ہوم » نیوز » اسپورٹس

برطانوی شہریت ملنے کے بعد آئی پی ایل میں کھیلیں گے محمد عامر؟

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان کے تینز گیند بازمحمد عامربرطانوی شہریت لینے والے ہیں، وہ ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کرچکے ہیں۔

  • Share this:
برطانوی شہریت ملنے کے بعد آئی پی ایل میں کھیلیں گے محمد عامر؟
محمد عامر ۔ فائل فوٹو

پاکستان کے تیزگیند بازمحمد عامرنے اپنے ایک فیصلے سے پورے پاکستان میں تہلکہ مچا دیا۔ محمد عامرنے محض 27 سال کی عمرمیں ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کرکے سبھی کوحیران کردیا۔ محمد عامرکےاس فیصلے سے پاکستان کے کئی سابق کرکٹربھی ناراض ہوئے۔ پاکستانی میڈیا کی خبرکے مطابق محمد عامراب برطانیہ کی شہریت حاصل کرنے والے ہیں۔


پاکستان کے اخبار'دی ٹربیون' کے مطابق محمد عامرنےاسپاوس ویزا (جوبیوی کی شہریت کی بنیاد پردی جاتی ہے) کےلئے درخواست دی ہے۔ شروعات میں یہ ویزا 30 ماہ کا ہوتا ہے، لیکن بعد میں اگریہ ویزا ہولڈرسبھی طے شدہ معیارپرکھرا اترتا ہےتواسے مستقل شہریت مل جاتی ہے اوراسے برطانوی پاسپورٹ بھی مل جاتا ہے۔ ایسے میں سوال یہ ہے کہ اگرمحمد عامرکو برطانوی شہریت مل جاتی ہے توکیا وہ انڈین پریمیرلیگ (آئی پی ایل) میں کھیل پائیں گے؟


 محمد عامرکھیلیں گے آئی پی ایل؟


محمد عامرکواگربرطانوی شہریت مل جاتی ہے اوراس کے بعد اگروہ پاکستان کے لئے ونڈے اورٹی -20 کرکٹ کھیلنا بھی چھوڑدیتے ہیں تواس کےبعد وہ انڈین پریمیرلیگ میں انٹری حاصل کرسکتے ہیں۔ آپ کوبتا دیں کہ پاکستان کے سابق آل راونڈراظہرمحمود بھی آئی پی ایل میں کھیل چکے ہیں۔ دراصل اظہرمحمود کوبرطانوی شہریت حاصل ہےاوراس لئے وہ آئی پی ایل میں کنگس الیون پنجاب کی ٹیم کےلئےکھیلےتھے۔ حالانکہ محمد عامرکواگربرطانوی شہریت مل جاتی ہےاوروہ پاکستان کےلئے کرکٹ کھیلنا چھوڑبھی دیتے ہیں توبھی ایک وجہ سے انہیں آئی پی ایل میں کھیلنے سے روکا جاسکتا ہے۔

محمد عامر
محمد عامر


محمد عامرپراسپاٹ فکسنگ کا داغ

آپ کوبتادیں کہ محمد عامراسپاٹ فکسنگ کےقصورواررہ چکے ہیں۔ محمد عامرپرانگلینڈ میں اسپاٹ فکسنگ کرنے کے لئے پانچ سال کی پابندی بھی عائد کی گئی تھی۔ بی سی سی آئی کا رخ فکسنگ جیسے سنگین جرم کے لئےکافی سخت ہے۔ ایسے میں ہوسکتا ہے کہ برطانوی شہریت ملنے کے باوجود محمد عامرکوآئی پی ایل میں کھیلنے سے روک دیا جائے۔
First published: Jul 29, 2019 10:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading