உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Ranji Trophy: تاریخ رقم کرنے والے ثاقب الغنی کی کہانی: بیٹ خریدنے کے لئے ماں نے گروی رکھ دیئے تھے اپنے زیورات، اب بنا دیا عالمی ریکارڈ

    بہار کے 22 سال کے بلے باز کا عالمی ریکارڈ، ڈیبیو پر لگائی ٹرپل سنچری

    بہار کے 22 سال کے بلے باز کا عالمی ریکارڈ، ڈیبیو پر لگائی ٹرپل سنچری

    Ranji Trophy 2022 میں جمعہ کا دن تاریخی بن گیا۔ بہار کے بلے باز ثاقب الغنی (Sakibul Gani) نے فرسٹ کلاس ڈیبیو پر ٹرپل سنچری لگاکر تاریخ رقم کردی۔ وہ ایسا کرنے والے دنیا کے پہلے بلے باز بن گئے۔ انہوں نے میزورم کے خلاف کولکاتا میں چل رہی رنجی ٹرافی میچ کے دوسرے دن اپنی ٹرپل سنچری مکمل کی۔ اس اننگ کے دوران انہوں نے بابل کمار کے ساتھ مل کر چوتھے وکٹ کے لئے 538 رنون کی شراکت بھی کی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: بہار کے 22 سال کے بلے باز ثاقب الغنی (Sakibul Gani) کی فرسٹ کلاس کرکٹ کیریئر کی دھماکہ دار شروعات ہوئی ہے۔ ثاقب الغنی نے پہلے ہی فرسٹ کلاس میچ میں ٹرپل سنچری لگا دی ہے۔ وہ ایسا کرنے والے دنیا کے پہلے بلے باز بنے ہیں۔ اسی کے ساتھ وہ رنجی ٹرافی میں ڈیبیو کرتے ہوئے سب سے بڑا اسکور بنانے والے بلے باز بھی بن گئے۔ ثاقب الغنی نے میزورم کے خلاف کولکاتا میں کھیلے جا رہے رنجی ٹرافی کے مقابلے میں اپنی ٹرپل سنچری 387 گیندوں پر 50 چوکے لگاتے ہوئے پوری کی۔

      میڈیا رپورٹس کے مطابق ثاقب الغنی کے بڑے بھائی فیصل غنی کا کہنا ہے کہ ایک اچھے بیٹ کی قیمت 30 سے 35 ہزار روپئے تھی۔ ایک متوسط طبقے کے لئے اسے خرید پانا ایک خواب جیسا تھا، لیکن والدین نے پیسے کی کمی کبھی بھائی کے کرکٹ میں رکاوٹ نہیں بننے دیا۔ جب بھی اقتصادی پریشانی آتی تو ماں اپنے زیورات تک گروی رکھ دیتی تھیں۔ ثاقب الغنی جب رنجی ٹرافی کھیلنے جا رہے تھے، تب ماں نے انہیں تین بیٹ دیئے اور بولیں کہ جاو بیٹا ٹرپل سنچری لگاکر آنا اور اس نے آج وہ کردکھایا۔

      ثاقب الغنی سے پہلے فرسٹ کلاس ڈیبیو پر سب سے بڑی اننگ کھیلنے کا ریکارڈ مدھیہ پردیش کے بلے باز اجے روہیرا کے نام تھا۔ انہوں نے 19-2018 کے رنجی سیزن میں حیدرآباد کے خلاف مقابلے میں یہ حصولیابی حاصل کی تھی۔ تب انہوں نے 267 رنوں کی اننگ کھیلی تھی۔ حالانکہ، بہار کے ثاقب الغنی نے تو سیدھے ٹرپل سنچری ہی لگا دی۔




      میزورم کے خلاف رنجی ٹرافی کے پہلے میچ میں بہار نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا، لیکن ٹیم کی شروعات اچھی نہیں رہی اور 71 رن کے اندر تین وکٹ گرگئے تھے۔ پانچویں نمبر پر ثاقب الغنی بلے بازی کے لئے اترے اور انہوں نے میچ کا رخ پوری طرح پلٹ دیا۔ اس بلے باز نے بابل کمار کے ساتھ مل کر میزورم کی گیند بازوں کی جم کر کلاس لگائی اور ٹرپل سنچری لگا دی۔ ان دونوں کے درمیان چوتھے وکٹ کے لئے 500 سے زیادہ رنوں کی پارٹنرشپ کی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: