உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا- ’ہندوستان کا عالمی کرکٹ میں دبدبہ، جو کہے گا وہ ہوگا‘

    پاکستان کے سابق کرکٹر شاہد آفریدی نے حال ہی میں آئی پی ایل پر بات کی۔ بی سی سی آئی نے آئندہ پانچ سالوں (27-2023) کے لئے آئی پی ایل میڈیا رائٹس 48,340 کروڑ روپئے میں بیچنے میں کامیابی حاصل کی، جس سے ہندوستانی لیگ دنیا کی دوسرے سب سے بڑی لیگ بن گئی۔

    پاکستان کے سابق کرکٹر شاہد آفریدی نے حال ہی میں آئی پی ایل پر بات کی۔ بی سی سی آئی نے آئندہ پانچ سالوں (27-2023) کے لئے آئی پی ایل میڈیا رائٹس 48,340 کروڑ روپئے میں بیچنے میں کامیابی حاصل کی، جس سے ہندوستانی لیگ دنیا کی دوسرے سب سے بڑی لیگ بن گئی۔

    پاکستان کے سابق کرکٹر شاہد آفریدی نے حال ہی میں آئی پی ایل پر بات کی۔ بی سی سی آئی نے آئندہ پانچ سالوں (27-2023) کے لئے آئی پی ایل میڈیا رائٹس 48,340 کروڑ روپئے میں بیچنے میں کامیابی حاصل کی، جس سے ہندوستانی لیگ دنیا کی دوسرے سب سے بڑی لیگ بن گئی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان کے سابق کپتان اور زبردست آل راونڈر شاہد آفریدی نے آئی پی ایل 2022 پر بولتے ہوئے عالمی کرکٹ میں ہندوستان کے دبدبے کی طرف اشارہ کیا ہے۔ حال ہی میں ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) نے آئندہ پانچ سالوں (27-2023) کے لئے آئی پی ایل میڈیا رائٹس 48,340 کروڑ روپئے میں بیچنے میں کامیابی حاصل کی، جس سے ہندوستانی لیگ دنیا کی دوسرے سب سے بڑی لیگ بن گئی۔

      بی سی سی آئی سکریٹری جے شاہ نے یہ واضح کیا ہے کہ آئندہ سال آئی سی سی کے فیوچر ٹور پروگرام میں انڈین پریمیئر لیگ کے لئے ڈھائی ماہ کی الگ ونڈو ہوگی۔ دونوں ممالک کے درمیان سیاسی تعلقات میں کشیدگی کے سبب پاکستان کے کھلاڑیوں کو آئی پی ایل میں کھیلنے کی اجازت نہیں ہے۔ پاکستان کے کھلاڑی سال 2008 میں پہلی اور آخری بار آئی پی ایل میں کھیلے تھے۔ اگر آئی پی ایل کو آئی سی سی کے ایف ٹی پی کلینڈر سے الگ ونڈو ملتی ہے تو اس کا اثر پاکستان کرکٹ پر پڑے گا۔

      ہندوستان جو کہے گا وہ ہوگا

      سما ٹی وی پر ایک پروگرام کے دوران شاہد آفریدی سے پاکستان کے کرکٹ شیڈول پر آئی پی ایل کے اثر کے بارے میں پوچھا گیا۔ تو سابق کپتان نے کہا، ’ہندوستان کے پاس دنیا کا سب سے بڑا کرکٹ مارکیٹ ہے۔ وہ جو بھی طے کریں گے، وہ کریں گے۔ یہ سب بازار اور معیشت پر منحصر کرتا ہے۔ سب سے بڑا کرکٹ بازار ہندوستان میں ہے، جو ہندوستان کہے گا وہ ہوگا‘۔

      2 ماہ کرنا پڑا انتظار

      پاکستان نے مارچ 2022 میں آسٹریلیا کی میزبانی کی۔ کنگارو ٹیم نے اس دورے پر ٹسٹ، ونڈے اور ٹی20 سیریز کھیلی۔ اس دوران آسٹریلیا کے کچھ بڑے کھلاڑی آئی پی ایل کے شروعاتی میچوں میں نہیں کھیل پائے۔ وہ سیریز ختم ہونے کے بعد آئی پی ایل ٹیموں سے جڑے۔ دنیا بھر کے کھلاڑی آئی پی ایل میں کھیل رہے تھے، جس کے سبب پاکستان کو کرکٹ سیریز کھیلنے کے لئے 2 ماہ انتظار کرنا پڑا۔ آئی پی ایل ختم ہونے کے بعد حال ہی میں پاکستان نے ویسٹ انڈیز کے خلاف تین ونڈے سیریز اپنی سرزمین پر کھیلی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: