ہوم » نیوز » اسپورٹس

پاکستانی کپتان بابر اعظم کو عدالت نے لگائی پھٹکار، خاتون نے آبروریزی کا لگایا ہے الزام

لاہور کی ایک عدالت نے معاملے کی سماعت کرتے ہوئے بابر اعظم اور ان کی فیملی کو جم کر پھٹکار لگائی۔ عدالت نے کہا کہ بابر اعظم اور ان کی فیملی متاثرہ خاتون کو پریشان کرنا بند کریں۔ عدالت نے اب اس معاملے میں آگے کی کارروائی کے لئے پولیس سے جواب طلب کیا ہے۔

  • Share this:
پاکستانی کپتان بابر اعظم کو عدالت نے لگائی پھٹکار، خاتون نے آبروریزی کا لگایا ہے الزام
پاکستانی کپتان بابر اعظم کو عدالت نے لگائی پھٹکار، خاتون نے آبروریزی کا لگایا ہے الزام

لاہور: پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم (Babar Azam) کی مشکلات میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ گزشتہ دنوں پاکستان کی ایک خاتون نے بابر اعظم پر آبروریزی (Rape) کرنے کا الزام لگایا تھا۔ اب یہ پورا معاملہ عدالت میں پہنچ گیا ہے۔ ہفتہ کے روز لاہور کی ایک عدالت نے معاملے کی سماعت کرتے ہوئے بابر اعظم اور ان کی فیملی کو جم کر پھٹکار لگائی۔ عدالت نے کہا کہ بابر اعظم اور ان کی فیملی متاثرہ خاتون کو پریشان کرنا بند کریں۔ عدالت نے اب اس معاملے میں آگے کی کارروائی کے لئے پولیس سے جواب طلب کیا ہے۔


آبروریزی کے بعد اسقاط حمل کا دباو بنایا گیا


خاتون نے اپنی عرضی میں الزام لگایا ہے کہ بابر اعظم نے ان سے شادی کو لے کر جھوٹے وعدے کئے۔ جیو ٹی وی کے مطابق عدالت میں خاتون نے کہا کہ بابر اعظم نے شادی کا جھانسہ دے کر ان سے جسمانی تعلقات بنائے، جس کے سبب وہ حاملہ ہوگئیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ بابر اعظم نے بعد میں ان پر اسقاط حمل کا دباو بنایا۔ متاثرہ خاتون نے عدالت میں سارے میڈیکل رپورٹ بھی دکھائے۔


 



شادی کرنے سے انکار کیا

خاتون نے عدالت میں یہ بھی انکشاف کیا کہ انہوں نے نصیرآباد پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر بھی درج کروائی، لیکن بعد میں انہوں نے کیس واپس لے لیا۔ دراصل ایف آئی آر درج ہونے کے بعد بابر اعظم نے انہیں پھر سے شادی کرنے کا بھروسہ دیا، لیکن خاتون کا الزام ہے کہ جیسے ہی بابر اعظم بڑے کھلاڑی بن گئے، انہوں نے شادی کرنے سے منع کردیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ دوبارہ پولیس اسٹیشن پہنچیں، لیکن پولیس نے پھر سے معاملہ درج کرنے سے منع کردیا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 06, 2020 02:37 PM IST