உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹی-20 عالمی کپ کا ’پلیئر آف دی میچ‘، پہلے اوور میں ہیٹ ٹرک، جانیں پھر کب ملے گا ایسا آل راونڈر

    ٹی-20 عالمی کپ کا ’پلیئر آف دی میچ‘ پہلے اوور میں ہیٹ ٹرک، جانیں پھر کب ملے گا ایسا آل راونڈر

    ٹی-20 عالمی کپ کا ’پلیئر آف دی میچ‘ پہلے اوور میں ہیٹ ٹرک، جانیں پھر کب ملے گا ایسا آل راونڈر

    عرفان پٹھان (Irfan Pathan) ہندوستان کے واحد کھلاڑی ہیں، جو ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup) کے فائنل میں پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ جیت چکے ہیں۔ ٹسٹ میچ کے پہلے ہی اوور میں ہیٹ ٹرک (Test Hat-trick) جیسی اور کئی وجوہات ہیں، جو اس کھلاڑی کو کپل دیو کے بعد ہندوستان کا سب سے عظیم آل راونڈر بناتی ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup) کے فائنل میں پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ جیتنا ہو یا ٹسٹ میچ کے پہلے ہی اوور میں ہیٹ ٹرک... ایسی مختلف وجوہات ہیں، جو عرفان پٹھان (Irfan Pathan) کو کپل دیو کے بعد ہندوستان کا سب سے عظیم آل راونڈر بناتی ہیں۔ ہندوستانی کرکٹ میں ایسے کئی ریکارڈ ہیں، جو کچھ ہی کھلاڑی حاصل کر سکے ہیں اور اتفاق سے عرفان پٹھان (Irfan Pathan Birthday) ان میں سے ایک ہیں۔ بڑودہ میں پیدا ہوا یہ کھلاڑی 27 اکتوبر کو اپنا 38 واں یوم پیدائش منایا ہے۔

      عرفان پٹھان، ہندوستان کے اس کرکٹر کی صلاحیت کو پوری دنیا سلام کرتی ہے۔ عرفان پٹھان جب پاکستان کے خلاف انڈر-19 کرکٹ کھیل رہے تھے، تبھی سوربھ گانگولی کی نظر ان کے کھیل پر پڑی۔ اب کہنے کی بات نہیں کہ سوربھ گانگولی نے کیا کیا ہوگا۔ موجودہ بی سی سی آئی صدر اس وقت ٹیم انڈیا کے کپتان ہوا کرتے تھے۔ انہوں نے ٹیم کے سلیکٹروں سے بات کی اور کچھ ہی دن کے اندر عرفان پٹھان پاکستان سے آسٹریلیا پہنچ گئے۔ انڈر-19 ٹیم سے ٹیم انڈیا کے رکن بن گئے۔

      عرفان پٹھان کی انٹری کے بعد ہندوستانی ٹیم کی وہ کمی پوری ہوگئی، جو کپل دیو کے ریٹائرمنٹ کے بعد پیدا ہوئی تھی۔
      عرفان پٹھان کی انٹری کے بعد ہندوستانی ٹیم کی وہ کمی پوری ہوگئی، جو کپل دیو کے ریٹائرمنٹ کے بعد پیدا ہوئی تھی۔


      عرفان پٹھان نے پوری کی کپل دیو کی کمی

      عرفان پٹھان کی انٹری کے بعد ہندوستانی ٹیم کی وہ کمی پوری ہوگئی، جو کپل دیو کے ریٹائرمنٹ کے بعد پیدا ہوئی تھی۔ ایک ایسا گیند باز جو سوئنگ اور سیم بالنگ کرتا تھا اور پہلا اوور ڈالنے کی قابلیت رکھتا تھا۔ سونے پر سہاگا یہ کہ اس سے کسی بھی آرڈر پر بلے بازی کروا لیجئے۔ حالانکہ، امیدوں کا دباو کہئے یا ان کے بلے بازی آرڈر سے بار بار چھیڑ چھاڑ، عرفان پٹھان اپنی صلاحیت کے مطابق، کیریئر لمبا نہیں کھینچ سکے، لیکن اس بات میں کوئی شک نہیں کہ کپل دیو کے بعد وہ ہندوستان کے بہترین آل راونڈر ہیں۔

      پاکستان رہا ہے سخت حریف

      سوربھ گانگولی نے عرفان پٹھان کو پاکستان سے جب آسٹریلیا بلایا، تب وہ بنگلہ دیش یوتھ ٹیم کے خلاف 9 وکٹ لینے کے سبب سرخیوں میں تھے۔ اتفاق دیکھئے کہ عرفان پٹھان کی بہترین کارکردگی بھی پاکستان کے خلاف ہی رہی۔ وہ بھی ایک بار نہیں، بار بار۔ انہوں نے 2005 میں پاکستان کے خلاف ٹسٹ میچ میں اسی کی سرزمین پر پہلے ہی اوور میں ہیٹ ٹرک لی۔ اس کے دو سال بعد انہوں نے ٹی-20 میچ میں تب اپنی سب سے بہترین کارکردگی پیش کی، جب ہندوستان کو اس کی سب سے زیادہ ضرورت تھی۔ یہ میچ تھا جنوبی افریقہ میں کھیلا گیا پہلا ٹی-20 عالمی کپ کا فائنل۔ عرفان پٹھان نے اس میچ میں صرف 16 رن دے کر 3 وکٹ تھے اور پلیئر آف دی میچ منتخب کئے گئے تھے۔

      سوربھ گانگولی نے عرفان پٹھان کو پاکستان سے جب آسٹریلیا بلایا، تب وہ بنگلہ دیش یوتھ ٹیم کے خلاف 9 وکٹ لینے کے سبب سرخیوں میں تھے۔ اتفاق دیکھئے کہ عرفان پٹھان کی بہترین کارکردگی بھی پاکستان کے خلاف ہی رہی۔
      سوربھ گانگولی نے عرفان پٹھان کو پاکستان سے جب آسٹریلیا بلایا، تب وہ بنگلہ دیش یوتھ ٹیم کے خلاف 9 وکٹ لینے کے سبب سرخیوں میں تھے۔ اتفاق دیکھئے کہ عرفان پٹھان کی بہترین کارکردگی بھی پاکستان کے خلاف ہی رہی۔


      ہندوستان کے ٹاپ-3 میں شامل رہے عرفان

      عرفان پٹھان کا نام بار بار اس فہرست میں آتا ہے، جو کسی بھی کرکٹر کا خواب ہوسکتا ہے۔ جیسے کہ عالمی کپ فائنل میں ’پلیئر آف دی میچ‘ کا ایوارڈ۔ ہندوستان کے صرف تین کرکٹر یہ ایوارڈ جیت سکے ہیں اور عرفان پٹھان بھی ان میں سے ایک ہیں۔ باقی دو نام موہندر امرناتھ اور ایم ایس دھونی ہے۔ اسی طرح ٹسٹ میچ میں صرف تین گیند بازوں نے ہیٹ ٹرک لئے ہیں، ان میں عرفان پٹھان بھی شامل ہیں۔ اس فہرست میں پہلا ہندوستانی نام ہربھجن سنگھ اور آخری نام جسپریت بمراہ کا ہے۔

       

       

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: