உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2021: انگلینڈ کے تمام کھلاڑی آئی پی ایل سے ہوں گے باہر! انگلش کرکٹ بورڈ کا نیا فرمان

    IPL 2021: انگلینڈ کے تمام کھلاڑی آئی پی ایل سے ہوں گے باہر! انگلش کرکٹ بورڈ کا نیا فرمان

    IPL 2021: انگلینڈ کے تمام کھلاڑی آئی پی ایل سے ہوں گے باہر! انگلش کرکٹ بورڈ کا نیا فرمان

    IPL 2021: آئی پی ایل 2021 کے دوسرے مرحلے کے مقابلے 19 ستمبر سے ہونے ہیں۔ ناک آوٹ مقابلے 10 اکتوبر سے ہونے ہیں۔ اس دوران انگلش ٹیم کو پاکستان کے خلاف 2 ٹی-20 کے مقابلے کھیلنے ہیں۔ ایسے میں اس کے بیشتر کھلاڑی ٹی-20 لیگ سے باہر ہوسکتے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: آئی پی ایل 2021 (IPL 2021) کے دوسرے مرحلے کے مقابلے 19 ستمبر سے ابو ظہبی میں کھیلے جائیں گے۔ انگلینڈ کے 6 کرکٹر پہلے ہی کسی نہ کسی وجہ سے ٹی-20 لیگ سے ہٹ چکے ہیں۔ اب خبر آرہی ہے کہ پلے آف کے دوران بچے 10 میں سے 9 کھلاڑی بھی نہیں کھیل سکیں گے۔ یعنی سبھی انگلش کھلاڑی لیگ میچ تک ہی دستیاب رہیں گے۔ ہندوستان اور انگلینڈ (IND vs ENG) سیریز کے دوران پانچویں ٹسٹ کے منسوخ ہونے کے بعد دونوں بورڈ اور کھلاڑیوں کے درمیان تنازعہ کی بھی خبر آئی۔

      ’کرک بز‘ کی خبر کے مطابق، انگلینڈ ٹیم کو پاکستان میں 14 اور 15 اکتوبر کو دو ٹی-20 مقابلے کھیلنے ہیں۔ ایسے میں کھلاڑیوں کو 9 اکتوبر تک ملک پہنچنا ہے۔ انگلینڈ اینڈ ویلس کرکٹ بورڈ (ای سی بی) کا یہ فرمان ہے۔ ایسے میں کھلاڑیوں کو چھوٹ ملنا کافی مشکل ہے۔ عالمی کپ کھیلنے والے 10 میں سے 9 کھلاڑی آئی پی ایل سے ہٹ جائیں گے۔ صرف آر سی بی میں شامل جارج گارٹن ہی بچیں گے۔ آئی پی ایل کے پلے آف کے مقابلے 10 اکتوبر سے شروع ہو رہے ہیں۔ فائنل 15 اکتوبر کو کھیلا جائے گا۔

      آئی پی ایل 2021 (IPL 2021) کے دوسرے مرحلے کے مقابلے 19 ستمبر سے ابو ظہبی میں کھیلے جائیں گے۔ انگلینڈ کے 6 کرکٹر پہلے ہی کسی نہ کسی وجہ سے ٹی-20 لیگ سے ہٹ چکے ہیں۔ اب خبر آرہی ہے کہ پلے آف کے دوران بچے 10 میں سے 9 کھلاڑی بھی نہیں کھیل سکیں گے۔
      آئی پی ایل 2021 (IPL 2021) کے دوسرے مرحلے کے مقابلے 19 ستمبر سے ابو ظہبی میں کھیلے جائیں گے۔ انگلینڈ کے 6 کرکٹر پہلے ہی کسی نہ کسی وجہ سے ٹی-20 لیگ سے ہٹ چکے ہیں۔ اب خبر آرہی ہے کہ پلے آف کے دوران بچے 10 میں سے 9 کھلاڑی بھی نہیں کھیل سکیں گے۔


      چنئی سپرکنگس کو بڑی پریشانی

      چنئی سپر کنگس کو سب سے زیادہ پریشانی ہوسکتی ہے۔ آل راونڈر سیم کرن اور معین علی بیچ میں ٹیم کا ساتھ چھوڑ سکتے ہیں۔ دہلی کیپٹلس سے کھیل رہے ٹام کرین اور راجستھان رائلس کے لیام لیونگسٹون بھی باہر ہوسکتے ہیں۔ دہلی کیپٹلس کی ٹیم ابھی پوائنٹ ٹیبل میں ٹاپ پر چل رہی ہے۔ اس کا پلے آف میں پہنچنا تقریباً طے ہے۔ انگلینڈ کو ٹی-20 عالمی کپ کا پہلا مقابلہ 23 اکتوبر کو ویسٹ انڈیز سے کھیلنا ہے۔

      کے کے آر کے کپتان ایان مورگن بھی نہیں کھیل سکیں گے

      انگلینڈ ٹی-20 ٹیم کے کپتان ایان مورگن کولکاتا نائٹ رائیڈرس (کے کے آر) کے کپتان ہیں۔ ایسے میں اگر ٹیم پلے آف میں پہنچتی ہے، تو وہ بھی نہیں کھیل سکیں گے۔ ایان مورگن کی کپتانی میں انگلینڈ نے سال 2019 کا ونڈے عالمی کپ کا خطاب جیتا تھا۔ ایسے میں ٹیم یہ کارنامہ ٹی-20 عالمی کپ میں دوہرانا چاہے گی۔ انگلینڈ نے 2010 میں صرف ایک بار ٹی-20 عالمی کپ کا خطاب جیتا ہے۔ یہ ٹورنامنٹ کا 7 واں سیزن ہے۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم ٹورنامنٹ کی دفاعی چمپئن ہے اور سب سے زیادہ دو بار خطاب جیتا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: