உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹی-20 عالمی کپ: میتھیو ہیڈن نے پاکستان کی جیت کو اسلام سے جوڑا، کہا- انشاء اللہ فائنل میں بنائیں گے جگہ

    ٹی-20 عالمی کپ: ہیڈن نے پاکستان کی جیت کو اسلام سے جوڑا، کہا- انشاء اللہ فائنل میں بنائیں گے جگہ

    ٹی-20 عالمی کپ: ہیڈن نے پاکستان کی جیت کو اسلام سے جوڑا، کہا- انشاء اللہ فائنل میں بنائیں گے جگہ

    T20 World Cup 2021: پاکستان (Pakistan) نے اپنے پانچوں گروپ میچ جیتے ہیں اور اسے خطاب کا مضبوط دعویدار مانا جا رہا ہے۔ پاکستانی ٹیم جمعرات کو سیمی فائنل میں آسٹریلیا سے مدمقابل ہوگی۔ پاکستان کے بلے بازی مشیر میتھیو ہیڈن (Matthew Hayden) نے ٹیم کی کامیابی کا سہرا بابر اعظم (Babar Azam) کے سرباندھ دیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان (Pakistan) کے بلے بازی مشیر میتھیو ہیڈن (Matthew Hayden) کا ماننا ہے کہ روایتی حریف ہندوستان کے خلاف پہلے میچ میں 10 وکٹ کی جیت نے موجودہ عالمی کپ (T20 World Cup) میں ان کی ٹیم کی اچھی کارکردگی کی بنیاد رکھی۔ انہوں نے ٹورنامنٹ میں اب تک کوئی میچ نہیں گنوانے کی وجہ ٹریننگ اور کھلاڑیوں کی روحانیت سے وابستگی بتائی۔ پاکستان نے اپنے پانچوں گروپ میچ جیتے ہیں اور اسے خطاب کا مضبوط دعویدار مانا جا رہا ہے۔ ٹیم جمعرات کو سیمی فائنل میں آسٹریلیا (PAK vs AUS) سے مدمقابل ہوگی۔

      اس ٹورنامنٹ کے لئے پاکستان کے بلے بازی مشیر بنائے گئے ہیڈن نے بے حد دباو کے دوران شاندار جذبہ اور کنٹرول رکھنے کے لئے کپتان بابر اعظم (Babar Azam) کی تعریف کی۔ میتھیو ہیڈن نے میچ سے قبل پریس کانفرنس میں نامہ نگاروں سے کہا، ’اس مہم کی توجہ اور کشش دبئی میں ہندوستان کے خلاف کھیلے گئے پہلے میچ سے رہی، جہاں ہم کل رات کھیلیں گے۔ اس کا موازنہ صرف ایشیز سیریز سے ہی ہوسکتی ہے۔ اتنے بڑے میچ کو کھیلنے کو لے کر ان کھلاڑیوں کا رویہ اور خود اعتمادی بہت شاندار تھی‘۔

      میتھیو ہیڈن نے بابر اعظم کی جم کر تعریف کی اور کہا کہ ان کی شخصیت ہندوستان کے وراٹ کوہلی سے بالکل مختلف ہے، جو کھیل کے ہم منصب کھلاڑی ہیں۔
      میتھیو ہیڈن نے بابر اعظم کی جم کر تعریف کی اور کہا کہ ان کی شخصیت ہندوستان کے وراٹ کوہلی سے بالکل مختلف ہے، جو کھیل کے ہم منصب کھلاڑی ہیں۔


      میتھیو ہیڈن نے کہا، ’مجھے لگتا ہے کہ اس میچ نے چار ہفتے کے ٹھوس کام، ٹریننگ سے متعلق عزم کی بنیاد رکھی۔ ساتھ ہی اسلام کے ساتھ دل کا رشتہ ہے اور اس طرح روحانیت نے پاکستانی ٹیم کی رہنمائی اور سبھی کو متحد کرنے میں اہم کردار ادا کیا‘۔ حکمت عملی کے طور پر میتھیو ہیڈن کو جمعرات کو اپنے سابق ساتھی سلامی جوڑی دار جسٹن لینگر سے چیلنج ملے گا جو آسٹریلیا کے چیف کوچ ہیں۔ ہیڈن کا ماننا ہے کہ آسٹریلیائی کھلاڑیوں اور کرکٹ تہذیب کو لے کر ان کی سمجھ سے پاکستان کو فائدہ ہوگا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      بابر اعظم نے حسن علی- فخر زماں کے بچاو میں کہا- ہر میچ میں 11 کھلاڑی بہترین کارکردگی نہیں پیش کرسکتے 


      انہوں نے کہا، ’یہ کافی عام احساس ہے۔ میں دو دہانی سے زیادہ وقت تک آسٹریلیائی کرکٹ کا رکن رہا، اس لئے اس سے مجھے ان کھلاڑیوں کی ہی نہیں بلکہ آسٹریلیا میں کرکٹ تہذب کی بھی اچھی سمجھ ہے‘۔ میتھیو ہیڈن کا ماننا ہے کہ پاکستان کے لئے ٹی-20 عالمی کپ خطاب کافی اہم ہوگا، جسے سیکورٹی اسباب سے لمبے وقت تک بین الاقوامی کرکٹ کی میزبانی سے محروم رہنا پڑا۔ انہوں نے کہا، ’ہاں، یہ پاکستان کے لئے بے حد اہم ٹورنامنٹ ہے۔ ہمارے پاس یہاں کھلاڑیوں کی ایسی ٹیم ہے، جو کارکردگی پیش کرنے کے لئے تیار ہیں اور سیمی فائنل ہی نہیں بلکہ انشاء اللہ، ہم اس سے آگے جائیں گے، فائنل میں جگہ بنائیں گے‘۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      روہت شرما کی ٹیم سے باہر ہونے کے بعد وراٹ کوہلی نےکہا- ہندوستانی کرکٹ تاریخ میں یاد رکھا جائے گا 


      میتھیو ہیڈن نے بابر اعظم کی جم کر تعریف کی اور کہا کہ ان کی شخصیت ہندوستان کے وراٹ کوہلی سے بالکل مختلف ہے، جو کھیل کے ہم منصب کھلاڑی ہیں۔ انہوں نے کہا، ’بابر اور اس کی شخصیت ایسی ہے کہ آپ کو جو نظر آرہا ہے وہی ملے گا۔ اس میں تسلسل ہے۔ وہ کافی مستحکم ہے۔ میں تو یہ کہوں گا کہ اس کی شخصیت وراٹ کوہلی جیسے کھلاڑی سے پوری طرح مختلف ہے، جو کافی جنونی، خود کو ظاہر کرنے والا اور میدان پر کافی جوشیلا ہے‘۔ میتھیو ہیڈن نے تیزگیند باز شاہین شاہ آفریدی کی بھی تعریف کی اور ان کے لوکیش راہل کو آوٹ کرکے اپنے ذریعہ دیکھے گئے سب سے بہترین وکٹ میں سے ایک قرار دیا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: