உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کے 21 سال کے طوفانی گیند باز محمد حسنین پر آئی سی سی نے کیوں لگائی پابندی؟

    پاکستانی گیند باز محمد حسنین پر آئی سی سی نے  پابندی عائد کردی ہے۔

    پاکستانی گیند باز محمد حسنین پر آئی سی سی نے پابندی عائد کردی ہے۔

    پاکستان (Pakistan) کے طوفانی گیند باز 21 سال کے محمد حسنین (Mohammad Hasnain) پر گیند بازی سے پابندی عائد کردی گئی ہے۔ انہیں غلط گیند بازی ایکشن کے بعد معطل کیا گیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان (Pakistan) کے طوفانی گیند باز 21 سال کے محمد حسنین (Mohammad Hasnain) پر گیند بازی سے پابندی عائد کردی گئی ہے۔ انہیں غلط گیند بازی ایکشن کے بعد معطل کیا گیا۔ 21 جنوری کو لاہور میں اس نوجوان گیند باز کے گیند بازی ایکشن کا ٹسٹ کیا گیا تھا۔ بگ بیس لیگ کے دوران ان کے ایکشن پر شک ہوا تھا۔ سڈنی سکسرس کے آل راونڈر موئیجس ہینرکس نے تو ان کے ایکشن کو لے کر کمنٹ بھی کیا تھا۔

      ٹسٹ کے دوران محمد حسنین کا ایکشن غیر قانونی پایا گیا، جس کے بعد انہیں انٹرنیشنل کرکٹ اور گھریلو کرکٹ پر گیند بازی کرنے سے پابندی عائد کردی گئی ہے۔ آئندہ جانچ میں ایکشن درست پائے جانے تک ان پر پابندی رہے گی۔ لینتھ بال، باونسر، فل لینتھ گیند پھینکتے وقت محمد حسنین آئی سی سی کے مقررہ 15 ڈگری ضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      T20 Rankings: پاکستانی کپتان بابر اعظم اور محمد رضوان کا جلوہ قائم، ٹیم انڈیا کے اس کھلاڑی کو ہوا فائدہ


      گیند بازی ایکشن کو سدھارنے پر کریں گے کام

      اب وہ مارچ میں آسٹریلیا کے خلاف مجوزہ ٹسٹ سیریز سے بھی باہر ہوجائیں گے۔ یہی نہیں وہ اب پاکستان سپرلیگ (Pakistan Super League) میں بھی گیند بازی نہیں کرپائیں گے۔ محمد حسنین لیگ میں کوئٹہ گلیڈیئیٹرس کا حصہ ہیں۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے بیان جاری کرکے کہا کہ محمد حسنین پاکستان کے بہترین گیند باز ہیں۔



      وہ 145 کلو میٹر کی رفتار سے گیند بازی کرنے والے چنندہ گیند بازوں میں سے ایک ہیں۔ پاکستان سپر لیگ کی تکنیکی کمیٹی کے مشورے پر بورڈ نے طے کیا ہے کہ محمد حسنین لیگ میں آنے والے میچوں میں حصہ لینے کے بجائے اپنے ایکشن کو سدھانے پر توجہ مرکوز کریں گے۔ ان کے ساتھ بورڈ کا ایک گیند بازی کوچ بھی رہے گا۔ محمد حسنین نے 8 ونڈے اور 18 ٹی20 میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ ان کے نام 12 ونڈے وکٹ اور 17 ٹی20 وکٹ ہے۔ انہوں نے سال  2019 میں آسٹریلیا کے خلاف انٹرنیشنل میں ڈیبیو کیا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: