உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کرکٹ میں بھونچال، ٹی-20 ورلڈ کپ کی ٹیم کے اعلان کے 2 گھنٹے بعد ہی مصباح الحق نے چھوڑ دیا عہدہ

    پاکستان کرکٹ میں بھونچال، ٹی-20 ورلڈ کپ کی ٹیم کے اعلان کے 2 گھنٹے بعد ہی مصباح الحق نے چھوڑ دیا عہدہ

    پاکستان کرکٹ میں بھونچال، ٹی-20 ورلڈ کپ کی ٹیم کے اعلان کے 2 گھنٹے بعد ہی مصباح الحق نے چھوڑ دیا عہدہ

    پاکستان کرکٹ ٹیم کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ اس سال ہونے والے ابو ظہبی اور عمان میں ہونے والے ٹی-20 عالمی کپ کی ٹیم کے اعلان کے 2 گھنٹے بعد ہی چیف کوچ مصباح الحق اور گیند بازی کوچ وقار یونس نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان کرکٹ ٹیم کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ اس سال ہونے والے ابو ظہبی اور عمان میں ہونے والے ٹی-20 عالمی کپ کی ٹیم کے اعلان کے 2 گھنٹے بعد ہی چیف کوچ مصباح الحق اور گیند بازی کوچ وقار یونس نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے اس کی تصدیق کردی ہے۔ مصباح الحق اور وقار یونس کو ستمبر 2019 میں پی سی بی نے یہ ذمہ داری سونپی تھی اور ان کا معاہدہ ایک سال کا باقی تھا۔ اس درمیان، پی سی بی نے سابق اسپنر ثقلین مشتاق اور عبدالرزاق کو ان دونوں کی جگہ عارضی طور پر ٹیم کا کوچ مقرر کیا گیا ہے۔ کیونکہ آئندہ ہفتے ہی پاکستان کو تین ونڈے اور 5 ٹی-20 کی سیریز کے لئے نیوزی لینڈ ٹیم کی میزبانی کرنی ہے۔

      اس سیریز کے لئے نیوزی لینڈ ٹیم 11 ستمبر کو پاکستان پہنچ جائے گی۔ وہیں میزبان پاکستان کی ٹیم 8 ستمبر کو اسلام آباد میں جمع ہوگی۔ فی الحال، پی سی بی نے اس سیریز کے لئے غیر عارضی کوچ مقرر کئے ہیں۔ جلد ہی ٹی-20 عالمی کپ 2021 کے لئے الگ سے کوچنگ ٹیم منتخب کی جائے گی۔

      مصباح الحق نے کہا کہ مجھے اپنی فیملی سے کافی دور رہنا پڑتا تھا، اس لئے میں نے پاکستانی ٹیم کے چیف کوچ کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ لیا۔
      مصباح الحق نے کہا کہ مجھے اپنی فیملی سے کافی
      دور رہنا پڑتا تھا، اس لئے میں نے پاکستانی ٹیم کے چیف کوچ کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ لیا۔


      اس فیصلے کے بعد مصباح الحق نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کے خلاف حالایہ سیریز میں کوارنٹائن رہنے کے دوران میں نے پاکستانی ٹیم کے ساتھ اپنے 24 ماہ کی مدت کے ساتھ ساتھ آگے کے انٹرنیشنل کرکٹ شیڈول کے بارے میں تشخیص کی۔ یہ دیکھتے ہوئے کہ مجھے اپنی فیملی سے کافی دور رہنا پڑتا اور وہ بھی بایو-ببل میں، اس لئے میں نے پاکستانی ٹیم کے چیف کوچ کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ لیا۔

      میں چیلنجز کے لئے تیار نہیں

      انہوں نے مزید کہا کہ میں سمجھ سکتا ہوں کہ یہ وقت ایسے فیصلے کے لئے مناسب نہیں ہوسکتا ہے۔ لیکن مجھے نہیں لگتا ہے کہ میں فی الحال ذہنی طور پر آگے آنے والے چیلنجز کا سامنا کرنے کے لئے تیار ہوں۔ ایسے میں نئے شخص کے لئے اس ذمہ داری کو سنبھالنے کا صحیح وقت ہے۔ اس کے پاس ٹیم کو آگے لے جانے کا موقع ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: