اپنا ضلع منتخب کریں۔

    راولپنڈی پچ تنازعہ پر پاکستانی کپتان بابر اعظم کا بیان،کہا-ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے۔۔۔

    راولپنڈی پچ تنازعہ پر پاکستانی کپتان بابر اعظم کا بیان،کہا-ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے۔۔۔ (PIC: AP)

    راولپنڈی پچ تنازعہ پر پاکستانی کپتان بابر اعظم کا بیان،کہا-ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے۔۔۔ (PIC: AP)

    پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ دیکھیں، کافی ان پٹ تھا۔۔۔ ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے، ویسی پچ نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے جو پلان تھے اس کے مطابق منصوبہ بندی پر کام نہیں کرپائے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Rawalpindi
    • Share this:
      راولپنڈی ٹسٹ میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو 75 رنوں سے ہرا دیا ہے۔ اس طرح انگلینڈ 3 ٹسٹ میچوں کی سیریز میں 0-1 سے آگے ہوگئی ہے۔ دراصل، راولپنڈی کی پچ پر دونوں ٹیموں کے بلے بازوں نے آسانی سے رن بنائے۔ وہیں، کئی ماہرین نے راولپنڈی کی پچ پر سوال کیے۔ ساتھ ہی راولپنڈی کی پچ کو ٹسٹ میچوں کے مطابق نہیں بتایا۔ اس وجہ سے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجا کی کافی فضیحت بھی ہوئی، لیکن اب پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے پچ تنازعہ پر اپنا بیان دیا ہے۔

      ’ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے۔۔۔‘
      پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ دیکھیں، کافی ان پٹ تھا۔۔۔ ہم نے جو پلان کیا تھا، جو چاہ رہے تھے، ویسی پچ نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے جو پلان تھے اس کے مطابق منصوبہ بندی پر کام نہیں کرپائے۔ ہم تھوڑا ٹرننگ سائیڈ پر جارہے تھے، ویسے پلان تھا ہمارا۔ پاکستان کے کپتان نے آگے کہا کہ افسوس کہ موسم کی وجہ سے اور تھوڑی تیاری کی وجہ سے وکٹ نہیں بنی۔ غورطلب ہے کہ راولپنڈی کی وکٹ پر جس طرح سے آسانی سے انگلینڈ اور پاکستان کے بلے بازوں نے رن بنائے، اس کے بعد اس پچ پر کافی سوال اٹھے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      دہشت گردانہ حملہ میں بچا تو 22 کی عمر میں کرلی شادی، اب ٹیم انڈیا کو دیا بڑا درد

      یہ بھی پڑھیں:
      72 میچ بعد ہوا ٹیسٹ ڈیبیو، اب چوٹ کی وجہ سے ٹیم سے باہرہوا بابر اعظم کا خاص گیند باز

      انگلینڈ نے پاکستان کو 74 رنوں سے ہرایا
      وہیں، اس میچ کی بات کریں تو پاکستان کو 74 رنوں سے ہار کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس طرح انگلینڈ کی ٹیم 3 ٹسٹ میچوں کی سیریز میں 0-1 سے آگے ہوگئی ہے۔ پاکستان کو میچ جیتنے کے لیے 342 رن درکار تھے، لیکن میزبان ٹیم 268 رنوں پر سمٹ گئی۔ اس طرح بین اسٹوکس کی ٹیم نے 74 رنوں سے میچ جیت لیا۔ بہرحال، انگلینڈ کو پاکستان کی سرزمین پر 22 سال بعد ٹسٹ میچوں میں جیت ملی ہے۔ پاکستان کے لیے دوسری اننگ میں سعود شکیل نے سب سے زیادہ رن بنائے۔ انہوں نے 159 گیندوں پر 76 رنوں کی اننگ کھیلی۔ وہیں، امام الحق نے 48 رن بنائے۔ جب کہ محمد رضوان اور اظہر علی نے بالترتیب 48 اور 40 رنوں کا تعاون کیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: