ہوم » نیوز » اسپورٹس

عرفان پٹھان اور گوتم گمبھیر نے دھونی سے متعلق کیا یہ بڑا انکشاف، آپ جان کر رہ جائیں گے حیران

سابق آل راؤنڈر عرفان پٹھان نے دھونی کے غصے سے متعلق ایک قصہ بتایا، جس میں امپائر کے آؤٹ دینے کے بعد دھونی کو اتنا تیز غصہ آیا تھا کہ وہ اپنا بیٹ پھینک کر ڈریسنگ روم کی جانب تیزی سے چلے گئے تھے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 13, 2020 04:09 PM IST
  • Share this:
عرفان پٹھان اور گوتم گمبھیر نے دھونی سے متعلق کیا یہ بڑا انکشاف، آپ جان کر رہ جائیں گے حیران
عرفان پٹھان اور گوتم گمبھیر نے دھونی سے متعلق کیا یہ بڑا انکشاف

نئی دہلی: ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان ایم ایس دھونی کو ہمیشہ سے ہی ہندوستانی کرکٹ سرکٹ کی بہترین شخصیات میں سے ایک سمجھا جاتا ہے تاہم ایسی متعدد مثالیں ہیں جب 'کیپٹن کول' اپنا تحمل کھو بیٹھے، اس متعلق ان کے ٹیم ساتھی عرفان پٹھان اور گوتم گمبھیر نے اس تعلق سے اپنی یادوں کوتازہ کیا ہے۔ ٹیم انڈیا کے سابق کپتان اور اسٹار کرکٹر مہندر سنگھ دھونی کو دنیا کے سب سے زیادہ پرسکون کرکٹروں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ مہندر سنگھ دھونی کو ان کی پرسکون مزاجی کی وجہ سے ہی 'کیپٹن کول' کا نام دیا گیا تھا۔ دھونی کو میدان پر غصہ کرتے ہوئے بہت کم دیکھا گیا ہے، وہ مشکل سے مشکل حالات میں اپنا تحمل نہ کھونے کے لئے جانے جاتے ہیں۔

سابق آل راؤنڈر عرفان پٹھان نے دھونی کے غصے سے متعلق ایک قصہ بتایا، جس میں امپائر کے آؤٹ دینے کے بعد دھونی کو اتنا تیز غصہ آیا تھا کہ وہ اپنا بیٹ پھینک کر ڈریسنگ روم کی جانب تیزی سے چلے گئے تھے۔ اسٹار اسپورٹس کے کرکٹ کنکٹیڈ چیٹ شو کے دوران عرفان پٹھان نے دھونی کے غصے کے بارے میں کہا کہ یہ 07-2006 کی بات ہے، وارم اپ کے دوران ایک میچ تھا، جس میں تمام دائیں ہاتھ کے بلے بازوں کو بائیں ہاتھ سے بلے بازی کرنی تھی اور بائیں ہاتھ کے بلے بازوں کو دائیں ہاتھ سے۔جب وارم اپ ختم ہو جاتا تھا، تو ہم پریکٹس میں لگ جاتے تھے۔ وارم اپ میچ کے دوران دو ٹیمیں تھیں۔ ایک بار مہندر سنگھ دھونی کو آؤٹ دے دیا گیا تھا، جبکہ انہیں لگا تھا کہ وہ آؤٹ نہیں ہیں۔ عرفان نے آگے بتایا کہ دھونی نے غصے میں اپنا بیٹ پھینک دیا اور ڈریسنگ روم کی جانب تیزی سے چلے گئے۔ اس کے بعد وہ پریکٹس کے لئے بھی تاخیر سے آئے تھے۔


عرفان پٹھان نے دھونی کے غصے سے متعلق ایک قصہ بتایا، جس میں امپائر کے آؤٹ دینے کے بعد دھونی کو اتنا تیز غصہ آیا تھا کہ وہ اپنا بیٹ پھینک کر ڈریسنگ روم کی جانب تیزی سے چلے گئے تھے۔
عرفان پٹھان نے دھونی کے غصے سے متعلق ایک قصہ بتایا، جس میں امپائر کے آؤٹ دینے کے بعد دھونی کو اتنا تیز غصہ آیا تھا کہ وہ اپنا بیٹ پھینک کر ڈریسنگ روم کی جانب تیزی سے چلے گئے تھے۔


ٹیم انڈیا کے ان کے دیگر ساتھی اور موجودہممبر پارلیمنٹ گوتم گمبھیر نے دھونی کے بارے میں اسٹار اسپورٹس کے چیٹ شو کرکٹ کنکٹیڈ پر کہا کہ لوگ كہتے ہیں کہ انہوں نے دھونی کو کبھی غصہ ہوتے نہیں دیکھا، لیکن میں نے کئی بار دیکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ بھی انسان ہیں اور وہ بھی ردعمل دیتے ہیں۔ ایسا کرنے میں کچھ غلط نہیں ہے۔ چنئی سپر کنگس میں بھی، اگر فیلڈنگ خراب ہوتی اور کوئی کیچ چھوڑتا تووہ ناراض ہوتے تھے۔ ہاں وہ پرسکون رہتے ہیں، یقینی طور پر باقی کپتانوں کے مقابلے میں وہ کافی پرسکون رہتے ہیں۔ یقینی طور پر میرے مقابلے میں وہ کافی پرسکون ہیں۔ آسٹریلیا کے سابق تیزگیند باز بریٹ لی نے بھی گمبھیر کی تائید کی ہے اور کہا کہ ہمیں ایسے کھلاڑیوں کی ضرورت ہے، جو تفریح ​​کریں اور دھونی ایسے ہی کھلاڑی ہیں۔ وہ باؤنڈری مارک کا سامنا نہیں کرتے ہیں اور اگر انہوں نے ایسا کیا ہے تو یہ کافی کم ہوا ہے، لیکن جیسا گوتم گمبھیر نے کہا کہ ہم سب انسان ہیں۔

گوتم گمبھیر نے کہا کہ لوگ كہتے ہیں کہ انہوں نے دھونی کو کبھی غصہ ہوتے نہیں دیکھا لیکن میں نے کئی بار دیکھا ہے۔
گوتم گمبھیر نے کہا کہ لوگ كہتے ہیں کہ انہوں نے دھونی کو کبھی غصہ ہوتے نہیں دیکھا لیکن میں نے کئی بار دیکھا ہے۔


حال ہی میں، کلدیپ یادو، موہت شرما، دیپک چاہر اور محمد سمیع سمیت متعدد ہندوستانی کرکٹرز نے بھی واقعات سنائے ہیں، جب دھونی نے کرکٹ کے شائقین کو اپنا دوسرا رخ دکھایا۔ ٹیم انڈیا کے سابق کپتان اور اسٹار کرکٹر مہندر سنگھ دھونی دنیا کے سب سے زیادہ کامیاب کپتانوں میں شمار ہیں۔ دھونی نے ہندوستان کے لئے 90 ٹیسٹ میچ، 350 ون ڈے انٹرنیشنل میچ اور 98 ٹی 20 انٹرنیشنل میچ کھیلے ہیں۔ ان کی کپتانی میں ہندوستان نے 2007 ٹی 20 ورلڈ کپ، 2011 ورلڈ کپ اور 2013 چمپئنز ٹرافی جیتی ہے۔ وہ واحد ایسے کپتان ہیں، جن کی کپتانی میں تینوں آئی سی سی ٹرافی جیتی گئی ہیں۔دھونی نے اپنا آخری انٹرنیشنل میچ گزشتہ سال جولائی میں کھیلا تھا۔ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ کے خلاف شکست کے بعد سے انہوں نے ٹیم انڈیا کے لئے کوئی میچ نہیں کھیلا ہے۔ اس دوران دھونی کے ریٹائرمنٹ کے متعلق بھی بحث جاری ہے۔ اگرچہ دھونی نے خود ابھی تک اپنے ریٹائرمنٹ کے بارے میں کوئی بیان نہیں دیا ہے۔
First published: May 13, 2020 04:09 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading