உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Tokyo Paralympics: نوئیڈا کے ڈی ایم سہاس یتیراج نے سلور میڈل جیت کر رقم کی تاریخ، ہندوستان کو ملا 18 واں میڈل

    Tokyo Paralympics: نوئیڈا کے ڈی ایم سہاس یتیراج نے سلور میڈل جیت کر رقم کی تاریخ، ہندوستان کو ملا 18 واں میڈل

    Tokyo Paralympics: نوئیڈا کے ڈی ایم سہاس یتیراج نے سلور میڈل جیت کر رقم کی تاریخ، ہندوستان کو ملا 18 واں میڈل

    Tokyo Paralympics 2020: ٹوکیو پیرالمپک میں سہاس یتیراج (Suhas Yathiraj) نے سلور میڈل جیت کر تاریخ رقم کردی ہے۔ ٹوکیو پیرالمپک میں یہ ہندوستان کا 18 واں میڈل ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: ٹوکیو پیرالمپک میں سہاس یتیراج (Suhas Yathiraj) نے سلور میڈل جیت کر تاریخ رقم کردی ہے۔ ایس ایل 4 کلاس فائنل میں سہاس یتیراج نے فرانس کے لکاس سے ہارکر گولڈ میڈل سے چوک گئے۔ ماجور نے سہاس کو سے 15-21,21-17,21-15 شکست دی۔ ٹوکیو پیرالمپک (Tokyo Paralympics) میں بیڈمنٹن میں یہ ہندوستان کا تیسرا میڈل ہے۔ گوتم بدھ نگر (نوئیڈا) کے 38 سالہ ضلع افسر (ڈی ایم) سہاس پیرالمپک کھیلوں میں تمغہ جیتنے والے آئی اے ایس افسر بھی بن گئے ہیں۔ اس سے پہلے ہفتہ کو ہندوستانی شٹلر پرمود بھگت (Pramod Bhagat) نے کمال کی کارکردگی پیش کرتے ہوئے بیڈمنٹن سنگلز ایس ایل-3 کا گولڈ میڈل جیتا تھا۔

      اوڈیشہ کے رہنے والے 33 سال کے پرمود بھگت اولمپک یا پیرالمپک میں گولڈ جیتنے والے پہلے ہندوستانی شٹلر ہیں۔ ان کے علاوہ اسی ایونٹ میں ہندوستان کے منوج کمار (Manoj Sarkar) نے برانز میڈل حاصل کیا۔ اس کے ساتھ ہی ٹوکیو اولمپک میں ہندوستان کی تمغوں کی تعداد 18 ہوگئی ہے۔ ہندوستان نے اب تک 4 گولڈ، 8 سلور اور 6 برانز میڈل جیتے ہیں۔ ہندوستان ٹوکیو پیرالمپک میں نشانے بازی میں پانچ اور بیڈمنٹن میں تین تمغے جیت چکا ہے۔ وہیں ہندوستانی شٹلر کرشنا نگر فائنل میں پہنچ کر ہندوستان کا 19 واں تمغہ یقینی بناچکے ہیں۔

      پڑھیں سہاس یتیراج کا سفر

      کرناٹک کے 38 سال کے سہاس یتیراج کے ٹخنوں میں پریشنای ہے۔ عدالت کے اندر اور باہر کئی حصولیابیوں سے نوئیڈا کے ضلع افسر ہیں اور کورونا وبا کے خلاف جنگ میں محاذ سے قیادت کرچکے ہیں۔ این آئی ٹی کرناٹک سے کمپیوٹر انجینئر کے طور پر گریجویشن کی ڈگری حاصل کرنے والے سہاس اس سے پہلے پریاگ راج، آگرہ، اعظم گڑھ، جونپور، سون بھدر ضلع کے ضلع افسر رہ چکے ہیں۔

      سہاس کی پیشہ ور یاترا 2016 میں شروع ہوئی جب وہ مشرقی یوپی کے اعظم گڑھ ضلع کے ڈی ایم تھے اور وہاں ایک بیڈمنٹن چمپئن شپن کا انعقاد کیا گیا تھا۔ سہاس نے کہا کہ ’میں ٹورنامنٹ کے افتتاح میں مہمان تھا اور حصہ لینے کی خواہش کا اظہار کیا۔ تب تک یہ میرے لئے ایک شوق تھا کیونکہ میں بچپن سے بیڈمنٹن کھیل رہا تھا۔ مجھے وہاں کھیلنے کا موقع ملا اور میں نے ریاستی سطح کے کھلاڑیوں کو ہرا دیا‘۔ انہوں نے کہا کہ اس جگہ پر ملک کی پیرا بیڈمنٹن ٹیم کے موجودہ کوچ گورو کھنہ نے انہیں دیکھا اور اسے پیشہ ور طور پر اپنانے کا مشورہ دیا۔ اسی سال انہوں نے بیجنگ میں ایشیائی چمپئن شپ میں حصہ لیا اور گولڈ میڈل جیتنے والے پہلے غیر رینک والے کھلاڑی بن گئے۔

      سہاس 2017 اور 2019 میں سنگلز میں جیت چکے ہیں گولڈ

      سہاس یتیراج نے سال 2017 اور سال 2019 میں بی ڈبلیو ایف ترکی پیرا بیڈمنٹن چمپئن شپ میں مرد سنگلز اور ڈبلز گولڈ میڈل جیتا۔ انہوں نے برازیل میں 2020 میں گولڈ میڈل جیتا۔ جب جولائی میں ٹوکیو پیرالمپک میں ان کی شراکت کی تصدیق ہوئی، تو سہاس نے کہا کہ یہ مقابلہ بلاشبہ ایک چیلنج ہوگا اور اپنے زمرے میں دنیا کے تیسرے نمبر کے کھلاڑی ہونے کے ناطے، وہ میڈل کے دعویدار ہوں گے۔

      ترون ڈھلوں ہارے

      وہیں دوسری سیڈ ہندوستانی کھلاڑی ترون ڈھلوں کو برانز میڈل میچ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ ڈھلوں کو انڈونیشیا کے فریڈی سیتیاوان 21-17, 21-11 سے شکست دی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: