ہوم » نیوز » اسپورٹس

سنیل گواسکرکا بڑا الزام، وراٹ کوہلی کو غلط طریقے سے منتخب کیا گیا کپتان

سابق کرکٹرسنیل گواسکرکے مطابق وراٹ کوہلی عالمی کپ تک کے لئے کپتان منتخب کئے گئےتھے۔ اس کے بعد سلیکشن کمیٹی کوان کو دوبارہ کپتان مقررکرنے کے لئے میٹنگ کرنی چاہئے تھی، جونہیں کی گئی۔

  • Share this:
سنیل گواسکرکا بڑا الزام، وراٹ کوہلی کو غلط طریقے سے منتخب کیا گیا کپتان
سنیل گواسکر کے مطابق، وراٹ کوہلی عالمی کپ تک کے لئے کپتان منتخب کئے گئے تھے۔ اس لئے انہیں دبارہ کپتان مقرر کرنے کے لئے سلیکشن کمیٹی کی میٹنگ ہونی چاہئے تھی۔جو نہیں کی گئی۔

ہندوستانی ٹیم ویسٹ انڈیزکا دورہ کرنے کے لئے پوری طرح تیارہے۔ وراٹ کوہلی کی قیادت میں ٹیم پیر کی رات دورے کے لئے روانہ ہوجائے گی۔ حالانکہ سابق کرکٹرسنیل گواسکرنے اس دورے کے لئے ٹیم کےانتخابی عمل پرسوال کھڑے کردیئے ہیں۔ ہندوستانی کرکٹ تاریخ کے اس عظیم کرکٹرنے سابق وکٹ کیپرایم ایس کے پرساد کی قیادت والی سلیکشن کمیٹی پر وراٹ کوہلی کودوبارہ کپتان منتخب کرنے کے عمل کونظراندازکرنے کا الزام لگایا ہے۔


مڈ ڈے میل میں لکھے اپنے کالم میں سنیل گواسکرنے کہا ہے کہ سلیکٹروں نے ویسٹ انڈیز دورہ کے لئے ٹیم کے انتخاب سے قبل وراٹ کوہلی کو کپتان منتخب کرنے کے لئے کوئی میٹنگ نہیں کی۔ اس سے سوال کھڑا ہوتا ہے کہ کیا وراٹ کوہلی اپنی اورسلیکشن کمیٹی کی خوشی سے کپتان بنے ہیں۔


ورلڈ کپ تک کے لئے کپتان تھے کوہلی


سنیل گواسکرمزید لکھتے ہیں کہ جہاں تک ہماری جانکاری ہے، اس کے حساب سے وراٹ کوہلی عالمی کپ تک کے لئے کپتان منتخب کئے گئے تھے۔ اس کے بعد سلیکشن کمیٹی کو وراٹ کوہلی کودوبارہ کپتان کے طورپرمقررکرنے کے لئے ایک میٹنگ کرنی چاہئے تھی، پھربھلے ہی وہ پانچ منٹ کے لئے ہی کیوں نہ بیٹھتے۔

سنیل گواسکرنے ایم ایس کے پرساد کی قیادت والی سلیکشن کمیٹی پربھی نشانہ سادھا۔
سنیل گواسکرنے ایم ایس کے پرساد کی قیادت والی سلیکشن کمیٹی پربھی نشانہ سادھا۔


سنیل گواسکرنے یہ بھی کہا کہ انڈین پلیئرس ایسوسی ایشن کی تشکیل ہونی چاہئے، جس میں موجودہ کرکٹربھی شامل ہوں۔ ورنہ یہ ایسوسی ایشن لیم ڈک آرگنائزیشن (لنگڑا بطخ یا سست) بن کررہ جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہندوستانی سلیکشن کمیٹی بھی لنگڑے بطخ جیسی ہی ہے۔

دوبارہ تقرری کے بعد ہوتا کھلاڑیوں کا انتخاب

سنیل گواسکرکے مطابق دوبارہ تقرری کے بعد کپتان کو کھلاڑیوں کے سلیکشن کے لئے ہونے والی میٹنگ میں اپنا نظریہ پیش کرنے کے لئے بلایا جاتا۔ دوبارہ کپتان منتخب کرنے کے عمل کو نظراندازکرنے کے بعد یہ میسیج باہر گیا کہ جہاں کیدارجادھو اوردنیش کارتک کو امیدوں پرکھرا نہ اترنے کے لئے ڈراپ کردیا گیا۔ وہیں وراٹ کوہلی کی کپتانی تب بھی قائم رہی، جبکہ وہ ٹیم کو فائنل تک بھی نہیں پہنچا سکے۔

وراٹ کوہلی کو جہاں ویسٹ انڈیز دورے پر سبھی فارمیٹ میں ٹیم کا کپتان منتخب کیا گیا ہے وہیں روی شاستری کی مدت کارویسٹ انڈیز دورے تک ہی ہے۔
وراٹ کوہلی کو جہاں ویسٹ انڈیز دورے پر سبھی فارمیٹ میں ٹیم کا کپتان منتخب کیا گیا ہے وہیں روی شاستری کی مدت کارویسٹ انڈیز دورے تک ہی ہے۔


سلیکشن کمیٹی پرتنقید

ٹسٹ کرکٹ میں سب سے پہلے 10 ہزار رنوں کے اعدادوشمارتک پہنچنے والے سنیل گواسکرنے کم تجربہ کارسلیکشن کمیٹی پربھی نشانہ سادھا۔ موجودہ سلیکشن کمیٹی میں ایم ایس کے پرساد کے علاوہ شرن دیپ سنگھ، دیوانگ گاندھی، جتن پراجنپے اورگنن کھیڑا شامل ہیں۔ ان میں سے آخری دو نے صرف ونڈے کرکٹ کھیلا ہے۔ سنیل گواسکرنے کہا 'اب جلد ہی نئی سلیکشن کمیٹی کا انتخاب ہوگا۔ امید ہے کہ اس میں ایسے سطح کے لوگ ہوں گے، جنہیں آسان شکارنہیں بنایا جاسکے گا اورجو مینجمنٹ کے سامنے اپنی بات مضبوطی سے رکھ سکیں گے'۔
First published: Jul 29, 2019 04:17 PM IST