ہوم » نیوز » اسپورٹس

عالمی کپ سے باہرہوکرگھر پہنچی پاکستانی ٹیم، ایئرپورٹ پرہوا ایسا حال

پاکستانی ٹیم نے 9 میں سے 5 میچ جیتے، لیکن نیٹ رن ریٹ میں نیوزی لینڈ سے پیچھے ہونے کی وجہ سے وہ سیمی فائنل میں جگہ نہیں بناپائی۔

  • Share this:
عالمی کپ سے باہرہوکرگھر پہنچی پاکستانی ٹیم، ایئرپورٹ پرہوا ایسا حال
پاکستانی کرکٹ ٹیم کےکپتان سرفرازاحمد۔ تصویر: اے پی

پاکستانی کرکٹ ٹیم آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ 2019 سے باہرہونے کے بعد اتوارکی صبح اپنے ملک واپس لوٹ گئی۔ کپتان سرفرازاحمد کی قیادت میں ٹیم کراچی ایئرپورٹ پہنچی۔ یہاں ان کا گرمجوشی سے استقبال کیا گیا۔ حالیہ کھلاڑی پوری طرح سے سیکورٹی میں تھے۔ کسی بھی طرح کے ناگہانی واقعات یا احتجاجی مظاہرے کو ٹالنے کے لئے معقول انتظامات کئے گئے تھے۔


پاکستانی ٹیم کو سیکورٹی میں ہی گھرتک لے جایا گیا۔ جس طرح کی ناراضگی پاکستانی ٹیم کی شکست کے بعد سوشل میڈیا پردیکھنے کو مل رہی تھی، ویسی ناراضگی ایئرپورٹ اوراس کے علاوہ مقامات پرنہیں دیکھنے کو ملی۔ قابل ذکرہے کہ پاکستان نے 9 میں سے 5 میچ جیتے، لیکن نیٹ رن ریٹ میں نیوزی لینڈ سے پیچھے ہونے کی وجہ سے وہ سیمی فائنل میں جگہ نہیں بناپائی۔


عالمی کپ سے باہرہونے کا افسوس


پاکستان پہنچنے کے بعد سرفرازاحمد نے پریس کانفرنس کی اورصحافیوں کے سوالوں کے جواب دیئے۔ انہوں نے کہا کہ ٹٰم نے پہلے کی ہارکے بعد رن ریٹ کے مسئلے کوسمجھا۔ بعد میں اسے سدھارنے کی کوشش بھی کی، لیکن پچوں سے مدد نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ عالمی کپ سے باہرہونے کا ہمیں بھی اتنا ہی افسوس ہے، جتنا کہ پورے ملک کو ہے۔ کوئی بھی ہارنے کے لئے نہیں جاتا ہے'۔







View this post on Instagram


Cricket team captain Sarfaraz Ahmed returns from the United Kingdom to Karachi. #DawnToday #DawnViralToday


A post shared by Dawn Today (@dawn.today) on Jul 7, 2019 at 12:13am PDT






انڈیا سے شکست کے بعد تھا مشکل وقت

سرفرازاحمد نے تسلیم کیا کہ گزشتہ پانچ میچوں میں ٹیم کی کارکردگی اچھی نہیں تھی۔ انہوں نے کہا 'پہلے میچ کے بعد ہم نے رفتارپکڑی، لیکن بدقسمتی سے ہم سری لنکا کے خلاف بارش کے سبب میچ نہیں کھیل پائے اورآسٹریلیا اورانڈیا سے ہارگئے۔ انڈیا سے ہارنے کے بعد اگلے 7 دن ہمارے لئے کافی مشکل تھے۔ میچ کے بعد ہم نے دو دن کا بریک لیا اورپھر سبھی 15 کھلاڑیوں کی میٹنگ بلائی۔ اس میں ٹیم انتظامیہ شامل نہیں تھی۔ اس میں میں نے نے تفصیل سے ہرچیزپربات کی۔ میں نے محسوس کیا کہ گزشتہ پانچ میچ میں ہم نے سب غلط کیا۔ اس کے بعد کھلاڑیوں نے اگلے میچ میں اچھا کھیل دکھایا۔ ایک کپتان کے طورپرمیں ٹیم سے خوش ہوں'۔ انہوں نے کہا کہ وہ ٹیم کے کھلاڑیوں کو اچھے سے جانتے ہیں۔ ان میں سے زیادہ ترنوجوان ہیں اوروہ اس ٹیم کو اگلے لیول تک لے جاسکتے ہیں۔

شعیب ملک کو الوداعی میچ نہ ملنا بدقسمتی

عالمی کپ سے باہرہونے کے بعد شعیب ملک نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا تھا، لیکن انہیں الوداعی میچ (فیئرویل) کھیلنے کا موقع نہیں ملا تھا۔ اس بارے میں سرفرازاحمد نے کہا 'جہاں تک شعیب ملک کی بات ہے توبدقسمتی سے وہ آخری میچ کا حصہ نہیں تھا کیونکہ ہم نے فاتح ٹیم کے ساتھ جانے کا فیصلہ کیا۔ اسے ٹیم کی طرف سے الوداع دی گئی اورہماری دعائیں اس کے ساتھ ہیں'۔

 
First published: Jul 07, 2019 11:44 PM IST