உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Turning Point: راشد-فاروقی نے پاکستان کو ہرانے کے لئے پوری طاقت لگائی، نسیم شاہ نے پلٹ دی بازی

    راشد-فاروقی نے پاکستان کو ہرانے کے لئے پوری طاقت لگائی، نسیم شاہ نے پلٹ دی بازی

    راشد-فاروقی نے پاکستان کو ہرانے کے لئے پوری طاقت لگائی، نسیم شاہ نے پلٹ دی بازی

    Pakistan vs Afghanistan, Asia Cup 2022: افغانستان اور پاکستان کے درمیان ایشیا کپ کے سپر-4 کا اہم مقابلہ بدھ کو کھیلا گیا۔ یہ میچ نہ صرف ان دونوں ٹیموں کے لحاظ سے اہم تھا، بلکہ ہندوستان کی فائنل کی امیدیں بھی اسی پر مرکوز تھیں۔ اگر افغانستان یہ میچ جیت لیتا، تو ہندوستان کے فائنل میں پہنچنے کی امید بنی رہتی، لیکن پاکستان نے ہندوستان اور افغانستان دونوں کا خواب چکنا چور کردیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: افغانستان کے راشد خان نے ایشیا کپ میں پاکستان (Afghanistan vs Pakistan) کو ہرانے کے لئے پورا زور لگایا۔ انہوں نے نہ صرف بلے سے کمال کیا، بلکہ گیند بازی میں بھی اپنا جادو دکھایا۔ ان کے خوبصورت کھیل کی بدولت افغانستان ایک بار تو جیت کے قریب بھی پہنچ گیا تھا۔ جب افغان ٹیم جیت کی طرف بڑھ رہی تھی، تب افغانستان ہی نہیں، ہندوستان میں بھی خوشیاں منائی گئی جارہی تھیں، لیکن تیز گیند باز نسیم شاہ (Naseem Shah) نے آخری اوور میں غیر یقینی بلے بازی کرکے افغانستان اور ہندوستان دونوں کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔

      افغانستان اور پاکستان کے درمیان ایشیا کپ کے سپر-4 کا اہم مقابلہ بدھ کو کھیلا گیا۔ یہ میچ نہ صرف ان دونوں ٹیموں کے لحاظ سے اہم تھا، بلکہ ہندوستان کی فائنل کی امیدیں بھی اسی پر مرکوز تھیں۔ اگر افغانستان یہ میچ جیت لیتا، تو ہندوستان کے فائنل میں پہنچنے کی امید بنی رہتی۔ اس وجہ سے ہندوستانی کرکٹ مداح افغانستان کی جیت کے لئے دعا کر رہے تھے، لیکن ایسا نہیں ہوا۔

      نسیم شاہ (Naseem Shah) نے آخری اوور میں غیر یقینی بلے بازی کرکے افغانستان اور ہندوستان دونوں کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔
      نسیم شاہ (Naseem Shah) نے آخری اوور میں غیر یقینی بلے بازی کرکے افغانستان اور ہندوستان دونوں کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔


      پاکستان نے افغانستان (Pakistan vs Afghanistan) کو اس اہم مقابلے میں ایک وکٹ سے شکست دی۔ بابر اعظم کی کپتانی والی پاکستانی ٹیم نے پہلے تو افغانستان کو 129/6 کے اسکور پر روکا۔ پھر 19.2 اوور میں 9 وکٹ گنواکر ہدف حاصل کرلیا۔ بھلے ہی اس مقابلے میں پلیئر آف دی میچ شاداب خان کو منتخب کیا گیا، لیکن اصلی ہیرو نسیم شاہ ہی رہے، جنہوں نے آخری اوور میں بازی پلٹی۔

      یہ بھی پڑھیں۔
      Asia Cup 2022: پاکستان نے افغانستان کو دلچسپ میچ میں ہرایا، بابر اینڈ کمپنی کی فائنل میں انٹری

       یہ بھی پڑھیں۔
      ICC T20I Rankings: بابر اعظم کو پاکستانی ساتھی محمد رضوان نے پیچھے چھوڑا، پارٹنر ہی پیچھے چھوڑ کربن گیا نمبر-1

