உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lalit Modi Biopic:للت مودی پر بنے گی فلم، IPLکی کہانی سے اٹھایا جائے گا پردہ

    للت مودی پر بنے گی فلم۔

    للت مودی پر بنے گی فلم۔

    Lalit Modi Biopic: آئی پی ایل کی بات کریں تو اس کی شروعات 2008 میں ہوئی تھی۔ یہ لیگ 8 ٹیموں کے ساتھ شروع ہوئی۔ آج بھی لوگوں کے سروں پر آئی پی ایل کا راج ہے۔ اب آئی پی ایل کا 15 واں سیزن چل رہا ہے۔

    • Share this:
      بالی ووڈ میں اس وقت بایوپکس کا ٹرینڈ چل رہا ہے۔ کئی مشہور شخصیات پر فلمیں بن رہی ہیں۔ حال ہی میں کرکٹر کپل دیو پر ایک فلم بنائی گئی۔ جس میں 1983 میں جیتنے والے ورلڈ کپ کی کہانی دکھائی گئی۔ اب للت مودی پر فلم بن رہی ہے۔ للت مودی پر بننے والی بائیوپک کتاب ماورک کمشنر پر مبنی ہوگی۔ وشنو وردھن اندوری اس فلم کو پروڈیوس کریں گے۔ وشنو اس سے قبل 83 اور تھلائیوی جیسی فلمیں بنا چکے ہیں جو تھیٹروں میں ہٹ ثابت ہوئی۔

      وشنو نے سوشل میڈیا پر پوسٹ شیئر کرکے بایوپک کا اعلان کیا ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کیا- 83 ورلڈ کپ جیتنا ہمالیہ کی چوٹی کو چھونا تھا۔ اسپورٹس جرنلسٹ بوریا مزومدار کی کتاب ماورک کمشنر آئی پی ایل کی شخصیت اور اس کے پیچھے کارفرما للت مودی کی شخصیت کو ظاہر کرتی ہے۔ یہ اعلان کرتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ ہم اس کتاب پر فلم بنانے جا رہے ہیں۔

      وشنو نے ایک انٹرویو میں کہا کہ آئی پی ایل نے کرکٹ کی دنیا کو ہمیشہ کے لیے بدل دیا ہے۔ اس کتاب میں آئی پی ایل کے بارے میں بہت کچھ بتایا گیا ہے۔ اس شخص کے بارے میں بھی جسے آئی پی ایل کے آغاز کا ذمہ دار سمجھا جاتا ہے۔


      یہ بھی پڑھیں:
      IPL 2022: ماں کے ساتھ ممبئی انڈینس کو سپورٹ کرنے پہنچیں سارہ، بھائی ارجن کے ڈیبیو کی بحث

      للت مودی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ 2010 میں ہندوستان سے لندن چلے گئے تھے۔ ان پر منی لانڈرنگ کا مقدمہ چل رہا ہے لیکن ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے کوئی غلط کام نہیں کیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پاکستانی خاتون کرکٹرFatima San نے کیا عمرہ، خانہ کعبہ سے تصویر شیئر کرکے کہا، اللہ اکبر۔۔۔

      آئی پی ایل کی بات کریں تو اس کی شروعات 2008 میں ہوئی تھی۔ یہ لیگ 8 ٹیموں کے ساتھ شروع ہوئی۔ آج بھی لوگوں کے سروں پر آئی پی ایل کا راج ہے۔ اب آئی پی ایل کا 15 واں سیزن چل رہا ہے۔ اس میں کئی کھلاڑیوں کی شاندار کارکردگی کی وجہ سے وہ قومی ٹیموں میں جگہ بنانے میں کامیاب رہے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: