உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’پرویز رسول کو پھانسی پر لٹکنے کے لئے لمبی رسی دو‘ افسر کی بات پر ناراض ہوا کشمیری کرکٹر

    وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کی ٹیم کا حصہ رہ چکے کشمیری کرکٹر پرویز رسول (Parvez Rasool) کے مطابق، ایک افسر نے سوشل ویب سائٹ پر سلکھا کہ پرویز رسول کو ایک لمبی رسی دی جانی چاہئے، تاکہ وہ خود کو پھانسی لگا لے۔

    وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کی ٹیم کا حصہ رہ چکے کشمیری کرکٹر پرویز رسول (Parvez Rasool) کے مطابق، ایک افسر نے سوشل ویب سائٹ پر سلکھا کہ پرویز رسول کو ایک لمبی رسی دی جانی چاہئے، تاکہ وہ خود کو پھانسی لگا لے۔

    وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کی ٹیم کا حصہ رہ چکے کشمیری کرکٹر پرویز رسول (Parvez Rasool) کے مطابق، ایک افسر نے سوشل ویب سائٹ پر سلکھا کہ پرویز رسول کو ایک لمبی رسی دی جانی چاہئے، تاکہ وہ خود کو پھانسی لگا لے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ہندوستانی کرکٹر پرویز رسول (Parvez Rasool) پر چوری کا الزام لگایا گیا ہے۔ جموں وکشمیر کرکٹ ایسوسی ایشن نے ان پر رولر چوری کرنے کا الزام لگایا ہے۔ ایسوسی ایشن نے پرویز رسول کو پچ رولر واپس کرنے کے لئے کہا ہے اور ایسا نہ کرنے پر پولیس کارروائی کی بھی وارننگ دی ہے۔ اس الزام کے بعد پرویز رسول نے کہا کہ انہیں ایسا محسوس ہو رہا ہے کہ انہیں پریشان کیا جارہا ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ چیزوں کو ہاتھ سے نکلنے سے پہلے ہی بی سی سی آئی (BCCI) اس معاملے میں مداخلت کرے۔

      انڈین ایکسپریس کی خبر کے مطابق، ٹیم انڈیا کا حصہ رہ چکے جموں وکشمیر کے نوجوان کھلاڑی پرویز رسول کو نوٹس بھی بھیجا گیا ہے۔ پرویز رسول نے کہا کہ ان لوگوں کا کہنا ہے کہ ان کے پاس کافی ثبوت ہیں اور پولیس کارروائی کی جائے گی۔

      افسر نے کیا متنازعہ تبصرہ!

      32 سال کے آل راونڈر پرویز رسول نے کہا کہ انہیں اس وقت اور بھی زیادہ برا لگا، جب ایک افسر نے سوشل ویب سائٹ پر لکھا کہ رسول کو ایک لکمبی رسی دی جانی چاہئے، تاکہ وہ  خود کو پھانسی لگا لے۔ حالانکہ بعد میں اس افسر نے اس کمنٹ کو ڈیلیٹ کر دیا۔

      وراٹ کوہلی کی آئی پی ایل ٹیم رائل چیلنجرس بنگلور کا بھی حصہ رہے چکے پرویز رسول نے کہا کہ افسر نے کمنٹ (تبصرہ) ڈیلیٹ کردیا، مگر میرے پاس اسکرین شاٹ ہے۔ کیا کوئی مجھے بتا سکتا ہے کہ میں نے ایسا کیا غلط کیا ہے کہ مجھے پھانسی چڑھانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر آپ کو کوئی خدشہ ہے تو میرے فون نمبر ان کے پاس ہیں، وہ مجھے فون کرسکتے ہیں۔ اس میں صرف بات واضح کرنے کے لئے کچھ سیکنڈ لگیں گے، مگر ایسا لگتا ہے کہ وہ مجھے پریشان کرنا چاہتے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: