ہوم » نیوز » اسپورٹس

ثقلین مشتاق کا انکشاف- میدان پرنہیں نظرآتی تھی گیند، پھر انل کمبلے بنے’فرشتہ’۔

ثقلین مشتاق (Saqlain Mushtaq) نے اس کا انکشاف کیا۔ اسپورٹس اسٹارکے ساتھ انسٹا گرام پر لائیو کے دوران پاکستان کے عظیم کرکٹرنے اس کا انکشاف کیا۔ انہوں نے بتایا کہ کیسے انل کمبلے (Anil Kumble) نےلندن میں ان کی مدد کی تھی۔

  • Share this:
ثقلین مشتاق کا انکشاف- میدان پرنہیں نظرآتی تھی گیند، پھر انل کمبلے بنے’فرشتہ’۔
پاکستان کے عظیم کھلاڑی نےبتایا کہ وہ سبھی انگلینڈ میں تھے اور انہوں نے انل کمبلے سے مدد مانگی۔

کرکٹ کےمیدان پر ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مقابلہ کسی جنگ سےکم نہیں ہوتی۔ ان مقابلوں میں کئی بار پاکستان کے عظیم ثقلین مشتاق (Saqlain Mushtaq) اور ہندوستان کے عظیم گیند باز انل کمبلے (Anil Kumble) بھی آمنے سامنے ہوئے ہیں۔ مگر اس کے باوجود انل کمبلے نے میدان کے اس ٹورنامنٹ کا یکطرفہ کرکےثقلین مشتاق کی بڑی مدد کی اور پریشانی سے باہرنکالا۔ خودثقلین مشتاق نے اس کا انکشاف کیا۔ اسپورٹس اسٹارکے ساتھ انسٹا گرام پر لائیو کے دوران پاکستان کے سابق عظیم کرکٹر ثقلین مشتاق نےاس کا انکشاف کیا۔ انہوں نے بتایا کہ کیسے انل کمبلے نےلندن میں ان کی مدد کی تھی۔


پاکستان کے ڈاکٹرس بھی سمجھ نہیں پائے پریشانی


ثقلین مشتاق نے انکشاف کیا کہ ان کی آنکھوں میں روشنی کی پریشانی تھی، جسے پاکستان کا کوئی بھی ڈاکٹر ٹھیک نہیں کرسکا۔ ایسے وقت میں انل کمبلے نےلندن میں ان کے لئے ڈاکٹر تلاش کرنے میں مدد کی، جس نے ان کےلئےکوئی کرشمہ کردیا۔


مانگی تھی مدد

پاکستان کے عظیم کھلاڑی نے بتایا کہ وہ سبھی انگلینڈ میں تھے اور انہوں نے انل کمبلے سے مدد مانگی۔ انہوں نےکہا تھا کہ گھر پر زیادہ اچھے ڈاکٹرس نہیں ہیں۔ اسی لئے وہ جدوجہد کر رہے ہیں اور انہوں نےانل کمبلے سےکچھ اچھے آنکھ کے ڈاکٹروں کے بارے میں پوچھا۔ اس کے بعد انل کمبلے نے انہیں ڈاکٹر بھرت روگانی کے پاس جانے کا مشورہ دیا۔ ثقلین مشتاق نے بتایا کہ اس وقت انل کمبلے نے یہ بھی کہا کہ وہ اور سوربھ گانگولی کئی بار اس ڈاکٹر سے مشورہ لے چکے ہیں۔

ثقلین مشتاق نےکہا کہ انل کمبلے کےلئے ان کے دل میں کافی احترام ہے اور انہیں وہ بڑے بھائی کی طرح مانتے ہیں۔ فوٹو: ٹویٹر

ثقلین مشتاق نےکہا کہ انل کمبلے کےلئے ان کے دل میں کافی احترام ہے اور انہیں وہ بڑے بھائی کی طرح مانتے ہیں۔ فوٹو: ٹویٹر


باونڈری  سے نہیں دیکھ سکتے تھے گیند

پاکستانی عظیم کھلاڑی نے انکشاف کیا کہ انہوں نے پاکستان میں کئی ڈاکٹرس سے بھی اپنی پریشانی کے بارے میں بات کی۔ مگر کوئی بھی اس کا علاج نہیں کرپایا۔ انل کمبلے کی وجہ سے انہیں اچھا ڈاکٹر ملا اور انہیں کی وجہ سے انہیں ان کی آنکھوں کی پریشانی سے نجات ملی۔ ثقلین مشتاق نے بتایا کہ جب وہ میچ کے دوران باونڈری پر فیلڈنگ کررہے ہوتے تھے تو ان کی دیکھنے کی صلاحیت صفر ہوجاتی تھی۔ اس وجہ سے وہ تھوڑا سست ہوجاتے تھے اور تھوڑا دیر سے سمجھ پاتے تھے۔ علاج کے بعد وہ صاف طور پر دیکھنے لگے تھے۔

خوف میں آگئی تھی پاکستانی ٹیم

ثقلین مشتاق نےکہا کہ انل کمبلے کےلئے ان کے دل میں کافی احترام ہے اور انہیں وہ بڑے بھائی کی طرح مانتے ہیں۔ انل کمبلے کے 10 وکٹ کے کارنامہ پر انہوں نےکہا کہ ان کی گیند بازی دیکھ کر پوری پاکستانی ٹیم خوف میں آگئی تھی۔
First published: Apr 13, 2020 02:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading