ہوم » نیوز » اسپورٹس

شکیب الحسن نے کیا سچن تندولکرجیسا کمال، ایک میچ میں برابرکئے دوعالمی ریکارڈ

شکیب الحسن نے آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ 2019 میں بنگلہ دیش کے آخری میچ میں بھی اس کرکٹرنے کمال کیا اورماسٹربلاسٹر سچن تندولکرکے ریکارڈ کی برابری کرلی۔

  • Share this:
شکیب الحسن نے کیا سچن تندولکرجیسا کمال، ایک میچ میں برابرکئے دوعالمی ریکارڈ
شکیب الحسن۔ تصویر: اے پی

بنگلہ دیش کے اسٹارآل راونڈر شکیب الحسن نے آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ 2019 میں اپنے بلے سے دھمال مچا رکھا ہے۔ ٹورنامنٹ میں بنگلہ دیش کے آخری میچ میں بھی اس کرکٹرنے کمال کیا اورماسٹربلاسٹرسچن تندولکرکے ریکارڈ کی برابری کرلی۔ انہوں نےپاکستان کے خلاف 62 گیندوں میں 5 چوکوں کی مدد سے اپنی نصف سنچری نہیں پوری کی۔ یہ ان کا اس عالمی کپ میں پانچویں نصف سنچری اورکل ساتویں نصف سنچری اسکورہے۔


دلچسپ بات یہ ہے کہ سچن تندولکرنے یہ کمال 11 اننگوں میں کیا تھا جبکہ شکیب الحسن نے اس کی برابری 8 اننگوں میں ہی کرلی۔ باقی بلے بازوں پرنظرڈالی جائے تو کوئی بھی پانچ بارسے زیادہ نصف سنچری اسکورکرکے ایک عالمی کپ میں نہیں بناپایا ہے۔ انہوں نے پاکستان کے خلاف 60 رن بناتے ہی اس عالمی کپ میں 600 رن پورے کرلئے۔ اس عالمی کپ میں یہ کارنامہ کرنے والے وہ پہلے بلے باز ہیں۔ وہیں عالمی کپ کی تاریخ میں سچن تندولکراورمیتھیو ہیڈن کے بعد تیسرے کرکٹرہیں، جنہوں نے 600 سے زیادہ رن بنائے ہیں۔


سچن تندولکر نے 2003 کے عالمی کپ میں 11 اننگوں میں 673 رن بنائے تھے، جو کہ کسی بھی بلے بازایک عالمی کپ میں سب سے بہترین کارکردگی ہے۔ وہیں میتھیو ہیڈن نے 2007 عالمی کپ میں 11 اننگوں میں 73.22 کی اوسط سے 659 رن بنائے تھے۔ شکیب الحسن ان دونوں سے کہیں آگے نکل گئے۔ انہوں نے 8 اننگوں میں ہی 600 رن کا اعدادو شمارحاصل کرلیا۔


شکیب الحسن نے86.57 کی اوسط سے دو سنچری اورپانچ نصف سنچری کی مدد سے 606 رن بنائے۔ انہوں نے اس عالمی کپ میں 11 وکٹ بھی لئے۔ اس عالمی کپ میں شکیب الحسن نمبرتین پربلے بازی کواترے تھے اورانہوں نے اپنی بلے بازی سے ثابت بھی کیا۔ انہوں نے ویسٹ انڈیزکے خلاف ناٹ آوٹ 124 رنوں کی اننگ کھیلی اورٹیم کوجیت دلائی۔ یہ اننگ ان کی اس عالمی کپ میں سب سے بڑی اننگ رہی۔
First published: Jul 05, 2019 11:16 PM IST