ہوم » نیوز » اسپورٹس

کورونا وائرس نے لی ہندوستان کے سابق کرکٹر سنجے ڈووال کی جان، سہواگ سے مانگی تھی مدد

بی سی سی آئی کے سابق چیئرمین سی کے کھنہ اور دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) کے سکریٹری ونود تہارا نے ڈووال کی موت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اسے دہلی کی کرکٹ کے لئے ایک گہرا نقصان قرار دیا ہے۔

  • Share this:
کورونا وائرس نے لی ہندوستان کے  سابق کرکٹر سنجے ڈووال کی جان، سہواگ سے مانگی تھی مدد
کورونا وائرس نے لی ہندوستان کے سابق کرکٹر سنجے ڈووال کی جان

نئی دہلی: دہلی کے سابق کرکٹر سنجے ڈووال کا پیر کی صبح کورونا انفیکشن کے سبب انتقال ہوگیا۔ ان کی عمر 52 سال تھی۔ ان کے پسماندگان میں بیوی اور دو بیٹے ہیں۔ بورڈ آف کنٹرول برائے کرکٹ انڈیا (بی سی سی آئی) کے سابق چیئرمین سی کے کھنہ اور دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) کے سکریٹری ونود تہارا نے ڈووال کی موت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اسے دہلی کی کرکٹ کے لئے ایک گہرا نقصان قرار دیا ہے۔


اتوار کو سابق ہندوستانی کرکٹر ویریندر سہواگ نے بھی سوشل میڈیا پر ان کے لئے مدد مانگی تھی۔ دہلی کے سابق آل راونڈر سنجے کے انتقال سے پوری دنیائے کھیل کو جھٹکا لگا ہے۔ اجیت ڈووال کی فیملی میں ان کی اہلیہ اور دو بیٹے ہیں۔ سدھانت راجستھان کے لئے کھیلتے ہیں تو چھوٹا بیٹا ایکانش دہلی کی انڈر -19 ٹیم میں ہے۔




 اتوار کو سابق ہندوستانی کرکٹر ویریندر سہواگ نے بھی سوشل میڈیا پر ان کے لئے مدد مانگی تھی۔

اتوار کو سابق ہندوستانی کرکٹر ویریندر سہواگ نے بھی سوشل میڈیا پر ان کے لئے مدد مانگی تھی۔

سنجے ڈووال کے دو بیٹوں میں سے ایک راجستھان کے رنجی کھلاڑی سدھانت ہے جبکہ ایکانش دہلی کے انڈر 23 کھلاڑی ہیں۔ ڈووال خود رنجی ٹرافی نہیں کھیلے تھے لیکن انہوں نے جونیئر کرکٹرز کی کوچنگ کی تھی۔ وہ ایئر انڈیا کی طرف سے کھیلے۔ انہوں نے سونیٹ کرکٹ کلب کے لئے بھی کھیلا اور ان کی تربیت تارک سنہا نے کی۔ وہ ڈی ڈی سی اے سے بھی وابستہ تھے۔ ڈووال نمونیا میں مبتلا تھے اور انھیں چار ٹیسٹ کرانے پڑے تھے اور انہیں تین ہفتوں کے بعد کورونا مثبت پایا گیا تھا۔


نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ

First published: Jun 29, 2020 08:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading