ہوم » نیوز » اسپورٹس

پاکستان کو ملا دھونی جیسا بلے باز، تینوں فارمیٹ میں لگائی سنچری، ایسا کرنے والا دوسرا وکٹ کیپر

Mohammad Rizwan: دہشت گردی اور گروپ بازی کے سبب پست ہوئے پاکستان کرکٹ کو محمد رضوان جیسے وکٹ کیپر پھر سے عالمی کرکٹ میں پرانا درجہ دلا سکتے ہیں۔ جنوبی افریقہ جیسی ٹیم کے خلاف ان کے بلے کا چلنا اس بات کا اشارہ ہے کہ لمبی ریس کے کھلاڑی ہیں۔

  • Share this:
پاکستان کو ملا دھونی جیسا بلے باز، تینوں فارمیٹ میں لگائی سنچری، ایسا کرنے والا دوسرا وکٹ کیپر
پاکستان کو ملا دھونی جیسا بلے باز، تینوں فارمیٹ میں لگائی سنچری

نئی دہلی: بین الاقوامی کرکٹ میں پاکستان کے اچھے دن آنے لگے ہیں۔ پوری دنیا کی ٹیمیں پاکستان میں کھیلنے کو راضی ہونے لگی ہیں۔ دوسری طرف اس کے کھلاڑی اپنی بلے بازی اور گیند بازی سے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ اب پاکستان کی ٹیم کو دھونی جیسا بلے باز محمد رضوان نے اپنی بلے بازی سے دکھا دیا ہے کہ وہ آنے والے دنوں میں بڑے دھماکے کرنے والے ہیں۔ وہ دنیا کے دوسرے بلے باز وکٹ کیپر ہیں، جس نے تینوں فارمیٹ میں سنچری بنائی ہے۔


یکم جون 1992 کو پیشاور کے خیبر پختونخوا میں پیدا ہوئے محمد رضوان پاکستانی ٹیم کی نئی تلاش کہے جا رہے ہیں۔ انہوں نے جنوبی افریقہ جیسی ٹیم کے خلاف پہلے ٹسٹ میں پھر ٹی -20 میں سنچری لگائی ہیں۔ ونڈے کرکٹ میں وہ دو سنچری پہلے ہی لگا چکے ہیں۔ ٹیم انڈیا کے سابق بلے باز اور کمنٹیٹر سنجے مانجریکر محمد رضوان کو ایسا بلے باز مانتے ہیں، جو ہر حالات میں بلے بازی کر سکتا ہے۔


برینڈن میک کولم کے بعد دوسرے بلے باز وکٹ کیپر

جنوبی افریقہ کے خلاف ٹی-20 میچ میں ریکارڈ سنچری بنانے کے بعد وہ دنیا کے دوسرے بلے باز وکٹ کیپر بن گئے، جس نے ایسا کیا ہے۔ اس سے پہلے نیوزی لینڈ کے برینڈن میک کولم نے کرکٹ کے تینوں فارمیٹ میں سنچری بنائی تھی۔ میک کولم نے ٹسٹ میچ میں 5 سنچری، ونڈے میں 3 اور ٹی-20 میں ایک سنچری بنائی تھی۔ محمد رضوان نے ٹسٹ میں ایک، ونڈے میں دو اور ٹی -20 میں ایک سنچری بنائی ہے۔

ٹی -20 میں دوسرا سب سے بڑا اسکور

محمد رضوان کے ذریعہ جنوبی افریقہ کے خلاف کھیلی گئی 104 رنوں کی اننگ کسی بھی پاکستانی بلے باز کے ذریعہ کھیلی گئی دوسری سب سے بڑی اننگ ہے۔ اس سے پہلے مارچ 2014 میں احمد شہزاد نے بنگلہ دیش کے خلاف 111 رنوں کی اننگ کھیلی تھی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 12, 2021 07:48 PM IST