      پاکستان کی اننگ میں ابھی مزید موڑ آنے باقی تھے

      ہدف کا تعاقب کرنے اتری پاکستانی ٹیم کی شروعات خراب رہی۔ فضل حق فاروقی نے پہلے ہی اوور میں بابر اعظم کو آوٹ کردیا۔ بابر اعظم کھاتہ بھی نہیں کھول سکے۔ فخر زماں بھی 5 رن بناکر رن آوٹ ہوگئے۔ اس کے بعد محمد رضوان (20) نے افتخار احمد (30) کے ساتھ مل کر ٹیم کو سنبھالا۔ ان دونوں کے بعد شاداب خان نے بھی 36 رنوں کی بہترین اننگ کھیلی، لیکن پاکستان کی اننگ میں ابھی اور موڑ آنے باقی تھے۔

      فضل حق فاروقی نے پہلے ہی اوور میں بابر اعظم کو آوٹ کردیا۔ بابر اعظم کھاتہ بھی نہیں کھول سکے۔
      فضل حق فاروقی نے پہلے ہی اوور میں بابر اعظم کو آوٹ کردیا۔ بابر اعظم کھاتہ بھی نہیں کھول سکے۔


      نسیم شاہ نے کچھ اور ہی سوچ رکھا تھا

      ایک وقت تین وکٹ پر 87 رن بنانے ولاے پاکستان نے آخری پانچ اوور میں جلدی جلدی وکٹ گنوائے۔ دیکھتے ہی دیکھتے اسکور 9 وکٹ پر 118 رن ہوگیا۔ اب کریز پر نسیم شاہ اور محمد حسنین کی آخری جوڑی تھی اور پاکستان کو جیت کے لئے 6 گیندوں پر 11 رن چاہئے تھے۔ افغانستان کی طرف سے آخری اوور فضل حق فاروقی لے کرآئے، جنہوں نے اس سے ٹھیک پہلے والے اوور میں دو وکٹ حاصل کئے تھے۔ افغانستان کا پلڑا بھاری لگ رہا تھا، لیکن نسیم شاہ نے کچھ اور ہی سوچ رکھا تھا۔ انہوں نے فاروقی کے اس آخری اوور کی پہلی دو گیندوں پر ہی چھکے لگائے دیئے اور جس میچ میں افغانستان ٹیم حاوی ہوچلی تھی، اسی پاکستان کے نام کردیا۔ نسیم شاہ نے 4 گیندوں پر 14 رن بناکر ناٹ آوٹ رہے۔

      فاروقی نے اہم موقع پر پھینک دیئے فل ٹاس

      افغانستان کے لئے سب سے اہم کھلاڑی فضل حق فاروقی اور راشد خان ثابت ہوئے۔ فضل حق فاروقی نے 4 اوور کے اپنے اسپیل میں 3 وکٹ حاصل کئے۔ انہوں نے بابر اعظم، محمد نواز اور خوش دل شاہ کو آوٹ کیا۔ حالانکہ ان کی اس شاندار گیند بازی پر تب پانی پھر گیا، جب انہوں نے آخری اوور میں مسلسل دو فل ٹاس پھینک دیئے۔ جن پر نسیم شاہ نے چھکے لگا دیئے۔ فاروقی کے علاوہ فرید احمد نے بھی تین وکٹ اپنے نام کئے۔ راشد خان نے درمیانی اووروں میں اچھی گیند بازی کی اور دو وکٹ بھی حاصل کئے۔ اس سے قبل افغانستان کی طرف سے ابراہیم زادارن نے 35 رنوں کی اننگ کھیلی۔ یہ ٹیم کا ٹاپ اسکور رہا۔ ٹیم کے دوسرے ٹاپ اسکورر راشد خان رہے، جنہوں نے 15 گیندوں پر 18 رنوں کی اننگ کھیلی۔ ان دونوں کے کھیل کی بدولت ہی افغانستان 129/6 باعزت اسکور تک پہنچ سکا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: