Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » اسپورٹس

    وسیم اکرم کی کپتانی میں پاکستان نے 1999 عالمی کپ فائنل سمیت 2 میچ کئے فکس

    پاکستان کے سابق تیز گیند باز سرفراز نواز (Sarfaraz Nawaz) نے سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے وسیم اکرم (Wasim Akram) اور پاکستانی ٹیم پر کئی سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔

    • Share this:
    وسیم اکرم کی کپتانی میں پاکستان نے 1999 عالمی کپ فائنل سمیت 2 میچ کئے فکس
    وسیم اکرم ناظرین کے بغیر ٹی-20 ورلڈ کپ کے حق میں نہیں

    نئی دہلی: پاکستان اور میچ فکسنگ کا رشتہ کافی پرانا ہے۔ اکثر پاکستان کی ٹیم اور اس کے کھلاڑی میچ فکسنگ کے تنازعہ میں پھنستے رہے ہیں۔ اب اسی موضوع پر پاکستان کے سابق تیز گیند باز سرفراز نواز (Sarfaraz Nawaz) نے سابق کپتان وسیم اکرم (Wasim Akram) پر سنگین الزامات عائد کردیا ہے۔ سرفراز نواز نے دعویٰ کیا ہے کہ وسیم اکرم کی کپتانی میں سال 1999 عالمی کپ کے دوران پاکستان نے دو میچ فکس کئے تھے۔ سرفراز نواز نے دعویٰ کیا کہ 1999 عالمی کپ کا فائنل میچ اور اسی ٹورنامنٹ میں پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان ہوا مقابلہ فکس تھا۔


    سرفراز نواز (Sarfaraz Nawaz) نے پاکستانی چینل ’بول نیوز’ کے ساتھ بات چیت میں کئی سنگین الزامات عائد کئے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ 1999 عالمی کپ میں پاکستان کی ٹیم جان بوجھ کر بنگلہ دیش سے ہاری تھی۔ وہیں پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان ہوا فائنل میچ بھی اسپاٹ فکسنگ کا شکار ہوا۔ سرفراز نواز نے دعویٰ کیا، ’میچ سے پہلے میں اسٹیڈیم میں گیا اور میں نے کپتان وسیم اکرم سے ملاقات کی۔ وسیم اکرم نے کہا کہ یہ میچ کسی بھی حالت میں جیتنے ہوں گے کیونکہ اس مقابلے کے فکس ہونے کی افواہ پھیلی ہوئی ہے۔ وسیم اکرم بولے کہ یہ میچ جیتیں گے، لیکن پاکستان یہ میچ ہارگیا’۔


    سرفراز نواز نے سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے وسیم اکرم اور پاکستانی ٹیم پر کئی سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔
    سرفراز نواز نے سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے وسیم اکرم اور پاکستانی ٹیم پر کئی سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔


    ان دو مقابلوں میں فکسنگ کا دعویٰ

    واضح رہے کہ عالمی کپ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم بنگلہ دیش سے 62 رنوں کے بڑے فرق سے میچ ہارگئی تھی۔ اس مقابلے میں بنگلہ دیش کی ٹیم نے 50 اوور میں محض 223 رن بنائے تھے اور جواب میں پاکستان کی ٹیم صرف 161 رنوں پر ڈھیر ہوگئی تھی۔ وہیں لارڈس میں کھیلے گئے فائنل میچ میں پاکستان کی ٹیم صرف 132 رن بناسکی اور آسٹریلیائی ٹیم نے محض 20.1 اوور میں یہ ہدف حاصل کرلیا۔

    سرفراز نواز نے دعویٰ کیا کہ میچ ہارنے کے بعد پاکستان کے جسٹس قیوم نے ایک کمیشن کی تشکیل کی اور ٹیم کے کئی کھلاڑی اس کے سامنے پیش ہوئے۔ اس کمیشن کی میٹنگ میں موجودہ وزیر اعظم عمران خان بھی آئے تھے۔ سرفراز نواز نے دعویٰ کیا کہ وسیم اکرم نے مانا تھا کہ ان کی جائیداد ان کی آمدنی سے زیادہ ہے۔ اس کے باوجود عمران خان نے وسیم اکرم کو پاکستان کرکٹ بورڈ میں شامل کیا۔ سرفراز نواز نے یہ بھی کہا کہ ایسے ہی لوگوں کو پاکستان سپر لیگ میں جوڑا گیا، جس کی وجہ سے وہاں بھی فکسنگ کے واقعات ہونے لگے۔

     

     
    First published: May 04, 2020 09:49 PM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading