உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مشکل حالات میں رائیڈو اوروجے شنکرکی شانداراننگ، آخری ونڈے میں نیوزی لینڈ کو253 رنوں کا ہدف

    امباتی رائیڈو نے نیوزی لینڈ کے خلاف آخری ونڈے میں سنچری بنانے سے محروم رہ گئے، لیکن شانداراننگ کھیلی۔

    سیریزاپنے نام کرچکی ٹیم انڈیا اپنا آخری میچ جیتنا چاہتی ہے جبکہ نیوزی لینڈ کی ٹیم اس میچ کو جیت کرعزت بچانے کی کوشش کررہی ہے۔

    • Share this:
      ہندوستان اورنیوزی لینڈ کے درمیان پانچ ونڈے میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں ہندوستانی کرکٹ ٹیم 49.5 اوورمیں 252 رنوں پرآل آوٹ ہوگئی ہے جبکہ نیوزی لینڈ کو253 رنوں کا ہدف ملا ہے۔ ہندوستانی ٹیم سیریز پہلے ہی اپنے نام کرچکی ہے، لیکن آخری مقابلہ جیت کرشاندارطریقے سے وطن واپس آنا چاہتی ہے جبکہ نیوزی لینڈ یہ میچ جیت کراپنی شکست کے بعد مسلسل دوجیت حاصل کرکےکچھ راحت محسوس کرنا چاہتی ہے۔

      ویلنگٹن میں ہندوستانی کپتان روہت شرما نے ٹاس جیت کرپہلے بلے بازی کافیصلہ کیا۔ تاہم 18 رن تک چاروکٹ نیوزی لینڈ نے ان کے فیصلے کو غلط ثابت کردیا ہے۔ اب ٹیم انڈیا کی ساری امیدیں امباتی رائیڈواوروجے شنکرسے تھیں اوریقیناً ان دونوں نے نیوزی لینڈ کی تمام امیدوں پرپانی پھیردیا۔ دونوں نے پانچویں وکٹ کے لئے 98 رنوں کی شراکت کی، جس سے کیوی گیند بازپریشان نظرآنے لگے تھے۔ جبکہ ایک وقت میں لگ رہا تھا کہ شاید ہندوستان کی پوری ٹیم 100 رن کے اندرآوٹ ہوجائے گی، اس کے خلاف امباتی رائیڈو اوروجے شنکرکے علاوہ ہاردک پانڈیا اورکیدارجادھو دیواربن گئے۔

      امباتی رائیڈو اپنی سنچری مکمل کرنے سے محروم رہ گئے۔ انہوں نے 90 رنوں کی شانداراننگ کھیلی۔ جبکہ وجے شنکراورہاردک پانڈیا نصف سنچری مکمل کرنے میں ناکام رہے۔ دونوں بلے بازوں نے 45-45 رنوں کی اننگ کھیلی۔ ہاردک پانڈیا نے تو صرف 22 گیندوں پر45 رن بنا ڈالے، جس میں پانچ شاندارچھکے اوردوچوکے شامل ہیں۔

      قابل ذکرہے کہ ہندوستانی کرکٹ ٹیم پانچ میچوں کی سیزیزپرقبضہ کرچکی ہے اوراسے 1-3 کی ناقابل تسخیربرتری حاصل ہے۔ وراٹ کوہلی کی قیادت میں ابتدائی تینوں میچ میں ٹیم انڈیا نے نیوزی لینڈ کو شکست دی تھی۔ وراٹ کوہلی کوآخری دومیچوں میں آرام دیا گیا تھا۔ ان کی عدم موجودگی میں ٹیم کی قیادت کی ذمہ داری روہت شرما کے پاس ہے۔
      First published: