ہوم » نیوز » اسپورٹس

کیا واقعی اوسین بولٹ سے تیز ہے اس ہندوستانی کی رفتار ؟ یہ ہے پوری سچائی

  • Share this:
کیا واقعی اوسین بولٹ سے تیز ہے اس ہندوستانی کی رفتار ؟ یہ ہے پوری سچائی
کیا واقعی اوسین بولٹ سے تیز ہے اس ہندوستانی کی رفتار ؟ یہ ہے پوری سچائی

دنیا کے تیزترین رنر اوسین بولٹ کا عالمی ریکارڈ توڑنا ہر کھلاڑی کا خواب ہے ۔ لیکن آج بھی کوئی ان کے ریکارڈ کے آس پاس نہیں پہنچ پایا ہے ۔ حالانکہ ان کے ریکارڈ کو کئی مرتبہ چیلنج بھی کیا گیا ۔ ایک ہندوستانی رنر نے بھی اپنی رفتار سے ان کے ریکارڈ کو چیلینج کیا ہے ، جس کی وجہ سے وہ راتوں رات ملک بھر میں مشہور ہوگیا ۔ دراصل کرناٹک کے ایک گاؤں کے رہنے والے اور کمبلا جاکی 28 سالہ سرینواس گوڑا نے تاریخ رقم کردی ہے ۔ وہ ساحلی علاقوں کے روایتی کھیلوں میں سب سے تیز رنر بن گئے ہیں ۔ انہوں نے 30 سال پرانا ریکارڈ توڑ دیا۔ تاہم ان کے ریکارڈ کا موازنہ بھی اوسین بولٹ کے 100 میٹر کے عالمی ریکارڈ سے کیا جارہا ہے۔ بولٹ کے نام 9.58 سیکنڈ میں 100 میٹر کی ریس پوری کرنے کا عالمی ریکارڈ ہے۔


در اصل سرینواس نے بھینس کی روایتی ریس میں 13.62 سیکنڈ میں 142.50 میٹر کی ریس پوری کی اور یہ وقت انہیں ساحلی علاقوں کے روایتی کھیلوں کی تاریخ کا تیز ترین رنر بنانے کے لئے کافی تھا ۔ جیسے ہی سرینواس نے ریس پوری کی ، لوگوں نے حساب لگانا شروع کردیا کہ ان کی رفتار 100 میٹر میں کیا رہی ہوگی اور لوگوں کے حساب کے مطابق انہوں نے 100 میٹر کی دوڑ 9.55 سیکنڈ میں پوری کی ، جو بولٹ کے ریکارڈ وقت سے پوائنٹ 03 سیکنڈ کم ہے ۔


اس میں کوئی شک نہیں کہ سرینواس نے اپنے کھیل میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ۔ ان کی یہ کارکردگی قابل تحسین ہے۔ لیکن کیا وہ واقعی بولٹ سے تیز ہیں ۔ حالانکہ بولٹ اور ان کے ریکارڈ کا براہ راست موازنہ نہیں کیا جارہا ہے ، کیونکہ کمبلا جاکی بھینسوں کی جوڑی کے ساتھ دوڑتے ہیں اور بھینس کی رفتار کی وجہ سے اس کی رفتار بھی بڑھ جاتی ہے۔



علاوہ ازیں یہ ریس مٹی سے بھرے ٹریک پر ہوئی ، جہاں رفتار بڑھنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ہے ۔ بلکہ کیچڑ اور پانی سے بھرے ٹریک رنرس کی راہ میں روکاوٹ بنتے ہیں ، اسی وجہ سے   ان کی رفتار پر بھی سوالات اٹھتے ہیں۔

کرناٹک کے اس رنر نے 142.50 میٹر کی ریس پوری کی اور اسی رفتار کے حساب سے 100 میٹر کا وقت لوگوں نے نکال لیا ۔ تاہم اس کے حساب کتاب کا پیمانہ کیا تھا ۔ آیا اس کے پاس الیکٹرانک ٹائمر تھا یا نہیں ، اس کا انکشاف ابھی تک نہیں ہوسکا ہے۔

کرناٹک کے اس رنر نے 142.50 میٹر کی ریس پوری کی ۔ تصویر : ٹویٹر ۔
کرناٹک کے اس رنر نے 142.50 میٹر کی ریس پوری کی ۔ تصویر : ٹویٹر ۔


سرینواس کی عمر تقریبا 28 سال ہے اور چھ سال قبل انہوں نے کمبلا جاکی کی تیاری شروع کردی تھی ۔ اگر ان کی عمر کو دیکھا جائے تو انہیں اس کا تجربہ بھی اچھا ہوگا ، لیکن اس سے پہلے کبھی بھی ان کا نام رفتار کی وجہ سے سرخیوں میں نہیں آیا ۔
First published: Feb 14, 2020 08:21 PM IST