ہوم » نیوز » اسپورٹس

عرفان پٹھان اس افسوس کےساتھ ہوئے ریٹائر، کہا- شکایت نہیں ہے لیکن...۔

عرفان پٹھان جب 19 سال کے تھے، تب انہوں نے 2003 میں آسٹریلیا کے خلاف ہندوستان کی طرف سے پہلا میچ کھیلا تھا۔

  • Share this:
عرفان پٹھان اس افسوس کےساتھ ہوئے ریٹائر، کہا- شکایت نہیں ہے لیکن...۔
عرفان پٹھان۔ تصویر: پی ٹی آئی

عرفان پٹھان نےہفتہ کوکرکٹ کےسبھی فارمیٹ سے ریٹائرمنٹ لینےکا اعلان کردیا۔ اس دوران انہوں نےکہا، 'لوگ 28-27 سال کی عمرمیں اپنا کیریئرشروع کرتے ہیں اورمیرا کیریئرتب ختم ہوگیا، جب میں27 سال کا تھا اورمجھ کواس کا افسوس ہے'۔ عرفان پٹھان جب 19 سال کےتھے، تب انہوں نے2003 میں آسٹریلیا کےخلاف ہندوستان کی طرف سے پہلا میچ کھیلا تھا۔ انہوں نےاپنا آخری میچ 2012 میں سری لنکا کے خلاف عالمی ٹی -20 میں کھیلا تھا۔ عرفان پٹھان اب 35 سال کے ہیں۔ انہوں نے کہا 'لوگ 28-27 سال کی عمرمیں اپنا کیریئرشروع کرتے ہیں اورمیرا کیریئرتب ختم ہوگیا، جب میں 27 سال کا تھا، تب میں نے 301 بین الاقوامی وکٹ حاصل کرلئےتھے، لیکن میرا کیریئروہیں پرختم ہوگیا۔ مجھےاس کا افسوس ہے'۔


کوئی شکایت نہیں، لیکن افسوس ہوتا ہے


عرفان پٹھان نےکہا، 'میں چاہتا تھا کہ میں اورمیچ کھیلوں اوراپنے وکٹوں کی تعداد 600-500 تک پہنچاؤں اوررن بناؤں، لیکن ایسا نہیں ہوپایا۔ 27 سالہ عرفان پٹھان کواپنے کیریئر کےعروج پرزیادہ مواقع نہیں ملے۔ جوبھی وجہ رہے ہوں، ایسا نہیں ہوا۔ کوئی شکایت نہیں ہے، لیکن جب پیچھے مڑکردیکھتا ہوں، تو افسوس ہوتا ہے'۔


عرفان پٹھان نے 19 سال کی عمرمیں بین الاقوامی ڈیبیو کیا تھا۔


اب ٹیم انڈیا میں نہیں ہوگی واپسی

عرفان پٹھان نےکہا کہ 2016 میں پہلی بارانہیں لگا کہ اب وہ پھرسےکبھی ہندوستان کی طرف سے نہیں کھیل پائیں گے۔ انہوں نےکہا 'میں 2016 کے بعد سمجھ گیا کہ میں واپسی نہیں کرنے والا ہوں جبکہ میں تب مشتاق علی ٹرافی میں سب سے زیادہ رن بنائےتھے۔ میں سب سےبہترین آل راؤنڈرتھا اورجب میں نےسلیکٹروں سےبات کی تووہ میری گیند بازی سے بہت خوش نہیں تھے'۔

عرفان پٹھان نے ٹسٹ میں ہیٹ ٹرک بنائی تھی۔


سال 2008 میں کھیلا تھا آخری ٹسٹ

بڑودہ میں پیدا ہوئےاس کرکٹرکوپرتھ میں 2008 میں شاندارکارکردگی کےلئے'مین آف دی میچ' منتخب کیا گیا، لیکن اس کے بعد وہ صرف دوٹسٹ ہی اورکھیل پائے۔ انہوں نےکہا 'لوگ پرتھ ٹسٹ کی بات کرتےہیں ۔ اگرلوگ پورے اعدادوشمارپرغورکریں تواس کے بعد میں صرف ایک ٹسٹ (اصل میں دوٹسٹ) ہی اورکھیلا۔ میں اس میچ میں مین آف دی میچ تھا، لیکن پھرمجھے مواقع نہیں ملے۔ یہاں تک جنوبی افریقہ کے خلاف اپنے آخری میچ میں میں آل راؤنڈرکےطورپرکھیلا تھا۔ میں نےنمبر7 پربلے بازی کی تھی'۔
First published: Jan 05, 2020 09:42 AM IST