ہوم » نیوز » اسپورٹس

نکہت زرین نے شکست کے بعدکہا- میچ کے دوران میری کوم نے مجھےگالی دی

میری کوم نے رنگ میں نکہت کے ساتھ ہاتھ نہیں ملایا اور ناراض رنگ سے باہرنکلیں۔ جبکہ نکہت زرین نے گلے لگانے کی کوشش کی، لیکن میری کوم نے ایسا نہیں کیا۔

  • Share this:
نکہت زرین نے شکست کے بعدکہا- میچ کے دوران میری کوم نے مجھےگالی دی
نکہت زرین اور ایم سی میری کوم

نئی دہلی: 6 بارکی عالمی چمپئن ایم سی میری کوم نےزیادہ انتظارٹرائيل میں نکہت زرین کو ہفتہ کویہاں اندرا گاندھی انڈوراسٹیڈیم میں 9-1 کےبڑے فرق سے شکست دے دی اورفروری میں چین میں ہونے والےباکسنگ کے پہلےاولمپک کوالیفائنگ کا ٹکٹ حاصل کرلیا۔ اولمپک کوالیفائنگ کےلئے خواتین کے پانچ وزن زمروں کےٹرائیلزہوئے، جس میں تمام نگاہیں 51 کلوگرام کلاس میں منی پورکی میری کوم اورتلنگانہ کی نکہت کےدرمیان مقابلہ پرلگی ہوئی تھی۔


اس ٹرائيل کوکوورکرنےکےلئےبڑی تعداد میں میڈیا موجود تھا۔ ان کےساتھ ہی نکہت کی ریاست تلنگانہ کےکئی افسران اوران کے والد جمیل احمد موجود تھے۔ مقابلہ ہنگامہ خیزرہا۔ مقابلے کے 10 ججوں نے 9-1 سے میری کوم کے حق میں فیصلہ دیا۔مقابلہ ختم ہونے کے بعد میری کوم نےنکہت سے ہاتھ نہیں ملایا اورناراض رنگ سے باہرنکل گئیں۔مقابلےکے دوران اوررنگ کے باہردونوں مکے بازون کے درمیان بحث بھی ہوئی۔ جب نتیجہ اعلان کیا گیا توزرین نکہت کے گھریلوریاست تلنگانہ مکے بازی ایسوسی ایشن کےکچھ نمائندے اس کی مخالفت کرنے لگے۔


نکہت زریں کافی وقت سے میری کوم کےساتھ ٹرائل کرانےکا مطالبہ کررہی تھیں۔


میری کوم اورنکہت زریں نے نہیں ملایا ہاتھ

میری کوم کے مقابلےکےبعد کہا، 'میں تھوڑی ناراض تھی۔ اس میں کوئی شک نہیں، لیکن اب سب کچھ ٹھیک ہوگیا۔ میں آگےبڑھ گئی، میں صرف اتنا ہی کہنا چاہوں گی کہ بولنے سے پہلے کارکردگی کرو، اس سے پہلے نہیں۔ آپ رنگ میں جوکرتے ہو، اسے ہرکوئی دیکھ سکتا ہے'۔ اولمپک کوالیفائرچین میں تین سے 14 فروری تک کرائے جائیں گے۔ مقابلے کے بعد دونوں نے ہاتھ بھی نہیں ملایا اورزرین کے گلےلگانے کی کوشش کی، لیکن میری کوم نےایسا نہیں کیا۔ اس کے بارے میں پوچھنے پرانہوں نے کہا، 'ہمارے کھیل میں اسے پکڑنا بولا جاتا ہے'۔

نکہت نے لگایا گالی دینے کا الزام

میری کوم نے کہا، 'میں نے یہ تنازعہ کھڑا نہیں کیا، میں نے ایسا کبھی نہیں کہا کہ میں ٹرائل کےلئےنہیں آؤں گی۔ اس لئے میں برداشت نہیں کرسکتی۔ جب کوئی الزام لگائےگا کہ یہ میری غلطی تھی، یہ میری غلطی نہیں تھی اورمیرا نام اس میں نہیں گھسیٹا جانا چاہئے'۔ زرین نکہت نےکہا، 'انہوں نے جیسا برتاؤ کیا، اس سےمیں مایوس ہوں۔ انہوں نے رنگ کے اندربھی کچھ نازیبا الفاظ کا استعمال کیا، لیکن ٹھیک ہے'۔ انہوں نے کہا، 'میں جونیئرہوں، مقابلہ ختم ہونے کے بعد اگروہ گلےلگ جاتی تویہ اچھا ہوتا، لیکن میں کوئی تبصرہ نہیں کرنا چاہتی'۔

اس سال میری کوم عالمی چمپئن شپ میں گولڈ میڈل جیتنےسےچوک گئی تھیں۔


تلنگانہ باکسنگ یونین کے افسرنے لگایا الزام

تلنگانہ باکسنگ یونین کےسکریٹری اے پی ریڈی نےتویہاں تک کہہ دیا کہ وہ اس مقابلےکی ریکارڈنگ آيبا کودیکھنےکےلئےکہیں گے جبکہ مقابلے کے بعد اجے سنگھ نےکہا کہ ٹرائيل مکمل طورپرمنصفانہ تھےاوراس کےلئے10 ججوں کوتعینات کیا گیا تھا۔ میری کوم نے بعد میں صحافیوں کو بتایا کہ نکہت زریں ان کا احترام نہیں کرنا جانتی ہیں، اس لئےوہ ان سے مصافحہ پسند نہیں کریں گی۔ میری کوم نےساتھ ہی کہا کہ انہیں خود کوآخرکتنی بارثابت کرنا پڑے گا۔ ٹرائل کے دیگر وزن زمروں میں عالمی چمپئن شپ کی دوبارکی سلور فاتح ریلوے کی سونیا لاتھرکو57 کلوگرام کلاس میں ہریانہ کی ساکشی چودھری نے 9-1 سے شکست دی۔ ساکشی کے پنچوں کے سامنے سونیا ٹک نہیں سکیں۔ 60 کلوگرام میں سابق عالمی چمپئن آل انڈیا پولیس کی ایل سریتا دیوی کو قومی چمپئن پنجاب کی سمرنجيت کور سے 2-8 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔69 کلوگرام کلاس میں آسام کی لولينا بورگوهین نے راجستھان کی للتا کو 10-0 سے اور75 کلوگرام میں ہریانہ کی پوجا نےاپنے ہی ریاست کی نپور کو 10-0 سے شکست دی۔
First published: Dec 28, 2019 07:10 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading