ہوم » نیوز » اسپورٹس

انکشاف: سچن تندولکر کے بلے سے شاہد آفریدی نےلگائی تھی37 گیندوں پر سنچری

شاہد آفریدی (shahid afridi) نے سری لنکا کے خلاف جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے 37 گیندوں پر اس وقت کی سب سے تیزی ونڈے سنچری لگائی تھی۔

  • Share this:
انکشاف: سچن تندولکر کے بلے سے شاہد آفریدی نےلگائی تھی37 گیندوں پر سنچری
سچن تندولکر کے بلے سے شاہد آفریدی نے لگائی تھی 37 گیندوں پر سنچری

پاکستان کے سابق عظیم کھلاڑی شاہد آفریدی (shahid afridi) 37 گیندوں پر سنچری لگانے کا کمال کرچکے ہیں۔ اس وقت کی یہ سب سے تیزسنچری تھی۔ تقریباً 18 سال تک شاہد آفریدی کے نام یہ ریکارڈ رہا۔ فی الحال ونڈے کرکٹ میں سب سے تیز سنچری لگانےکا ریکارڈ اے بی ڈیویلیئرس کے نام ہیں۔ انہوں نے 2015 میں 31 گیندوں پر سنچری لگادی تھی۔


شاہد آفریدی (Shahid Afridi) نے سری لنکا کے خلاف 40 گیندوں میں جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے 104 رنوں کی اننگ کھیلی تھی، مگر کم ہی لوگوں کو معلوم ہوگا کہ جس اننگ کو کھیل کر وہ پوری دنیا میں چھا گئے تھے، اس اننگ کو انہوں نے عظیم بلے باز ہندوستان کے سچن تندولکر (Sachin Tendulkar) کے بلے سے کھیلا تھا۔ دراصل سچن تندولکر نے اپنا بلا وقار یونس کو تحفے میں دیا تھا۔ شاہد آفریدی کے ساتھ کھیل چکے اظہر محمود کا کہنا ہے کہ اس اننگ کے بعد شاہد آفریدی پوری طرح سے بلے باز بنے۔ اس سے پہلے ان کا شمار ان گیند بازوں میں ہوتا تھا، جو بلے بازی بھی کرسکتے تھے’۔


شاہد آفریدی کے ساتھ کھیل چکے اظہر محمود کا کہنا ہے کہ اس اننگ کے بعد شاہد آفریدی پوری طرح سے بلے باز بنے۔
شاہد آفریدی کے ساتھ کھیل چکے اظہر محمود کا کہنا ہے کہ اس اننگ کے بعد شاہد آفریدی پوری طرح سے بلے باز بنے۔


نیٹس پرکی گیند بازوں کی پٹائی

محمود نے ایک پاڈ کاسٹ میں بتایا کہ 1996 میں شاہد آفریدی نے نیروبی میں ڈیبیو کیا تھا۔ اسی میچ میں میں نے بھی ڈیبیو کیا تھا۔ مشتاق احمد اس سیریز کے زخمی ہوگئے تھے اور مشتاق کو ریپلیس کیا گیا۔ محمود نے کہا کہ ان دنوں سری لنکا کے سلامی بلے باز سنتھ جے سوریہ اور وکٹ کیپر کلوتھارن کافی جارح مانے جاتے تھے۔ اسی وجہ سے ہمیں نمبر-3 پر جارح بلے بازی کی ضرورت تھی۔ وسیم اکرم نے مجھے اور آفریدی کو نیٹس پر پریکٹس کرنے کے لئے کہا تھا۔ شاہد آفریدی نے نیٹس میں اسپنروں کی جم کر پٹائی کی۔

نمبر -3 پر آئے شاہد آفریدی

اس کے آئندہ روز سری لنکا کے خلاف میچ میں سلامی بلے باز سلیم الہٰی کے آوٹ ہونے تک پاکستان کا اسکور 60 رن پر ایک وکٹ تھا۔ اس کے بعد نمبر تین پر شاہد آفریدی کو بھیجا گیا اور انہوں نے 11 چھکے، 6 چوکے کے ساتھ 37 گیندوں پر ہی سنچری لگا دی۔ سچن تندولکر کے تحفے میں دیئے گئے بلے کی یہ خاص اننگ تھی۔ اس کے بعد وہ مکمل طور پر بلے باز بنے۔ ان کا کیریئر شاندار رہا۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 06, 2020 12:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading