ہوم » نیوز » اسپورٹس

شعیب اختر کا انکشاف، رفتار بڑھانے کے لئے مجھ سے ڈرگس لینے کو کہا گیا تھا

شعیب اختر (Shoaib Akhtar) کی کرکٹ کی زندگی کئی تنازعہ سے گھری رہی، لیکن ڈرگ یا کسی بھی ممنوعہ اشیا کے استعمال کو لے کر ان کے کیریئر پر کوئی داغ نہیں لگا، لیکن حال ہی میں انہوں نے ڈرگس کو لے کر ایک انکشاف کیا ہے۔

  • Share this:
شعیب اختر کا انکشاف، رفتار بڑھانے کے لئے مجھ سے ڈرگس لینے کو کہا گیا تھا
شعیب اختر کا انکشاف، رفتار بڑھانے کے لئے مجھ سے ڈرگس لینے کو کہا گیا تھا

نئی دہلی: دنیائے کرکٹ کے سب سے تیز گیند بازوں میں سے ایک شعیب اختر (Shoaib Akhtar) اپنی رفتار کے لئے جانے جاتے ہیں۔ پاکستان (Pakistan) کے عظیم کرکٹروں میں سے ایک شعیب اختر آج بھی انٹرنیشنل کرکٹ سب سے تیز ڈلیوری کا ریکارڈ اپنے نام رکھتے ہیں۔ انہوں نے اپنی رفتار اور خطرناک گیندبازی سے دنیا کے بہترین بلے بازوں کو پریشان کیا ہوا تھا۔ شعیب اختر کی کرکیٹنگ کئی طرح سے تنازع کا شکار رہی، لیکن ڈرگس یا کسی بھی ممنوعہ اشیا کے استعمال کو لے کر ان کے کیریئر پر کوئی داغ نہیں لگا، لیکن حال ہی میں انہوں نے ڈرگس کو لے کر ایک انکشاف کیا ہے۔


شعیب اختر نے انکشاف کیا کہ انہیں رفتار بڑھانے کے لئے ڈرگس کا استعمال کرنے کے لئے کہا تھا، لیکن انہوں نے اس سے انکار کردیا تھا۔ سابق پاکستانی تیز گیند باز نے بغیر نام لئے یہ دعویٰ کیا کہ ایک ورلڈ کلاس پاکستانی کرکٹر کا کیریئر ڈرگس کی وجہ سے برباد ہوگیا تھا۔


شعیب اختر نے اینٹی نارکوٹکس فورس کی سالانہ ڈرگس برننگ تقریب میں کہا، ’جب میں نے کرکٹ کھیلنا شروع کیا تھا، تب میں بہت تیز گیند باز نہیں کروا سکتا تھا۔ تب مجھے بولا گیا تھا کہ 100 کلو میٹر فی گھنٹۃ کی اچھی رفتار کو حاصل کرنے کے لئے مجھے ڈرگس لینا ہوگا، لیکن میں نے یہ لینے سے انکار کردیا تھا’۔ انہوں نے مزید کہا، ’اسی طرح پاکستانی تیز گیند باز محمد عامر کو انگلینڈ دورے سے پہلے بھی آگاہ کیا تھا، لیکن وہ غلط معاملے میں پھنس گئے تھے’۔


18 سال کی عمر میں 2009 ٹی -20 عالمی کپ میں ڈیبیو کرنے والے محمد عامر (Muhammad Amir) پر میچ فکسنگ معاملے میں پانچ سال کی پابندی لگائی تھی۔ محمد آصف اور سلمان بٹ کے ساتھ ان پر انٹرنیشنل کرکٹ میں پانچ سال کی پابندی لگی تھی اور ساتھ ہی انگلینڈ میں جیل کی سزا بھی ہوئی تھی۔ حالانکہ، محمد عامر پاکستان کے لئے انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کرنے میں کامیاب رہے، لیکن آصف اور سلمان بٹ کا کیریئر ختم ہوگیا۔ واضح رہے کہ پاکستان کے انگلینڈ دورے پر اسپاٹ فکسنگ کی خبریں آئیں اور اس میں محمد عامر کا بھی نام آیا تھا۔ محمد عامر پر اس وقت پابندی لگی، جس عمر میں تیز گیند باز کے پاس سب سے زیادہ مواقع رہتے ہیں، لیکن اس کے بعد 2016 میں محمد عامر نے ایک بار پھر سے پاکستانی ٹیم میں واپسی کی۔ سخت محنت سے انہوں نے پرانے فارم کو حاصل کرلیا اور دنیا کے اہم گیند بازوں میں اپنی جگہ بنا لی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 24, 2020 09:14 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading