ہوم » نیوز » اسپورٹس

پہلی بارکرکٹ کے میدان پرسچن تندولکرکے خلاف اترے ونود کامبلی، دیکھیں ویڈیو

ممبئی کے ڈی وائی پاٹل اسٹیڈیم میں سچن تندولکراورونود کامبلی نے نیٹس پرایک دوسرے کے خلاف گیند بازی اوربلے بازی کی۔

  • Share this:
پہلی بارکرکٹ کے میدان پرسچن تندولکرکے خلاف اترے ونود کامبلی، دیکھیں ویڈیو
سچن تندولکراورونود کامبلی کی دوستی بہت پرانی ہے: تصویر: انسٹا گرام

کرکٹ کی دنیا میں سچن تندولکراورونود کامبلی کی دوستی بہت پرانی ہے۔ اسکول کے دنوں سے ہی دونوں ساتھ کھیلتے رہے ہیں۔ سالوں بعد ایک بارپھردونوں ایک ساتھ میدان پرکرکٹ کھیلتےنظرآئے، لیکن اس بارایک دوسرے کے ساتھ نہیں بلکہ پہلی بارایک دوسرے کے خلاف کھیلتے ہوئے دکھائی دیئے۔


ممبئی کے ڈی وائی پاٹل اسٹیڈیم میں دونوں دوستوں نے نیٹس پرایک دوسرے کے خلاف گیند بازی اوربلے بازی کی۔ تندولکراس دوران اپنے شاندارشاٹس کھیلتے دکھائی دیئے، جس میں ان کا ونٹیج کورڈرائیوشاٹ بھی دیکھنےکوملا۔


تندولکرنےاس ویڈیوکواپنےانسٹاگرام پرشیئرکیا اورلکھا 'ونود کامبلی کے ساتھ نیٹ پرواپسی کرکے کافی اچھا لگا۔ کھیلتے وقت شیواجی پارک میں اپنے بچپن کےدنوں کی یاد آگئی۔ بہت ہی کم لوگوں کوپتہ ہے کہ ہم دونوں ہمیشہ ایک ٹیم میں رہےاورکبھی ایک دوسرے کےخلاف نہیں کھیلے'۔








View this post on Instagram


Felt great to be back in the nets with @vinodkambli2016 during the @tendulkarmga lunch break! It sure took us back to our childhood days at Shivaji Park... 🏏 Very few people know that Vinod & I have always been in the same team and never played against each other. #TMGA #Throwback


A post shared by Sachin Tendulkar (@sachintendulkar) on May 11, 2019 at 3:41am PDT




وہیں کامبلی نے سچن تندولکراوربیٹے کے ساتھ فوٹوشیئرکرتےہوئے لکھا ایک والد، دوست، کوچ اوربلے بازہونے کا احساس... سب ایک ساتھ... سارا کریڈٹ سچن تندولکرکو'۔  






آپ کوبتادیں کہ سچن تندولکراورونود کامبلی دونوں ہی رماکانت اچریکرکے شاگرد رہے ہیں۔ دونوں نے ایک ساتھ ان سےٹریننگ لی۔ اس کےبعد دونوں ممبئی کی ٹیم سےبھی ساتھ کھیلے۔ دونوں ہی کھلاڑیوں کوہندوستانی ٹیم میں کھیلنے کا موقع ملا، جہاں ایک طرف سچن تندولکر میں ملک کوکرکٹ کا بھگوان مل گیا، وہیں کامبلی کے زیادہ تروقت تنازعہ میں ہی گھرے رہے۔ اس سب کےباوجود سچن تندولکراورونود کامبلی کی دوستی ویسی ہی رہی۔
First published: May 12, 2019 05:21 PM IST