ہوم » نیوز » اسپورٹس

پاکستان کے خلاف 16 سال کے افغان گیند باز نے اپنایا اشون کا فارمولہ، پھر چھڑی بحث، دیکھیں ویڈیو

انڈر 19 عالمی کپ (Under 19 World Cup) میں افغان گیند باز نور احمد (Noor Ahmad) نے جیسے ہی پاکستانی بلے باز کو مانکڈنگ آؤٹ کیا، ویسے ہی کھیل جذبے اور اس کے ضوابط پر ایک بار پھربحث چھڑ گئی۔

  • Share this:
پاکستان کے خلاف 16 سال کے افغان گیند باز نے اپنایا اشون کا فارمولہ، پھر چھڑی بحث، دیکھیں ویڈیو
محمد حریرہ کو مانکڈنگ کرتے ہوئے نور احمد

انڈر عالمی کپ (Under 19 World Cup) کو اس سیزن کی اپنی چار سیمی فائنلسٹ ٹیمیں مل گئی ہیں۔ ہندوستان (India)، پاکستان (Pakistan)، نیوزی لینڈ اور بنگلہ دیش وہ چار ٹیمیں ہیں، جو خطاب سے صرف کچھ قدم ہی دور ہے۔ پاکستان نے کوارٹر فائنل میں افغانستان کو شکست دےکر سیمی فائنل میں داخلہ حاصل کرلیا۔ حالانکہ افغان ٹیم پاکستان کو روکنےکی ہرممکن کوشش کر رہی تھی، مگر ناکام رہی۔ افغان ٹیم نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 189 رن بنائے اور اس کی کوشش اپنے ہد کو بچانے کی تھی۔ اسی کوشش میں افغان گیند باز 16 سال کے نور احمد (Noor Ahmad) نے ہندوستان کے تجربہ کار گیند باز اور آراشون (R Ashwin) کو پینترا اپنایا۔




دراصل پاکستان کے بلے باز محمد حریرہ شاندار فارم میں چل رہے تھے اور وہ افغان ٹیم کے لئے پریشانی کھڑی کر رہے تھے، جس کا توڑا نور محمد نے نکالا اور 64 رن پر کھیل رہے حریرہ کو مانکڈنگ آؤٹ کیا۔ حالانکہ اس کے بعد چائنا مین نور محمد کافی تنازعہ میں بھی گھر گئے۔




گیند پھینکنے سے پہلے ہی باہر چلے گئے تھے محمد حریرہ

یہ معاملہ 28 ویں اوور میں ہوا، جب پاکستان کی ٹیم اپنے دو وکٹ جلد ہی گنوا بیٹھی تھی۔ تجربہ کار روہیل نظیر اور فہد منیر پویلین لوٹ گئے تھے اور محمد حریرہ نے اننگ کا آغاز کیا تھا اور کریز پر ٹکے ہوئے تھے۔ حالانکہ وہ مانکڈنگ رن آؤٹ ہوگئے۔ امپائر نے گیند باز کو کہا کہ وہ اپیل کو آگے بھیجنے سے پہلے چرچا کریں۔ حالانکہ رپلے میں صاف تھا کہ گیند باز کے گیند پھینکنے سے پہلے ہی محمد حریرہ کریز سے باہر چلے گئے تھے اور کھیل کے ضوابط کے مطابق یہ آؤٹ ہوتا ہے۔



آئی پی ایل میں اشون بھی کرچکے ہیں ایسا

اس سے قبل آئی پی ایل میں آراشون نے بھی جوس بٹلر کو مانکڈنگ آؤٹ کیا تھا، جس کے بعد کھیل جذبے پر ایک الگ ہی بحث چھڑ گئی تھی۔ نور محمد کو سوشل میڈیا پر بھی کافی سخت ردعمل کا سامنا کرنا پڑا۔ اس سے قبل افغان ٹیم کے پاس بڑا اسکور کرکے پاکستان پر دباؤ بنانے کا موقع تھا، مگر ٹیم 49.1 اوور میں صرف 189 رن ہی بنا پائی۔ ابراہیم زردان اور فرحان نے 7 اوور میں سے بھی کم میں 41 رن جوڑ کر اچھی شروعات کی تھی، مگر اس شراکت کے ٹوٹنے کے بعد باقی بلے بازوں کے لئے پاکستانی اٹیک پہیلی بن گئی۔ نور محمد کے اس مانکڈنگ نے ایک بار پھر اس پر بحث چھیڑ دی ہے اور لوگ سوشل میڈیا پر کھیل کے ضوابط پر سوال اٹھانے لگے ہیں۔

 
First published: Feb 01, 2020 09:03 PM IST