உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹی-20 ورلڈ کپ چمپئن کو ملیں گے تقریباً 12 کروڑ روپئے، رنر اپ کو بھی ملے گی بڑی رقم

    (Pic Credit: ICC)

    (Pic Credit: ICC)

    دبئی میں 14 نومبر 2021 کو جو کوئی بھی ٹیم ٹی 20 ورلڈ کپ ٹرافی جیتے گی، اسے تقریبا 12 کروڑ روپے (16 لاکھ ڈالر) کا نقد انعام ملے گا۔ اس کی تصدیق اس وقت ہوئی جب انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے اتوار کو ٹورنا منٹ کے لیے مجموعی طور پر 42 کروڑ روپئے (56 لاکھ امریکی ڈالر) کی انعامی رقم کا اعلان کیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      دبئی: 14 نومبر 2021 کو جو کوئی بھی ٹیم دبئی میں ٹی 20 ورلڈ کپ ٹرافی جیتے گی، اسے تقریبا 12 کروڑ روپے (16 لاکھ ڈالر) کا نقد انعام ملے گا۔ اس کی تصدیق اس وقت ہوئی جب انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے اتوار کو ٹورنا منٹ کے لیے مجموعی طور پر 42 کروڑ روپئے (56 لاکھ امریکی ڈالر) کی انعامی رقم کا اعلان کیا۔ رنر اپ ٹیم کو 8 لاکھ ڈالر (تقریبا 6 کروڑ روپے) ملیں گے جبکہ سیمی فائنل میں ہارنے والی ٹیموں کو ہر ایک کوچار چار لاکھ ڈالر(تقریبا 3 کروڑ روپے) دیئے جائیں گے۔
      سپر 12 میں ہر میچ جیتنے پر ٹیم کو تقریبا 30 لاکھ روپے ملیں گے۔ اس مرحلے میں کل 30 میچ کھیلے جائیں گے۔ اس مرحلے کے بعد جو آٹھ ٹیمیں آگے نہیں بڑھ پاتی ہیں ،ان سب کو تقریبا 52 لاکھ روپے کی انعامی رقم دی جائے گی۔ اس کے علاوہ ٹورنامنٹ کے پہلے یعنی کوالیفائنگ مرحلے میں کھیلے جانے والے 12 میچوں میں ایک جیت حاصل کرنے پر ٹیموں کو تقریباً 30 لاکھ روپے ملیں گے۔ ساتھ ہی اس مرحلے میں ہار کر گھر جانے والی ہر ٹیم کو 30 لاکھ روپے دیے جائیں گے ۔


      17 اکتوبر سے شروع ہونے والے پہلے مرحلے میں 8 ٹیمیں حصہ لیں گی، جہاں آئرلینڈ، نمیبیا، نیدرلینڈ اور سری لنکا گروپ اے کا حصہ ہوں گے۔ گروپ بی میں عمان ، پاپوا نیو گنی، اسکاٹ لینڈ اور بنگلہ دیش آمنے سامنے ہوں گے۔ ان دونوں گروپوں کی ٹاپ 2 ٹیمیں سپر 12 مرحلے کے لئے کوالیفائی کریں گی۔ آئی سی سی نے یہ بھی اعلان کیا کہ ٹورنا منٹ میں ہر اننگ میں 10 اوور کھیلنے کے بعد آفیشل ڈرنکس بریک ہوگا۔ اس وقفے کا دورانیہ ڈھائی منٹ ہوگا۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے موسم کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ تاہم متحدہ عرب امارات میں گرمیوں کا موسم اپنے اختتام کو پہنچ رہا ہے اور نومبر میں درجہ حرارت قدرے ٹھنڈا ہونے کی توقع ہے۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: