ہوم » نیوز » اسپورٹس

اس پاکستانی گیند باز پرلگی پابندی، میچ کےدوران کردی بڑی غلطی

پاکستان کے آل راؤنڈرمحمد حفیظ چکنگ کے قصوروار پائے گئے ۔ اب انگلینڈ میں گیند بازی نہیں کرپائیں گے۔

  • Share this:
اس پاکستانی گیند باز پرلگی پابندی، میچ کےدوران کردی بڑی غلطی
پاکستانی گیند بازمحمد حفیظ کی گیندبازی ایکشن مشکوک۔

پاکستان کےآل راؤنڈرمحمد حفیظ ایک بارپھراپنی چکنگ کی وجہ سے سرخیوں میں ہیں۔ اس بارمحمد حفیظ نےکاؤنٹی کرکٹ کےدوران مشکوک ایکشن سےگیند بازی کی، جس میں انہیں چکنگ کا قصوروارقراردیا گیا ہےاوراب وہ انگلینڈ کےگھریلومیچوں میں گیند بازی نہیں کر پائیں گے۔ میڈیا رپورٹس کےمطابق آف اسپنرمحمد حفیظ کا ایکشن مڈل سیکس اورسمرسیٹ کاؤنٹی کےدرمیان ہوئےٹی -20 میچ کےدوران مشکوک پایا گیا۔ محمد حفیظ کےایکشن کی میدانی امپائروں نےشکایت کی اورآزاد جانچ کےبعد ان کی گیند بازی پرپابندی عائد کردی گئی۔


پہلے بھی لگ چکی ہے گیند بازی پرپابندی


آل راؤنڈرمحمد حفیظ کےایکشن پرپہلے بھی کئی بارسوال اٹھے ہیں۔ سال 2005 میں پہلی باران کا ایکشن مشکوک پایا گیا تھا۔ ابھی حال ہی میں سال 2018 میں راس ٹیلرنےان کی گیند بازی پرسوال کھڑے کئےتھے۔ محمد حفیظ کی گیند بازی پربھی پابندی لگائی تھی، جوکہ مئی 2018 میں ہٹا لی گئی۔ اب ایک بارپھرمحمد حفیظ کےایکشن کوغلط پایا گیا ہے۔ گیند بازی کرتے ہوئے محمد حفیظ کی کوہنی 15 ڈگری سے زیادہ مڑتی ہےاوراسی وجہ سےان پر سوال کھڑے کئے جاتے ہیں۔


محمد حفیظ پاکستانی ٹیم سے باہر ہیں۔


 ویسے محمد حفیظ کے پاس خود پرعائد پابندی کے خلاف اپیل کرنےکا حق ہے۔ رپورٹ کے مطابق جس کمیٹی نے محمد حفیظ کی گیند بازی کی جانچ کی، اس نےانہیں اپنا ایکشن سدھار کردوبارہ ٹسٹ دینےکا مشورہ دیا ہے۔ حفیظ نے پابندی کو قبول کرتے ہوئے پابندی کے خلاف اپیل کرنےکی بات بھی کہہ دی ہے۔ حفیظ نےکہا، 'مجھےای سی بی کی گیند بازی معائنہ گروپ کی رپورٹ ملی۔ میں اپنے ایکشن کی جانچ کرانےکےلئےتیارہوں'۔



محمد حفیظ 39 سال کے ہونے کےباوجود کرکٹ کھیلتے رہتا چاہتے ہیں۔



محمد حفیظ کا کیریئر

واضح رہےکہ پاکستان کےآل راؤنڈرمحمد حفیظ نےاپنےکرکٹ کیریئرمیں 683 وکٹ حاصل کئے ہیں۔ محمد حفیظ نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں 253، لسٹ اے کرکٹ میں 256 اور ٹی-20 فارمیٹ میں 174 وکٹ لئے ہیں۔ ٹی -20 کرکٹ میں محمد حفیظ کا اکنامی ریٹ بھی محض 6.35 ہے۔ ایسے میں اگران کی گیند بازی ایکشن پرپابندی لگتی ہے، توان کےلئے یہ کسی جھٹکےسےکم نہیں ہے۔
First published: Dec 25, 2019 09:17 PM IST