உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بڑی خبر: رویندر جڈیجہ نے ایم ایس دھونی کو واپس سونپی چنئی سپرکنگس کی کپتانی

    رویندر جڈیجہ نے ایم ایس دھونی کو واپس سونپی چنئی سپرکنگس کی کپتانی

    رویندر جڈیجہ نے ایم ایس دھونی کو واپس سونپی چنئی سپرکنگس کی کپتانی

    رویندر جڈیجہ نے چنئی سپرکنگس کی کپتانی چھوڑ دی ہے۔ سیزن سے پہلے دھونی کی جگہ انہیں ٹیم کی کمان دی گئی تھی۔ دھونی کی ہی کپتانی میں چنئی سپرکنگس 4 بار ٹی20 لیگ کا خطاب جیتا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: رویندر جڈیجہ نے چنئی سپرکنگس کی کپتانی واپس مہندر سنگھ دھونی کو سونپ دی ہے۔ آئی پی ایل 2022 شروع ہونے کے کچھ دن پہلے ایم ایس دھونی نے رویندر جڈیجہ کو ٹیم کا کپتان بنایا تھا۔ رویندر جڈیجہ کی قیادت میں چنئی سپرکنگس کی کارکردگی کافی مایوس کن رہی۔ ان کی کپتانی نے چنئی سپرکنگس نے 8 میچ کھیلے، جن میں 2 جیتے اور 6 ہارے۔ چنئی سپرکنگس نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ رویندر جڈیجہ نے دھونی کو دوبارہ کپتانی سونپنے کی پیشکش کی، جسے دھونی نے قبول کرلیا۔ دھونی نے بطور کپتان سی ایس کے کو 4 بار آئی پی ایل کا خطاب دلایا ہے۔

      اب ایم ایس دھونی ایک بار پھر سے ٹیم کی کمان سنبھالتے ہوئے نظر آئیں گے۔ ٹیم کو اتوار کو سن رائزرس حیدرآباد سے مدمقابل ہونا ہے۔ ٹیم کو موجودہ سیزن کے پلے آف میں پہنچنے کے لئے سیزن کے بچے اپنے سبھی میچ جیتنے ہوں گے۔ اس کے بعد بھی ٹیبل کے حالات دیکھنے ہوں گے۔ تاہم رویندر جڈیجہ کی کپتانی چھوڑنے کے بعد سب سے بڑا سوال یہی ہے کہ 40 سال کے دھونی کے بعد ٹیم کی کمان کسے سونپی جائے گی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      IPL 2022: عمران ملک اب دھونی کا لیں گے امتحان، چنئی سپرکنگس کے لئے جیت ضروری

      200 سے زیادہ میچ کا تجربہ

      ایم ایس دھونی آئی پی ایل تاریخ کے سب سے تجربہ کار کپتانوں میں سے ایک ہیں۔ انہوں نے 204 میچ میں کپتانی کی ہے۔ 121 میں جیت ملی ہے جبکہ 82 میں ہار۔ دیگر کسی کپتان کے پاس آئی پی ایل میں 150 میچ کی کپتانی کرنے کا تجربہ بھی نہیں ہے۔ چنئی سپرکنگس منیجمنٹ کی بات کی جائے تو دھونی اس کے سب سے بھروسے مندر کھلاڑی رہے ہیں۔ ٹیم نے موجودہ سیزن میں رویندر جڈیجہ کو سب سے زیادہ 16 کروڑ روپئے میں ریٹین کیا تھا، جبکہ دھونی کو صرف 12 کروڑ ملے تھے، لیکن رویندر جڈیجہ کے بطور کپتان ناکام ہونے کے بعد سے ٹیم منیجمنٹ کو نئے سرے سے اب پلان بنانا ہوگا۔

      ایم ایس دھونی کی قیادت میں چنئی سپر کنگس کی کارکردگی 2020 آئی پی ایل میں سب سے خراب رہی تھی۔ ٹیم پہلی بار پلے آف میں جگہ نہیں بنا سکی تھی۔ تب دھونی کی کپتانی پر سوال اٹھے تھے، لیکن انہوں نے 2021 میں ٹیم کو چوتھی بار چمپئن بناکر سبھی نقادوں کے منہ بند کر دیئے تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: