ہوم » نیوز » اسپورٹس

انگلینڈ دورے سے قبل پی سی بی نے اٹھایا سخت قدم، کھلاڑیوں کو چھوڑنا ہوگا اپنا گھر

انگلینڈ دورے سے قبل ٹیم کو تین ماہ کے لئے لاہور میں حیاتیاتی طور پر محفوظ ماحول میں رہنا ہوگا۔ اس کے لئے کھلاڑیوں کو متبادل بھی دیئے گئے ہیں۔

  • Share this:
انگلینڈ دورے سے قبل پی سی بی نے اٹھایا سخت قدم، کھلاڑیوں کو چھوڑنا ہوگا اپنا گھر
انگلینڈ دورے سے قبل پی سی بی نے اٹھایا سخت قدم، کھلاڑیوں کو چھوڑنا ہوگا اپنا گھر

نئی دہلی: انگلینڈ (England) دورے پر جانے والی پاکستانی کرکٹ ٹیم اگلے تین ماہ تک حیاتیاتی طور پر محفوظ ماحول (Bio Secure) میں رہے گی۔ اس کی شروعات اگلے ماہ کے شروع میں لاہور (Lahore) میں پریکٹس سے ہوگی اور یہ اگست میں انگلینڈ کے دورے کے اختتام تک برقرار رہے گا۔ ای ایس پی این کرک انفو کی رپورٹ کے مطابق ٹسٹ اور محدود اووروں کے کرکٹ ماہرین جون کے پہلے ہفتے میں نیشنل کرکٹ اکادمی میں شروع کریں گے اور اس دوران بغل میں واقع گدافی اسٹیڈیم (Gaddafi Stadium) میں رہیں گے۔


 گدافی اسٹیڈیم میں رہیں گے ٹیم کے سبھی کھلاڑی

کھلاڑیوں کے لئے رہنے، کھانے اور ٹھہرنے کی سہولت این سی اے اور گدافی اسٹیڈیم میں کی جائے گی۔ پاکستان کو انگلینڈ میں تین ٹسٹ اور تین ٹی-20 بین الاقوامی میچ کھیلنے ہیں۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے سی ای او وسیم خان نے کہا کہ اگر کوئی کھلاڑی مطمئن نہیں ہوتا ہے تو اس کے پاس دورے سے ہٹنے کا متبادل رہے گا۔ انہوں نے کہا، ’ایسا لگتا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کو تین ماہ تک حیاتیاتی طور پر محفوظ ماحول میں رہنا ہوگا’۔ وسیم خان نے کہا کہ ’کھلاڑیوں کو اگر تب بھی لگتا ہے کہ وہ سہولیات سے مطمئن نہیں ہیں تو ان کے پاس اپنا نام واپس لینے کا متبادل رہے گا۔ تفصیلی اطلاعات آگے فراہم کرائی جائے گی’۔



پاکستان کو انگلینڈ میں تین ٹسٹ اور تین ٹی-20 بین الاقوامی میچ کھیلنے ہیں۔
پاکستان کو انگلینڈ میں تین ٹسٹ اور تین ٹی-20 بین الاقوامی میچ کھیلنے ہیں۔



 انگلینڈ میں بھی کی جارہی ہے پوری تیاری

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان پہلا ٹسٹ 5 اگست کو کھیلا جائے گا اور پاکستانی ٹیم ٹسٹ میچ سے 14 دن پہلے انگلینڈ پہنچے گی۔ کہا جارہا ہے کہ دورے کے سبھی میچ ساوتھمپٹن اور مینچسٹر میں کھیلے جائیں گے۔ دراصل ان دونوں میدانوں میں ہی ہوٹل بنا ہوا ہے، جس سے کھلاڑیوں کے لئے آسانی رہے گی اور وہ کورونا وائرس سے محفوظ بھی رہیں گے۔ خبروں کے مطابق سبھی کھلاڑی 14 دنوں تک کوارنٹائن رہیں گے اور کھلاڑی آپس میں ہی وارم اپ میچ کھیلیں گے۔ کھلاڑیوں کا مسلسل چیک اپ ہوگا اور ان سے ملنے کی کسی کو اجازت نہیں ہوگی۔
First published: May 21, 2020 04:02 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading