உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL Final 2022: گجرات ٹائٹنس کا خطاب پر قبضہ، فائنل میں راجستھان رائلس کو شکست

    پہلی بار آئی پی ایل میں شرکت کر رہی گجرات ٹائٹنس نے 15 ویں سیزن کا فائنل جیت کر تاریخ رقم کردی۔ گجرات ٹائٹنس (Gujarat Titans) نے سابق چمپئن راجستھان رائلس کو شکست دے کر تاریخ جیت حاصل کرلی ہے۔

    پہلی بار آئی پی ایل میں شرکت کر رہی گجرات ٹائٹنس نے 15 ویں سیزن کا فائنل جیت کر تاریخ رقم کردی۔ گجرات ٹائٹنس (Gujarat Titans) نے سابق چمپئن راجستھان رائلس کو شکست دے کر تاریخ جیت حاصل کرلی ہے۔

    پہلی بار آئی پی ایل میں شرکت کر رہی گجرات ٹائٹنس نے 15 ویں سیزن کا فائنل جیت کر تاریخ رقم کردی۔ گجرات ٹائٹنس (Gujarat Titans) نے سابق چمپئن راجستھان رائلس کو شکست دے کر تاریخ جیت حاصل کرلی ہے۔

    • Share this:
      ممبئی: پہلی بار آئی پی ایل میں شرکت کر رہی گجرات ٹائٹنس نے 15 ویں سیزن کا فائنل جیت کر تاریخ رقم کردی۔ گجرات ٹائٹنس (Gujarat Titans) نے سابق چمپئن راجستھان رائلس کو شکست دے کر تاریخ جیت حاصل کرلی ہے۔ گجرات ٹائٹنس نے راجستھان رائلس کی جانب سے ملے 131 رنوں کے ہدف کو جسے گجرات نے تین وکٹ کے نقصان پر حاصل کرلیا اور اسے سات وکٹ سے جیت حاصل ہوئی۔ راجستھان رائلس نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے مقررہ 20 اور میں 9 وکٹ گنواکر 130 رن بنائے، جس سے گجرات ٹائٹنس کو خطاب جیتنے کے لئے 131 رنوں کا ہدف ملا۔

      اسی کے ساتھ گجرات ٹائٹنس نے راجستھان رائلس کے سال 2008 کے ریکارڈ کی برابری بھی کرلی۔ تب اس نے اپنے ڈیبیو سیزن میں آئی پی ایل کا خطاب جیتا تھا۔ اب گجرات نے اپنے ڈیبیو سیزن میں خطاب پر قبضہ کیا۔ موجودہ سیزن میں لکھنو سپر جائنٹس اور گجرات کو پہلی بار موقع ملا تھا۔ آئی پی ایل 2022 میں کل 10 ٹیمیں اتری تھیں۔

      ہدف کا تعاقب کرنے اتری گجرات ٹائٹنس کی شروعات اچھی نہیں رہی۔ ردھمان ساہا دوسرے اوور میں 7 گیندوں پر 5 رن بناکر پرسدھ کرشنا کی گیند پر آوٹ ہوئے۔ ٹیم کا اسکور صرف 9 رن تھا۔ پانچویں اوور میں ٹرینٹ بولٹ نے گجرات کو دوسرا جھٹکا دیا۔ انہوں نے میتھیو ویڈ کو آوٹ کیا۔ انہوں نے 10 گیندوں پر 8 رن بنائے۔ اب اسکور 2 وکٹ پر 23 رن ہوگیا۔ 6 اوور کے بعد ٹیم کا اسکور دو وکٹ پر 31 رن تھا۔ شبھمن گل اور ہاردک پانڈیا کریز پر تھے۔

      ہدف کا تعاقب کرنے اتری گجرات ٹائٹنس کی شروعات اچھی نہیں رہی۔ ردھمان ساہا دوسرے اوور میں 7 گیندوں پر 5 رن بناکر ردھمان کرشنا کی گیند پر آوٹ ہوئے۔ ٹیم کا اسکور صرف 9 رن  تھا۔ پانچویں اوور میں ٹرینٹ بولٹ نے گجرات کو دوسرا جھٹکا دیا۔ انہوں نے میتھیو ویڈ کو آوٹ کیا۔ انہوں نے 10 گیندوں پر 8 رن بنائے۔ اب اسکور 2 وکٹ پر 23 رن ہوگیا۔ 6 اوور کے بعد ٹیم کا اسکور 2 وکٹ پر 31 رن تھا۔ شبھمن گل اور ہاردک پانڈیا کریز پر تھے۔

      ہاردک پانڈیا اور شبھمن گل نے سنبھالا

      کپتان ہاردک پانڈیا اور شبھمن گل نے 2 وکٹ گرنے کے بعد نصف سنچری شراکت کرکے ٹیم کو سنبھالا۔ 10 اوور کے بعد ٹیم کا اسکور 2 وکٹ پر 54 رن تھا۔ پہلے 11 اوور تک آر اشون سے گیند بازی نہیں کرائی گئی۔ وہ 12واں اوور ڈالنے آئے۔ اس اوور میں ہاردک پانڈیا نے چوکے اور چھکے لگائے۔ کل 15 رن بنے۔ 14ویں اوور میں یجویندر چہل کا شکار بنے۔ انہوں نے 30 گیندوں پر  34 رن بنائے۔ 3 چوکا اور ایک چھکا لگایا۔

      شبھمن نے ایک اینڈ سے سنبھالا

      شبھمن گل نے ٹیم کو ایک اینڈ سے سنبھالے رکھا۔ حالانکہ پہلے اوور میں بولٹ کی گیند پر چہل نے ان کا آسان کیچ چھوڑا تھا، تب سے صفر پر تھے۔ 15 اوور کے بعد اسکور 3 وکٹ پر 97 رن تھا۔ 30 گیند پر 34 رن بنانے تھے۔ 16ویں اوور میں اشون نے 12 رن دیئے۔ ملر نے چھکا لگایا۔ 17ویں اوور میں پرسدھ کرشنا نے 13 رن دیئے۔ ملر نے 2 چوکے لگائے۔ شبھمن گل 43 گیند پر 45 اور ملر 19 گیندوں پر 32 رن بناکر ناٹ آوٹ رہے۔ دونوں نے 47 رنوں کی ناٹ آوٹ شراکت کی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: