உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آئی پی ایل شروع ہونے سے پہلے مچا ہنگامہ، فرنچائزی نے تنازع کے حوالے سے بی سی سی آئی کو لکھا خط 

     معلوم ہو کہ انگلینڈ کے جونی بیئرسٹو ، ڈیوڈ ملان اور کرس ووکس نے ذاتی وجوہات کی بنا پر ہٹنے کا فیصلہ کیا۔

    معلوم ہو کہ انگلینڈ کے جونی بیئرسٹو ، ڈیوڈ ملان اور کرس ووکس نے ذاتی وجوہات کی بنا پر ہٹنے کا فیصلہ کیا۔

    معلوم ہو کہ انگلینڈ کے جونی بیئرسٹو ، ڈیوڈ ملان اور کرس ووکس نے ذاتی وجوہات کی بنا پر ہٹنے کا فیصلہ کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: آئی پی ایل 2021 (IPL 2021) کے مقابلے 19 ستمبر سے شروع ہونے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ ابھی ایک ہفتہ باقی ہے لیکن فرنچائززی آخری لمحات میں کھلاڑیوں کے ہٹنے سے ناراض ہیں اور انہوں نے اس حوالے سے بی سی سی آئی (BCCI) کو خط بھی لکھا ہے۔ معلوم ہو کہ انگلینڈ کے جونی بیئرسٹو ، ڈیوڈ ملان اور کرس ووکس نے ذاتی وجوہات کی بنا پر ہٹنے کا فیصلہ کیا۔ اسے مانچسٹر ٹیسٹ تنازع سے بھی جوڑا جا رہا ہے۔ حالانکہ کئی بڑے انگلش کھلاڑی ٹی 20 لیگ میں کھیلتے نظر آئیں گے۔

      سن رائزرس حیدرآباد سے جونی بیئرسٹو ، پنجاب کنگز سے ملان جبکہ کرس ووکس دہلی کیپیٹلز میں شامل تھے۔ حیدرآباد نے شرفین ردر فورڈ کو جبکہ پنجاب نے ایڈم مارکرم کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ ان سائڈ اسپورٹس کی خبر کے مطابق فرنچائزی نے بورڈ کو خط لکھا ہے۔ فرنچائزی کے ایک عہدیدار نے کہا ، 'جمعرات کو میں نے کھلاڑیوں سے بات کی اور سب نے بتایا کہ وہ 15 ستمبر کو ٹیم میں شامل ہوں گے لیکن ہفتہ کو ہمیں معلوم ہوا کہ وہ نہیں آ رہے ہیں۔ یہ مکمل طور پر غیر پیشہ ورانہ اور معاہدے کے خلاف ہے۔ ہم نے اس حوالے سے بی سی سی آئی کو ایک خط بھی لکھا ہے۔

      آخری منٹ میں ہٹنے سے پریشانی:
      حالانکہ عہدیدار نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ کھلاڑی اس وقت مشکلات سے گزر رہے ہیں۔ وہ مسلسل بایو بلبل میں رہ رہے ہیں۔ وہ ذہنی طور پر تھکے ہوئے ہیں لیکن ہمیں ان کو بھی سمجھنا ہوگا۔ آخری لمحات میں ان کے ہٹنے سے ہمارے لیے حالات کو سنبھالنا مشکل ہو جاتا ہے۔ واضح رہے کہ آئی پی ایل 2021 کو کورونا وائرس وبا کی وجہ سے 4 مئی کو ملتوی کردیا گیا تھا۔ باقی 31 میچز متحدہ عرب امارات میں 19 ستمبر سے ہونے ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: