ہوم » نیوز » اسپورٹس

بڑی خبر : لیجنڈ کرکٹر سچن تیندولکر ہوئے کورنا پازیٹیو ، خود کو کیا ہوم کوارنٹائن

لیجنڈ کرکٹر سچن تیندولکر کورونا پازیٹیو پائے گئے ہیں ۔ یہ جانکاری سچن تیندولکر نے خود سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹویٹر کےذریعہ دی ہے ۔

  • Share this:
بڑی خبر : لیجنڈ کرکٹر سچن تیندولکر ہوئے کورنا پازیٹیو ، خود کو کیا ہوم کوارنٹائن
بڑی خبر : لیجنڈ کرکٹر سچن تیندولکر ہوئے کورنا پازیٹیو ، خود کو کیا ہوم کوارنٹائن

نئی دہلی : لیجنڈ کرکٹر سچن تیندولکر کورونا پازیٹیو پائے گئے ہیں ۔ یہ جانکاری سچن تیندولکر نے خود سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹویٹر کےذریعہ دی ہے ۔ سچن تیندولکر نے خود کو ہوم کوارنٹائن کرلیا ہے ۔ انہوں نے حال ہی میں رائے پور میں سابق کرکٹروں کے روڈ سیفٹی ورلڈ سیریز چیلنج ٹورنامنٹ میں شرکت کی تھی ۔


سچن تیندولکر نے ٹویٹ کرکے بتایا کہ میں مسلسل ٹیسٹ کروا رہا تھا ۔ ساتھ ہی سبھی گائیڈلائنس پر عمل بھی کررہا رہا تھا ۔ حالانکہ ہلکی علامت کے ساتھ مجھے پازیٹیو پایا گیا ہے ۔ گھر میں دیگر اراکین کی رپورٹ منفی آئی ہے ۔ میں نے خود کو کوارنٹائن کرلیا ہے اور سبھی پروٹوکولس پر عمل بھی کررہا ہوں ۔ ڈاکٹرس کے مشورہ پر عمل کررہا ہوں ۔ میرا خیال رکھ رہے سبھی طبی اہلکاروں کا شکریہ ادا کرتا ہوں ۔




بتادیں کہ مہاراشٹر میں کورنا ایک مرتبہ پھر دھماکہ خیز شکل اختیارکرتا جارہا ہے ۔ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 60 ہزار سے زیادہ نئے معاملات سامنے آنے سے کورونا کی خطرناک صورتحال کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے ۔ وزارت صحت کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک بھر میں کورونا کے 62 ہزار 258 معاملات سامنے آئے ہیں جبکہ 291 لوگوں کی موت ہوگئی ہے ۔ وہیں مہاراشٹر میں بھی کورونا وائرس کے معاملات کی رفتار اب ڈرانے لگی ہے ۔ ہر دن ریکارڈ سطح پر معاملات سامنے آرہے ہیں ۔ حالات کو دیکھتے ہوئے وزیر اعلی ادھوٹھاکرے نے پوری ریاست میں 28 مارچ تک نائٹ کرفیو کا اعلان کردیا ہے ۔

اس درمیان اگر گزشتہ 24 گھنٹوں کی بات کریں تو ریاست میں 36 ہزار 902 نئے معاملات سامنے آئے ہیں جبکہ اس دوران 112 لوگوں کی موت بھی ہوئی ہے ۔ وہیں 17 ہزار 19 کورونا مریض شفایاب ہوکر گھر بھی لوٹے ہیں ۔ مہاراشٹر میں کورونا کے کل معاملات کی تعداد 26 لاکھ 37 ہزار 735 تک پہنچ گئی ہے ۔ ابھی تک 23 لاکھ 56 افراد شفایاب ہوچکے ہیں اور فی الحال دو لاکھ 82 ہزار 451 ایکٹیو کیسیز ہیں ۔ جبکہ 53 ہزار 907 افراد کی موت ہوئی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 27, 2021 10:44 AM IST