ہوم » نیوز » اسپورٹس

سنیل گواسکر نے کہا- وراٹ کوہلی تینوں فارمیٹ میں ’وراٹ‘ رہے ہیں

سابق ہندوستانی کپتان سنیل گاوسکر نے انڈیا ٹوڈے سے کہا، "کرکٹ کے تینوں فارمیٹس میں وراٹ کوہلی کی کارکردگی شاندار رہی ہے۔ ان کی کارکردگی ہی نے انہیں ’وراٹ‘ بنایا ہے۔ سال 09-2008 میں ایک نوجوان کھلاڑی کے بعد انہوں نے جس طرح اپنے کھیل کو بہتر کیا ہے کہ وہ قابل تعریف ہے۔

  • Share this:
سنیل گواسکر نے کہا- وراٹ کوہلی تینوں فارمیٹ میں ’وراٹ‘ رہے ہیں
سنیل گواسکر نے کہا- وراٹ کوہلی تینوں فارمیٹ میں ’وراٹ‘ رہے ہیں

نئی دہلی: سابق ہندوستانی کپتان سنیل گواسکر نے ٹیم انڈیا کے کپتان وراٹ کوہلی کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ تینوں فارمیٹس میں 'وراٹ' رہے ہیں۔ وراٹ کوہلی نے آسٹریلیا کے خلاف جاری سیریز کے دوسرے ونڈے کے دوران تینوں فارمیٹ میں 22000 سے زیادہ رن بنانے کا اعزازحاصل کیا تھا جبکہ تیسرے میچ میں اپنی اننگ کے دوران ونڈے میں سب سے تیز 12 ہزار رن بنانے والے کھلاڑی بنے تھے اور انہوں نے کرکٹ کے ماسٹر بلاسٹر سچن تیندولکر کا ریکارڈ توڑ دیا تھا۔ وراٹ کوہلی نے یہ کارنامہ اپنے 251 ویں ون ڈے میچ میں کیا۔

سابق ہندوستانی کپتان سنیل گاوسکر نے انڈیا ٹوڈے سے کہا، "کرکٹ کے تینوں فارمیٹس میں وراٹ کوہلی کی کارکردگی شاندار رہی ہے۔ ان کی کارکردگی ہی نے انہیں ’وراٹ‘ بنایا ہے۔ سال 09-2008 میں ایک نوجوان کھلاڑی کے بعد انہوں نے جس طرح اپنے کھیل کو بہتر کیا ہے کہ وہ قابل تعریف ہے۔ انہوں نے اپنے کھیل کو جس طرح بہتر کیا اور سپر فٹ کرکٹر بنے وہ نہ صرف نوجوانوں بلکہ ان لوگوں کے لئے بھی تحریک ہیں جو خود کو فٹ رکھنے پر توجہ دیتے ہیں۔


سابق ہندوستانی کپتان سنیل گاوسکر نے انڈیا ٹوڈے سے کہا، "کرکٹ کے تینوں فارمیٹس میں وراٹ کوہلی کی کارکردگی شاندار رہی ہے۔ ان کی کارکردگی ہی نے انہیں ’وراٹ‘ بنایا ہے۔ سال 09-2008 میں ایک نوجوان کھلاڑی کے بعد انہوں نے جس طرح اپنے کھیل کو بہتر کیا ہے کہ وہ قابل تعریف ہے۔
سابق ہندوستانی کپتان سنیل گاوسکر نے انڈیا ٹوڈے سے کہا، "کرکٹ کے تینوں فارمیٹس میں وراٹ کوہلی کی کارکردگی شاندار رہی ہے۔ ان کی کارکردگی ہی نے انہیں ’وراٹ‘ بنایا ہے۔ سال 09-2008 میں ایک نوجوان کھلاڑی کے بعد انہوں نے جس طرح اپنے کھیل کو بہتر کیا ہے کہ وہ قابل تعریف ہے۔



انہوں نے کہا، "ونڈے میں 12000 سے زیادہ رنز بنانے کے علاوہ ، انہوں نے تیسرے ون ڈے میں نصف سنچری بھی بنائی۔ میرے خیال سے انہوں نے 251 ون ڈے میچ کھیلے ہیں جن میں 43 سنچریاں اور 60 نصف سنچری شامل ہیں جو غیر معمولی ہے۔ مجھے نہیں لگتا کہ کسی اور نے ایسا کیا۔ " گاوسکر نے کہا ، "وراٹ کوہلی جس طرح اپنی فارم کو برقرار رکھتے ہوئے نصف سنچری کو سنچری میں تبدیل کردیتے ہیں وہ ناقابل یقین ہے۔ ہمیں اس کا جشن منانا چاہئے اور ہمیں وراٹ کے اگلے 1000 رنز کا انتظار کرنا چاہئے جس کی مجھے امید ہے کہ اگلے پانچ چھ ماہ میں یہ کام مکمل ہوجائے گا"۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 04, 2020 03:12 PM IST