உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آر سی بی کے ڈریسنگ روم کا ویڈیو وائرل، بات کرتے ہوئے رونے لگے وراٹ کوہلی ، فینس ہوئے جذباتی اور بول دی یہ بڑی بات

    وراٹ  کوہلی نے ساتھی کھلاڑیوں کو خصوصی پیغام بھی دیا۔ اس دوران وہ کافی جذباتی نظر آئے۔ بات کرتے ہوئے ان کا گلا بھی بھر گیا۔ اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد فینس بھی کافی جذباتی ہوگئے کہا کہ دل بہت اداس اور دکھ رہا ہے۔

    وراٹ کوہلی نے ساتھی کھلاڑیوں کو خصوصی پیغام بھی دیا۔ اس دوران وہ کافی جذباتی نظر آئے۔ بات کرتے ہوئے ان کا گلا بھی بھر گیا۔ اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد فینس بھی کافی جذباتی ہوگئے کہا کہ دل بہت اداس اور دکھ رہا ہے۔

    وراٹ کوہلی نے ساتھی کھلاڑیوں کو خصوصی پیغام بھی دیا۔ اس دوران وہ کافی جذباتی نظر آئے۔ بات کرتے ہوئے ان کا گلا بھی بھر گیا۔ اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد فینس بھی کافی جذباتی ہوگئے کہا کہ دل بہت اداس اور دکھ رہا ہے۔

    • Share this:
      آئی پی ایل 2021 میں رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کا سفر اختتام کو پہنچا۔ ایلیمینیٹر میچ میں وراٹ کوہلی (Virat Kohli)  کی آر سی بی کو کولکاتہ نائٹ رائیڈرز (کے کے آر) نے 4 وکٹوں سے شکست دی۔ آر سی بی کی ٹیم اس شکست سے بہت مایوس ہے۔ پہلا خطاب جیتنے کا خواب ٹوٹنے کے ساتھ ہی  یہ وراٹ کوہلی کا بطور کپتان آخری میچ تھا۔ کے کے آر کے ہاتھوں شکست کے بعد آر سی بی کے ڈریسنگ روم کی ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے۔

      اس ویڈیو میں وراٹ کوہلی سمیت پوری ٹیم ڈریسنگ روم میں مایوس نظر آرہی ہے۔ یہ دیکھ کر شائقین کے دل ٹوٹ گئے۔ وراٹ  کوہلی نے ساتھی کھلاڑیوں کو خصوصی پیغام بھی دیا۔ اس دوران وہ کافی جذباتی نظر آئے۔ بات کرتے ہوئے ان کا گلا بھی بھر گیا۔ اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد فینس بھی کافی جذباتی ہوگئے کہا کہ دل بہت اداس اور دکھ رہا ہے۔



      وراٹ کوہلی نے کہا کہ اگر ایمانداری سے کہوں تو 2016 کا سیزن ہمارے لیے بہت خاص تھا  لیکن ہم نے اس سیزن میں بھی لطف اٹھایا۔ اگرچہ کے کے آر سے شکست سے مایوس بھلے ہی  ہیں  لیکن ٹوٹے نہیں ہیں۔ ٹیم پر بہت فخر ہے۔ کوہلی نے سب کا شکریہ ادا کیا۔ میچ کی بات کریں تو پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے آر سی بی نے 7 وکٹوں پر 138 رنز بنائے۔کوہلی نے بطور کپتان آر سی بی کے لیے اپنے آخری میچ میں 39 رنز بنائے۔  آئی پی ایل کے 14 ویں سیزن (IPL 2021) کے ایلیمینیٹر میچ میں اسے پیر کو کولکاتہ نائٹ رائیڈرز کے ہاتھوں 4 وکٹوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ شارجہ میں کھیلے گئے اس میچ میں بنگلور نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 7 وکٹوں پر 138 رنز بنائے۔ کولکاتہ نے 6 وکٹوں کو کھوکر 2 گیندوں کے باقی رہتے ہدف حاصل کر لیا۔ وراٹ کوہلی نے بعد میں بتایا کہ میچ ہاتھ سے کب نکلا۔

      RCB vs KKR: وراٹ کوہلی نے بتایا بنگلور ٹیم کے ہاتھ سے کب اور کیسے پھسل گیا میچ

      وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے یہ بھی کہا کہ انہیں لگتا ہے کہ درمیانی اوورز میں جہاں کولکاتہ کے اسپنروں کا دبدبہ رہا وہی جیت اور ہار کا فرق تھا۔ وراٹ نے میچ کے بعد بتایاکہ “ان کے گیند باز اچھی جگہوں پر بولنگ کرتے رہے اور وکٹیں لیتے رہے۔ ہم نے ایک عمدہ آغاز کیا اور یہ سب اچھا بولنگ کرنے اور خراب بیٹنگ نہ کرنے کے بارے میں تھا۔ وہ میچ جیتنے اور اگلے راؤنڈ تک پہنچنے کے بالکل مستحق ہیں۔ آخر تک گیند سے لڑنا ہماری ٹیم کی پہچان رہی ہے۔ 22 رنز کے اس بڑے اوور کی وجہ سے ہم نے بیچ میں موقع ضائع کر دیا۔ ہم نے آخری اوور تک لڑا اور اسے ایک زبردست میچ بنایا۔ ہمیں بیٹنگ کرتے ہوئے 15 رنز کم کرنے اور گیند کے ساتھ کچھ بڑے اوور دینے کی قیمت چکانی پڑی۔ "
      Published by:Sana Naeem
      First published: