உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    '17 سال بعد آئے تھے، خالی ہاتھ کیسے جانے دیتے...‘ پاکستان کی ہار پر پی سی بی چیف کا دلچسپ بیان

    پاکستان کی ہار پر پی سی بی چیف کا دلچسپ بیان

    پاکستان کی ہار پر پی سی بی چیف کا دلچسپ بیان

    Pakistan vs England: انگلینڈ نے ساتویں اور فیصلہ کن ٹی20 انٹرنیشنل مقابلے میں اتوار کو 67 رنوں کی شاندار جیت کے ساتھ سال میں پاکستان کے اپنے پہلے دورے کا خاتمہ جیت کے ساتھ کیا۔ انگلینڈ نے سات میوں کی سیریز کو 3-4 سے اپنے نام کرلیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: 17 سال میں انگلینڈ کا پاکستان کا پہلا دورہ ان کے لئے کامیاب رہا۔ جوس بٹلر کی غیر موجودگی میں معین علی کی کپتانی والی ٹیم نے سیریز کو 4-3 سے اپنے نام کیا۔ پاکستان کی ہار کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ رمیز راجہ نے ایک کمزور بیان دیا ہے، جو سوشل میڈیا پر جم وائرل ہو رہا ہے۔ رمیز راجہ کے اس عجیب وغریب بیان کے لئے ان کے ساتھ ساتھ پوری پاکستانی ٹیم کو بھی سوشل میڈڈیا پر جم کر ٹرول کیا جا رہا ہے۔

      پاکستان کے کئی مداحوں کو کراچی اور لاہور میں ملک کا دورہ کرنے کے لئے انگلینڈ ٹیم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے بینر پکڑے دیکھا جاسکتا ہے۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان 7 ٹی20 میچوں کی سیریز کراچی اور لاہور دو شہر میں ہی منعقد کی گئی تھی۔ انگلیںڈ کا دورہ انٹرنیشنل کرکٹ میں میزبان کے طور پر پاکستان کی واپسی کے لئے کافی اہم رہا ہے۔ آسٹریلیا نے اس سال کی شروعات میں پاکستان کا دورہ کیا تھا۔ ایسے میں پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین رمیز راجہ نے بھی انگلینڈ ٹیم کا شکریہ ادا کیا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے مزاحیہ انداز میں کہا کہ وہ جیت گئے، کیونکہ میزبان ٹیم انہیں خالی ہاتھ گھر واپس نہیں جانے دینا چاہتی تھی۔

      رمیز راجہ نے اتوار کو ساتویں ٹی20 میچ کے بعد کہا، ‘انگلینڈ کی میزبانی کرنا خوش قسمتی کی بات ہے۔ وہ 17 سال کے وقفے کے بعد یہاں آئے ہیں تو ہم انہیں ان کی ٹرافی کیسے دینے دے سکتے تھے۔ ہم انہیں خالی ہاتھ نہیں جانے دے رہے ہیں، لیکن ایمانداری سے کہوں تو وہ بہتر ٹیم ثابت ہوئے‘۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      انگلینڈ سے شرمناک شکست کے بعد بابر اعظم نے سنائی کھری کھوٹی، ٹیم کھلاڑیوں کے خلاف دیا یہ بڑا بیان 

      یہ بھی پڑھیں۔

      ٹیم انڈیا کو بڑا جھٹکا، جسپریت بمراہ ٹی20 عالمی کپ سے باہر، بی سی سی آئی نے لگائی مہر 

      انہوں نے مزید کہا، ’گزشتہ دو میوں کو چھوڑ کر جہاں پاکستان واضح طور پر ہار گیا تھا، یہ ایک شاندار اور دل کو چھو لینے والی سیریز تھی۔ پاکستان کے لئے سیکھنے کے لئے بہت کچھ ہے، لیکن ہم انہیں عالمی کپ کے لئے اپنی نیک خواہشات بھیج رہے ہیں۔ اس لئے میں چاہتا ہوں کہ ہمارے ناظرین اس پاکستانی ٹیم کی حمایت کریں۔ ایک بار پھر انگلینڈ کا شکریہ، یہ ایک اعزاز اور ایک خصوصی اختیار رہا ہے۔ ہم پھر سے ملیں گے ٹسٹ سیریز میں، آپ کا سفر محفوظ ہو‘۔

      واضح رہے کہ جوس بٹلر دورے پر پاکستان تو آئے تھے، لیکن پنڈلی کی چوٹ کے سبب سیریز میں ایک بھی میچ نہیں کھیل سکے۔ مستقل کپتان کی چوٹ مہینے کے آخر میں ٹی20 عالمی کپ میں انگلینڈ کے لئے باعث تشویش ہوسکتی ہے، لیکن وہ میزبان ٹیم کے گھریلو میدان پر پاکستان کی ایک مضبوط ٹیم کو ہرانے میں کامیاب رہی۔ انگلینڈ ٹی20 عالمی کپ کے بعد تین ٹسٹ میچ کھیلنے کے لئے ایک بار پھر سے پاکستان لوٹے گا۔ پہلا ٹسٹ میچ یکم دسمبر سے راولپنڈی میں جبکہ دوسرا ٹسٹ 9 دسمبر سے ملتان میں کھیلا جائے گا۔ تیسرا اور آخری ٹسٹ 17 دسمبر سے کراچی میں شروع ہوگا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: