உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    SL vs PAK: پاکستان کو جیت کے لئے عالمی ریکارڈ بنانا ہوگا، سری لنکا کے سامنے بابر اعظم کا چیلنج

    SL vs PAK 2nd Test: بابر اعظم (Babar Azam) کے سامنے ایک اور بڑا چیلنج ہے۔ سری لنکا نے دوسرے ٹسٹ میں پاکستان کے سامنے 508 رنوں کا ہمالیائی ہدف رکھا ہے۔ پاکستان نے جواب میں ایک وکٹ پر 89 رن بنالئے ہیں۔

    SL vs PAK 2nd Test: بابر اعظم (Babar Azam) کے سامنے ایک اور بڑا چیلنج ہے۔ سری لنکا نے دوسرے ٹسٹ میں پاکستان کے سامنے 508 رنوں کا ہمالیائی ہدف رکھا ہے۔ پاکستان نے جواب میں ایک وکٹ پر 89 رن بنالئے ہیں۔

    SL vs PAK 2nd Test: بابر اعظم (Babar Azam) کے سامنے ایک اور بڑا چیلنج ہے۔ سری لنکا نے دوسرے ٹسٹ میں پاکستان کے سامنے 508 رنوں کا ہمالیائی ہدف رکھا ہے۔ پاکستان نے جواب میں ایک وکٹ پر 89 رن بنالئے ہیں۔

    • Share this:
      گالے: سری لنکا نے دوسرے ٹسٹ میں اپنی پوزیشن مضبوط کرلی ہے۔ پاکستان نے 508 رنوں کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے بدھ کو اسٹمپ تک دوسری اننگ میں ایک وکٹ پر 89 رن بنا لئے تھے۔ چوتھے دن کا کھیل خراب روشنی کے سبب جلدی ختم کردیا گیا، جس سے 26 اوور نہیں پھینکے جاسکے۔ ٹی کے بعد صرف 6 اوور ہی ڈالے جاسکے۔ اس سے میزبان ٹیم کو حالانکہ تھوڑا جھٹکا ضرور لگا ہے، کیونکہ اسے آخری دن اب جیت کے لئے 9 وکٹ لینے ہوں گے۔ پاکستان کو آخری دن جیت کے لئے 419 رن اور بنانے ہوں گے۔ پاکستان 2 میچوں کی سیریز میں ابھی 0-1 سے آگے چل رہا ہے۔

      پاکستان نے دوسری اننگ میں اچھی شروعات کی۔ سلامی بلے باز عبداللہ شفیق اور امام الحق نے پہلے وکٹ کے لئے 42 رنوں کی شراکت کی۔ پہلے ٹسٹ میں ناٹ آوٹ 160 رنوں کی اننگ کھیلنے والی شفیق عبداللہ 16 رن کے انفرادی اسکور پر آوٹ ہوگئے۔ کپتان بابر اعظم پھر کریز پر اترے اور وہ اسپن کے خلاف کافی اطمینان بخش دکھائی دیئے۔ امام الحق اور بابر اعظم دوسرے وکٹ کے لئے 47 رن جوڑے چکے ہیں اور کریز پر ڈٹے ہیں۔

      بابر اعظم اور امام الحق کریز پر

      اننگ کے 28 ویں اوور کے بعد پاکستان کے بلے بازوں نے امپائر سے کہا کہ انہیں گیند نہیں نظر آرہی ہے۔ جب خراب روشنی کے سبب کھیل روکا گیا تب امام الحق 46 اور بابر اعظم 26 رن بناکر کھیل رہے تھے۔ پاکستان کو اس میچ میں جیت درج کرنے کے لئے عالمی ریکارڈ بنانا ہوگا۔ چوتھی اننگ میں سب سے بڑے ہدف کا یچھا کرتے کرنے کا ریکارڈ ویسٹ انڈیز کے نام ہے، جس نے 2003 میں آسٹریلیا کے خلاف 418 رنوں کا تعاقب کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں۔ 

      Test Rankings: بابر اعظم تینوں فارمیٹ میں بیسٹ بننے کے بے حد قریب، کوہلی بہت پیچھے چھوٹے
       کرونا رتنے کے 6 ہزار رن مکمل

      اس سے قبل سری لنکا نے اپنی دوسری اننگ 5 وکٹ پر 176 رنوں سے شروع کرنے کے بعد 8 وکٹ پر 360 رن بناکر ڈکلیئر کردی۔ دھننجے ڈی سلوا اور دمتھ کرونا رتنے کی جوڑی نے چھٹے وکٹ کے لئے 126 رنوں کی شراکت نبھاکر سری لنکا کو بڑا ہدف دینے میں اہم کردار ادا کیا۔ کرونا رتنے نے اس دوران اپنی 31ویں ٹسٹ سنچری بنائی اور وہ ٹسٹ کیریئر میں 6,000 رن بنانے والے چھٹے سری لنکائی بلے باز بھی بن گئے۔ وہ 61 رنوں پر آوٹ ہوئے۔



      دھننجے ڈی سلوا (109 رن) نے اپنی 9ویں ٹسٹ سنچری بنائی، جس میں 16 چوکے لگائے۔ انہوں نے رمیش مینڈس کے ساتھ آٹھویں وکٹ کے لئے 82 رنوں کی شراکت کی۔ مینڈس نے 55 گیندوں میں ناٹ آوٹ 45 رن بنائے۔ میچ میں سری لنکا نے پہلی اننگ میں 378 رن جبکہ پاکستان نے 231 رن بنائے تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: