ہوم » نیوز » اسپورٹس

Sunday Special: عمران خان کی نقش قدم پر شاہد آفریدی، بننا چاہتے ہیں وزیر اعظم پاکستان

شاہد آفریدی (Shahid Afridi) ان دنوں (Pakistan) پاکستان میں اپنے بیانات اور کورونا (Corona) کے درمیان عوامی خدمت کو لے کر چرچا میں تھے، جس کے بعد ان کے اگلے وزیر اعظم بننے کی چرچا شروع ہوگئی ہے۔

  • Share this:
Sunday Special: عمران خان کی نقش قدم پر شاہد آفریدی، بننا چاہتے ہیں وزیر اعظم پاکستان
عمران خان کی راہ پر شاہد آفریدی، بننا چاہتے ہیں پاکستان کا وزیر اعظم

گزشتہ کچھ دنوں میں پاکستانی کرکٹر شاہد آفریدی (Shahid Afridi) اپنے ملک میں ہیرو کی طرح سامنے آئے ہیں۔ کورونا وائرس (Coronavirus) کے درمیان وہ لوگوں کی مدد کرکے مسیحا بن گئے ہیں۔ حالانکہ جس طرح سے وہ پاکستان مقبوضہ کشمیر (Pak Occupied Kashmir) میں جاکر تقریر کرکے آئے اور جیسے لوگوں کے دلوں میں جگہ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں اس سے ایک بار پھر ان کے سیاست میں اترنے کی چرچا شروع ہوگئی ہے۔ شاہد آفریدی جس راہ پر چل رہے ہیں، اسی پر چل کر پاکستان کو عالمی چمپئن بنانے والے کپتان عمران خان (Imran Khan) پاکستان (Pakistan) کے وزیر اعظم بن گئے تھے۔


وزیر اعظم بننے کی خواہش ظاہر کرچکے ہیں شاہد آفریدی


سال 2016 میں شاہد آفریدی (Shahid Afridi) نے پہلی بار سیاست میں اترنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ وہ سیاست میں آکر لوگوں کی خدمت کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے ساتھ ہی یہ بھی کہا تھا کہ ان کے خیر خواہ چاہتے ہیں کہ وہ سیاست میں نہ آئیں۔ حالانکہ شاہد آفریدی کو لگتا ہےکہ سیاست داں عوام کے خادم ہوتے ہیں اور وہ اسے پوری ایمانداری کے ساتھ نبھا سکتے ہیں۔


 سال 2016 میں شاہد آفریدی نے پہلی بار سیاست میں اترنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

سال 2016 میں شاہد آفریدی نے پہلی بار سیاست میں اترنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔


عمران خان کی طرح ہی ہے آفریدی کی شخصیت

دونوں ہی کھلاڑی ہیں تو بات کھیل سے شروع کرنا صحیح رہے گا۔ شاہد آفریدی اور عمران خان دونوں ہی کی یہ خاصیت رہی ہے کہ جب بھی پاکستان کی ٹیم نے کھیل کے میدان میں مشکل کا سامنا کیا ہے تو چاہے طوفانی بلے بازی کے دم پر یا پھر شاندار گیند بازی کے دم پر ان دونوں نے ہی اپنے اپنے تعاون سے ٹیم کو جیت دلائی ہے۔ آج پاکستان میں ایسا کوئی آل راونڈر نہیں ہے جو اپنی کارکردگی سے ہارتی ہوئی پاکستانی ٹیم کو جیت دلا سکے۔ یہ تو بات ہوگئی کھیل کے میدان کی۔ باہر بھی دونوں آل راونڈر ہی ہیں۔ چاہے لو لائف (پیار کی زندگی) رہی ہو، یا پھر افیئرس کی تعداد، آج بھی دونوں کا مقابلہ شاید ہی کوئی پاکستان میں کوئی کرپائے۔

کورونا میں لوگوں کی مدد کے لئے آگے آئے

عمران خان نے سیاست کی شروعات سماج کی خدمت کے ساتھ ہی کی تھی۔ انہوں نے کئی ایسی چیریٹی کھولی تھیں جو پاکستان میں تعلیم سے لے کر صحت تک کے لئے کام کرتی ہیں۔ ان کی شناخت ایک سماجی خدمت گار کے طور پر ہی ہوتی تھی۔ وہیں شاہد آفریدی نے بھی اس راستے پر چلنا شروع کردیا۔ کورونا وائرس کے درمیان کئی کھلاڑی لوگوں کی مدد کے لئے آگے آئے، لیکن شاہد آفریدی سب سے ایک قدم آگے نکلے۔ آفریدی گھر گھر جاکر لوگوں کو کھانا اور ضرورت کے سامان تقسیم کئے۔ شاہد آفریدی کی فاونڈیشن اس دوران لوگوں میں راشن تقسیم کرنے کے ساتھ ساتھ جگہ جگہ سینیٹائزر بھی لگا رہے تھے۔

شاہد آفریدی خود کورونا سے متاثر ہوگئے ہیں۔ انہوں نے اپنے مداحوں سے دعا کرنے کی اپیل کی ہے۔
شاہد آفریدی خود کورونا سے متاثر ہوگئے ہیں۔ انہوں نے اپنے مداحوں سے دعا کرنے کی اپیل کی ہے۔


شاہد آفریدی (Shahid Afridi) خود دور دراز کے علاقوں میں جاکر لوگوں کی مدد کر رہے تھے۔ آئے دن ان کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوتی رہیں۔ شاہد آفریدی کی ان کوششوں کی بے حد تعریف ہونے لگی اور ایک طرح سے عوام سے ہیو یا یوں کہیں مسیحا بن گئے۔ حالانکہ ان سب کے درمیان آج جب وہ خود اس بیماری سے متاثر ہیں تو صرف پاکستان ہی نہیں پوری دنیا کے مداح ان کے لئے دعا کر رہے ہیں۔ وہ لوگوں کے دل میں اپنی جگہ بنا چکے ہیں۔

شاہد آفریدی بھی پٹھانوں کی پسند

خیبرپختنخوا سے لے کر کراچی اور پشاور سے لے کر لاہور تک، عمران خان کو پسند کیا جاتا تھا۔ بات اگر لوگوں کے ذریعہ انہیں پسند کئے جانے کی بڑی وجوہات کی ہو تو عمران خان کا پٹھان ہونا ایک بڑی وجہ ہے۔ ایسا ہی معاملہ شاہد آفریدی کا بھی ہے۔ پٹھان ہونے کے سبب انہیں بھی لوگ خوب پسند کرتے ہیں۔ پاکستان کی سیاست کو مد نظر رکھتے ہوئے دیکھیں تو پاکستان کی ایک بڑی آبادی ایسی ہے جو پٹھان ہے۔ پاکستان میں کسی بھی لیڈر کی جیت یا ہار پر ’پٹھان فیکٹر’ ایک اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اگر آفریدی اس راستے پر جاتے ہیں تو ان کے لئے ان کا پٹھان ہونا راستہ آسان کر سکتا ہے۔
First published: Jun 14, 2020 01:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading