உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2022: لکھنو نے گیند بازوں کے دم پر پنجاب کو دبوچا، ٹورنا منٹ کی چھٹی جیت ملی

    لکھنو نے گیند بازوں کے دم پر پنجاب کو دبوچا

    لکھنو نے گیند بازوں کے دم پر پنجاب کو دبوچا

    لکھنو سپر جائنٹس (Lucknow Super Giants) نے آئی پی ایل 2022 میں اپنی شاندار کارکردگی برقرار رکھا ہے۔ ٹیم نے ایک مقابلے میں پنجاب کنگس (PBKS vs LSG) کو 20 رنوں سے شکست دی۔ یہ ٹیم کی 9 میچوں میں چھٹی جیت ہے۔

    • Share this:
      پنے: لکھنو سپر جائنٹس (Lucknow Super Giants) نے آئی پی ایل 2022 میں اپنی شاندار کارکردگی برقرار رکھا ہے۔ ٹیم نے ایک مقابلے میں پنجاب کنگس (PBKS vs LSG) کو 20 رنوں سے شکست دی۔ یہ ٹیم کی 9 میچوں میں چھٹی جیت ہے۔ آئی پی ایل 2022 کے 42 مقابلے میں پہلے بلے بازی کرتے ہوئے لکھنو کی ٹیم 8 وکٹ پر 153 رن ہی بناسکی۔ کوئی بلے باز نصف سنچری اننگ نہیں کھیل سکا۔ تیز گیند باز کگیسو رباڈا نے شاندار کارکردگی پیش کی اور چار وکٹ حاصل کئے۔

      جواب میں پنجاب کی ٹیم 20 اوور میں 8 وکٹ پر 133 رن ہی بناسکی۔ لکھنو کے گیند بازوں نے شاندار کارکردگی پیش کی۔ پنجاب کی ٹیم ٹیبل میں 8 پوائنٹ کے ساتھ ساتویں نمبر پر بنی ہوئی ہے۔ اس کی یہ 9 میچوں میں پانچویں شکست ہے۔ لکھنو کی ٹیم چوتھے سے تیسرے نمبر پر آگئی ہے۔ اس کے 9 میچوں میں 12 پوائنٹ ہوگئے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      حسن علی سمیت پاکستان کے 3 تیز گیند بازوں نے انگلینڈ میں مچایا کہرام

      ہدف کا تعاقب کرنے اتری پنجاب کنگس کی ٹیم کو کپتان مینک اگروال اور شکھر دھون نے اچھی شروعات دلائی۔ دونوں نے پہلے وکٹ کے لئے 4.4 اوور میں 35 رن جوڑے۔ مینک اگروال 17 گیندوں پر 25 رن بناکر دشمنتھا چمیرا کی گیند پر آوٹ ہوئے۔ انہوں نے 2 چوکے اور 2 چھکے لگائے۔ شکھر دھون بھی اس کے بعد آوٹ ہوگئے۔ ان کا وکٹ لیگ اسپنر روی بشنوئی کو ملا۔ انہوں نے 15 گیندوں پر 6 رن بنائے۔

      راج پکشے اور لیونگسٹون بھی آوٹ ہوئے

      نمبر-4 پر اترے سری لنکا کے بھانوکا راج پکشے بھی بڑی اننگ نہیں کھیل سکے۔ انہیں بائیں ہاتھ کے اسپنر کنال پانڈیا نے آوٹ کیا۔ انہوں نے سات گیندوں پر 9 رن بنائے۔ 58 رنوں پر تین وکٹ گرنے کے بعد میچ کافی دلچسپ ہوگیا تھا۔ اس کے بعد جانی بیرسٹو اور لیام لیونگسٹون نے ٹیم کو سنبھالا۔ تاہم لیونگسٹون بڑی اننگ نہیں کھیل سکے۔ وہ 16 گیندوں پر 18 رن بناکر محسن خان کی گیند پر آوٹ ہوئے۔ انہوں نے دو چھکے لگائے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: