata Knight Riders) کو 8 وکٹ پر 84 رن پر روک دیا۔ اس کے بعد بنگلور نے 13.2 اوور میں 2 وکٹ کے نقصان پر 85 رن بناکر اس میچ میں جیت حاصل کی۔ اس جیت کے ساتھ آر سی بی 14 پوائنٹ کے ساتھ آئی پی ایل پوائنٹ ٹیبل میں اب دوسرے نمبر پر آگئی ہے۔ وہیں، ممبئی انڈینس تیسرے نمبر پر پہنچ گئی ہے۔ اس جیت کے بعد میچ کے ہیرو اور ’مین آف دی میچ’ رہے محمد سراج نے بتایا کہ گیند بازی سے پہلے وراٹ کوہلی نے ان سے کیا کہا تھا۔


میچ کے بعد پریس کانفرنس میں محمد سراج نے کپتان وراٹ کوہلی کا شکریہ ادا کیا، جنہوں نے انہیں نئی گیند سونپی تھی۔ انہوں نے کہا، ’میں وراٹ بھیا کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے مجھے نئی گیند دی۔ وکٹ دیکھ کر ایسا کبھی نہیں سوچا تھا کہ سوئنگ ہوگا یا کچھ اور۔ ہم نے یہ منصوبہ نہیں بنایا تھا کہ میں نئی گیند سے گیند بازی کروں گا، لیکن جب ہم میدان پر پہنچے تو وراٹ بھائی نے مجھ سے کہا ’میں ریڈی ہوجاو، نئی گیند ڈالنی ہے’۔ تو میں نے ان سے کہا ٹھیک ہے بھیا۔ میں پریکٹس سیشن میں بھی گراونڈ پر نئی گیند ڈالنے کی پریکٹس کر رہا تھا۔ اس سے مجھے الگ ہی بھروسہ ملا’۔


پریس کانفرنس میں محمد سراج نے کپتان وراٹ کوہلی کا شکریہ ادا کیا، جنہوں نے انہیں نئی گیند سونپی تھی۔ انہوں نے کہا، ’میں وراٹ بھیا کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے مجھے نئی گیند دی۔
پریس کانفرنس میں محمد سراج نے کپتان وراٹ کوہلی کا شکریہ ادا کیا، جنہوں نے انہیں نئی گیند سونپی تھی۔ انہوں نے کہا، ’میں وراٹ بھیا کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے مجھے نئی گیند دی۔


آئی پی ایل کے پہلے کچھ سیزن اور میچ محمد سراج کے لئے مشکل رہے، لیکن آر سی بی نے ہمیشہ انہیں سپورٹ کیا۔ ایسے میں اپنی گیند بازی کے بارے میں بات کرتے ہوئے سراج نے کہا، ’جو آر سی بی مجھے اتنا سپورٹ کرتی ہے، جو آر سی بی مداح ہیں، آر سی بی کا جو سپورٹ اسٹاف ہے، جس نے مجھے اتنا سپورٹ کیا تو مجھے ایسا تھا کہ ٹیم کے لئے اچھا سا اور میزیکل پرفارمنس دوں۔ آر سی بی کے لئے کچھ الگ کروں، جب آئی پی ایل 2020 ہونے والا تھا، میں نے تبھی سوچ لیا تھا کہ اس سال آر سی بی کے لئے کچھ الگ کروں گا’۔



محمد سراج نے آوٹ سوئنگ کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا، ’پہلے میرا ان سوئنگ نیچرل تھا، پھر پریکٹس میں بالکل اچانک سے آوٹ سوئنگ ہوگیا۔ تو میں نے زیادہ وہ چیز پر سوچا نہیں، میں نے اس چیز پر زیادہ سوچا نہیں کہ پہلے میرا ان سوئنگ آتا تھا، اب آوٹ سوئنگ کیوں؟ تو میں اسے ہی پریکٹس کرتا گیا، جیسا پریکٹس سیشن میں آوٹ سوئنگ کیا، تو جب میں آج میچ میں آیا تو وہی اگزیکیوٹ ہوا’۔

واضح رہے کہ محمد سراج نے 4 اوور میں 8 رن دے کر تین وکٹ حاصل کئے۔ ایک وقت ان کی گیند بازی دو اوور، دو میڈن اور تین وکٹ تھا۔ کولکاتا نائٹ رائیڈرس کے چار بلے باز دہائی میں پہنچے۔ اس کی طرف سے کپتان ایان مورگن نے سب سے زیادہ 30 رن بنائے۔ ان کے بعد دوسرا سب سے بڑا اسکور 9 ویں نمبر کےبلے باز لاکی فرگوسن (ناٹ آوٹ 19) کا رہا۔ آئی پی ایل میں یہ تسرا موقع رہا، جبکہ کے کے آر کی ٹیم 100 تک بھی نہیں پہنچ پائی۔ یہ اس کا دوسرا سب سے کم اسکور ہے۔ اس نے 2008 میں ممبئی انڈینس کے خلاف ممبئی میں 67 رن بنائے تھے۔ کولکاتا نائٹ رائیڈرس نے ٹاس جیتا اور پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا، لیکن آر سی بی کے تیز گیند بازوں نے نئی پچ سے مل رہی تیزی اور سوئنگ سے ایان مورگن کا یہ فیصلہ غلط ثابت کرنے کوئی کسر نہیں چھوڑی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 22, 2020 03:49 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading