اپنا ضلع منتخب کریں۔

    16دن میں ہوں گے 30 میچ، آٹھ ڈبل ہیڈر، تین دن تین مقابلے، جانیے سوپر-12 کا پورا شیڈیول

    16دن میں ہوں گے 30 میچ، آٹھ ڈبل ہیڈر، تین دن تین مقابلے، جانیے سوپر-12 کا پورا شیڈیول

    16دن میں ہوں گے 30 میچ، آٹھ ڈبل ہیڈر، تین دن تین مقابلے، جانیے سوپر-12 کا پورا شیڈیول

    ہندوستان کا پہلا میچ پاکستان کے ساتھ 23 اکتوبر کو ہے۔ اس کے بعد ٹیم انڈیا 27 اکتوبر کو نیدرلینڈ، 30 اکتوبر کو ساوتھ افریقہ، دو نومبر کو بنگلہ دیش اور چھ نومبر کو زمبامبوے کے ساتھ کھیلے گی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      ٹی20 ورلڈ کپ 2022 میں پہلے دور کے مقابلے ختم ہوچکے ہیں۔ اب سوپر-12 کی سبھی ٹیمیں طئے ہوگئی ہیں۔ بہتر فینکنگ والی آٹھ ٹیموں نے پہلے ہی سوپر-12 میں جگہ بنالی تھی اور چار ٹیموں نے کوالیفائر راونڈ میں بہتر مظاہرہ کر کے سوپر-12 میں جگہ بنائی ہے۔ سری لنکا، آئرلینڈ، زمبامبوے اور نیدرلینڈ کی ٹیم نے کوالیفائر راونڈ میں بہتر مظاہرہ کر کے اگلے دور میں جگہ بنائی ہے۔ دو بار کی چمپئن ویسٹ انڈیز کی ٹیم کوالیفائر راونڈ سے ہی باہر ہوگئی ہے۔ سوپر12 راونڈ میں سولہ دن کے اندر 30 میچیز کھیلے جائیں گے۔ تین دن تین مقابلے ہوں گے۔ وہیں آٹھ دن دو میچ کھیلے جائیں گے۔ پانچ دن صرف ایک ہی میچ ہوگا۔ یہاں ہم سوپر12 راونڈ کا پورا شیڈیول بتارہے ہیں۔

      ہندوستان کا پہلا میچ پاکستان کے ساتھ 23 اکتوبر کو ہے۔ اس کے بعد ٹیم انڈیا 27 اکتوبر کو نیدرلینڈ، 30 اکتوبر کو ساوتھ افریقہ، دو نومبر کو بنگلہ دیش اور چھ نومبر کو زمبامبوے کے ساتھ کھیلے گی۔ سیمی فائنل مقابلے نو نومبر سے شروع ہوں گے۔

      ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ سوپر-12 میں دونوں گروپ

      گروپ 1
      افغانستان، آسٹریلیا، انگلینڈ، نیوزی لینڈ، سری لنکا اور آئرلینڈ۔

      گروپ2
      بنگلہ دیش، ہندوستان، پاکستان، جنوبی افریقہ، نیدرلینڈ اور زمبامبوے

      ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2022 میں سوپر-12 کا پورا شیڈیول

      22 اکتوبر
      نیوزی لینڈ بمقابلہ آسٹریلیا - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، 12:30 بجے
      انگلینڈ بمقابلہ افغانستان - پرتھ اسٹیڈیم، شام 4:30 بجے

      23 اکتوبر
      سری لنکا بمقابلہ آئرلینڈ - بیلریو اوول، صبح 9:30 بجے
      ہندوستان بمقابلہ پاکستان - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      24 اکتوبر
      بنگلہ دیش بمقابلہ نیدرلینڈز - بیلریو اوول، صبح 9:30 بجے
      جنوبی افریقہ بمقابلہ گروپ بی زمبابوے - بیلریو اوول، دوپہر 1:30 بجے

      25 اکتوبر
      آسٹریلیا بمقابلہ سری لنکا - پرتھ اسٹیڈیم، شام 4:30 بجے

      26 اکتوبر
      انگلینڈ بمقابلہ آئرلینڈ - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، صبح 9:30 بجے
      نیوزی لینڈ بمقابلہ افغانستان - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      27 اکتوبر
      جنوبی افریقہ بمقابلہ بنگلہ دیش - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، صبح 8:30 بجے
      انڈیا بمقابلہ نیدرلینڈز - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، 12:30 PM
      پاکستان بمقابلہ زمبابوے - پرتھ اسٹیڈیم، شام 4:30 بجے

      8 اکتوبر
      افغانستان بمقابلہ آئرلینڈ - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، صبح 9:30 بجے
      انگلینڈ بمقابلہ آسٹریلیا - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      29 اکتوبر
      نیوزی لینڈ بمقابلہ سری لنکا - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      30 اکتوبر
      بنگلہ دیش بمقابلہ زمبابوے - دی گابا، صبح 8:30 بجے
      پاکستان بمقابلہ نیدرلینڈز - پرتھ اسٹیڈیم، دوپہر 12:30 بجے
      ہندوستان بمقابلہ جنوبی افریقہ - پرتھ اسٹیڈیم، شام 4:30 بجے

      31 اکتوبر
      آسٹریلیا بمقابلہ آئرلینڈ - ، دوپہر 1:30 بجے

      یکم نومبر
      افغانستان بمقابلہ سری لنکا -  گابا، صبح 9:30 بجے
      انگلینڈ بمقابلہ نیوزی لینڈ -  گابا، دوپہر 1:30 بجے

      2 نومبر
      زمبابوے بمقابلہ نیدرلینڈز - ایڈیلیڈ اوول، صبح 9:30 بجے
      انڈیا بمقابلہ بنگلہ دیش - ایڈیلیڈ اوول، دوپہر 1:30 بجے

      3 نومبر
      پاکستان بمقابلہ جنوبی افریقہ - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      4 نومبر
      نیوزی لینڈ بمقابلہ آئرلینڈ - ایڈیلیڈ اوول، صبح 9:30 بجے
      آسٹریلیا بمقابلہ افغانستان - ایڈیلیڈ اوول، دوپہر 1:30 بجے

      5 نومبر
      انگلینڈ بمقابلہ سری لنکا - سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے

      یہ بھی پڑھیں:
      ہندستان کے خلاف جنگ سے پہلے پاکستان کیلئے بری خبر، اسٹار بلے کے سر پر لگی چوٹ

      یہ بھی پڑھیں:
      ہندوستان بمقابلہ پاکستان میچ کو لے کر آسٹریلیا کے لیجنڈ کرکٹر نے دیا بڑا بیان، کہی یہ بات

      6 نومبر
      جنوبی افریقہ بمقابلہ نیدرلینڈز - ایڈیلیڈ اوول، صبح 5:30 بجے
      پاکستان بمقابلہ بنگلہ دیش - ایڈیلیڈ اوول، صبح 9:30 بجے
      ہندوستان بمقابلہ زمبابوے - میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، دوپہر 1:30 بجے
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: