اپنا ضلع منتخب کریں۔

    فیفا ورلڈ کپ میں پولینڈ نے سعودی عرب کو 2-0 سے دی شکست، رابرٹ لیوینڈوسکی ہوئے جذباتی

    ہوئے تین پوائنٹس پر مہر لگا دی (تصویر ٹوئٹر: NTV UGANDA)

    ہوئے تین پوائنٹس پر مہر لگا دی (تصویر ٹوئٹر: NTV UGANDA)

    اس سے قبل سعودی عرب نے ارجنٹائن کے خلاف اپنی تاریخی فتح درج کرائی تھی۔ پیوٹر زیلنسکی نے گروپ سی کے مقابلے میں گول کا آغاز کیا اور گول کیپر ووجشیچ سززنی نے ہاف ٹائم کے اسٹروک پر سالم الدوسری (Salem Al-Dawsari) کی پنالٹی کو بچایا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Saudi Arabia
    • Share this:
      رابرٹ لیوینڈوسکی (Robert Lewandowski) نے ہفتہ کے روز اپنے شاندار کیریئر کا پہلا ورلڈ کپ گول اسکور کیا جب پولینڈ نے سعودی عرب کو 2-0 سے ہرا دیا ہے۔ اس سے قبل سعودی عرب نے ارجنٹائن کے خلاف اپنی تاریخی فتح درج کرائی تھی۔ پیوٹر زیلنسکی نے گروپ سی کے مقابلے میں گول کا آغاز کیا اور گول کیپر ووجشیچ سززنی نے ہاف ٹائم کے اسٹروک پر سالم الدوسری (Salem Al-Dawsari) کی پنالٹی کو بچایا۔

      رابرٹ لیوینڈوسکی نے کہا کہ مجھے شروع سے بات کرنے دیجئیے کیونکہ جب میں قومی ترانہ گا رہا تھا تو میں نے کئی طرح کے جذبات محسوس کررہا تھا۔ آج یہ بتانا مشکل ہے کہ میرے جذبات اتنے مضبوط کیوں تھے لیکن میں بچپن سے ہی یہ خواب دیکھ رہا ہوں۔ آپ گول کی اہمیت کے بارے میں سوچیں۔ جب آپ قومی ٹیم کے لیے کھیلتے ہیں تو آپ کو نتیجہ پر توجہ مرکوز کرنی ہوتی ہے لیکن یہ سچ ہے کہ میں ہمیشہ ورلڈ کپ میں گول کرنا چاہتا تھا۔ لیکن یہ آسان نہیں ہے۔ ہم نے پہلے ہاف میں زیادہ مواقع پیدا نہیں کیے اور پھر میں نے پنالٹی پر اسکور نہیں کیا۔

      Poland beat Saudi Arabia 2-0 at Education City Stadium, leaving KSA fans devastated after their upsetting loss.



      یہ بھی پڑھیں: 

      انھوں نے کہا کہ میں نے پچ کی وجہ سے اپنے جوتے بدلے ہیں۔ میں صرف مزید کرشن چاہتا تھا۔ کوئی بڑی کہانی نہیں ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ میں جتنا بوڑھا ہوتا ہوں اتنا ہی زیادہ جذباتی ہوتا جاتا ہوں۔ میں ہمیشہ ورلڈ کپ میں گول کرنا چاہتا تھا صرف اس بات کو واضح کرنے کے لئے کہ میں نے ورلڈ کپ میں کھیلا ہے۔ میں ہمیشہ ذاتی اعدادوشمار پر توجہ نہیں دیتا ہوں، ٹیم کا نتیجہ اہم ہوتا ہے۔

      لیوینڈوسکی نے 82 ویں منٹ میں دفاعی غلطی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے تین پوائنٹس پر مہر لگا دی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: